نگارشات    ( صفحہ نمبر 468 )

بدلتے حالات اور پاک-چین تعلقات۔۔۔ ایمل خٹک

پاک-بھارت کشیدگی کے دوران دو اھم واقعات رونما ھوچکے ھیں جو انتہائی دور رس نتائج کے حامل اور آگے جا کر اس کے علاقائی اور عالمی سیاست پر گہرے اثرات پڑ سکتے ھیں ۔ ایک تو انسداد دھشت گردی کے←  مزید پڑھیے

احتجاج آپ کاحق بھی ہے اور فرض بھی ۔۔۔ اذان ملک

مولانا رومی سے کسی نے پو چھا کہ معاشرہ یا قوم کیسے تباہ ہوجاتی ہے انہوں نے جواب دیا کہ جب اچھائی اور برائی میں تمیز ختم ہوجائے، جب جھوٹ اور سچ کو ایک سمجھا جائے تو وہ معاشرہ یا←  مزید پڑھیے

کیا مودی بیوقوف ہے؟ زاہد خان

نریندر مودی کو میں قطعاً بیوقوف نہیں سمجھتا وہ اپنے اقتدار میں انے سے اب تک ہندوستان کو بہت آگے لے گیا ہے۔ اس نے ستمبر دو ہزار چودہ میں سرخ سیارے مریخ کے مدار میں ہندوستانی خلائی مشن کم←  مزید پڑھیے

رائیونڈ مارچ اور رشتہ مانگتا لیڈر۔۔۔ڈاکٹر اسمارا مرتضی

ایک پنجابی محاورہ ہے نانی نے کهسم کیتا برا کیتا کرکےچھڈ دیتا، ہور برا کیتا ( ترجمہ نانی نے بڑھاپے میں شادی کرلی اچھا نہیں کیا لوگ کیا کہیں گے خود کے لیے اچھا کیا چلو ٹھیک فیصلہ تها، لیکن←  مزید پڑھیے

علم کی ناموس کا مسئلہ ۔۔۔ محمد تہامی بشر علوی

احمد جاوید صاحب کو ناگزیر لگا کہ بزبان خود تصریح کر دی جائے ، سو فرمایا: “غامدی صاحب سے میرا اختلاف، درست اور غلط کا ہے اور غلام احمد پرویز سے میرا اختلاف، حق اور باطل کا۔” یہ محض ایک←  مزید پڑھیے

ہم “مسلمان”۔۔۔ خورشید احمد

دیکھا اور سناہے کہ جب بھیڑیں سفر پر لشکری صورت میں نکلتی ہیں تو سب سے کمزور بیمار نحیف اور لاغر بھیڑ گلے کے آخر میں سر جھکایے زبان منہ سے لٹکایے لنگڑاتی ہوئی آہستہ آہستہ چل رہی ہوتی ہے۔سفر←  مزید پڑھیے

بھگت سنگھ کی سالگرہ پر۔۔۔۔ آصف محمود

جس معاشرے کے فکری انحطاط کا یہ عالم ہو کہ وہ مخیر ہندوؤں کے بنائے گئے خیراتی ہسپتالوں کے نام بھی تبدیل کر کے عمارات کو مسلمان بنانا چاہتا ہواس معاشرے میں کوئی بھگت سنگھ کے لیے کلمہ خیرکہنے پر←  مزید پڑھیے

سالگرہ مبارک بھگت۔۔۔ انعام رانا

آج بھگت سنگھ کی سالگرہ ہے۔ ہمارے ہاں ہیرو کم ہی پیدا ہوتے ہیں اور ہو جائیں تو ہم زندہ نہیں رہنے دیتے۔ سوچتا ہوں بھگت کو اس کی سالگرہ پہ کیا پیش کروں؟ بھگت کلمہ گو نہیں تھا، بھگت←  مزید پڑھیے

جمیعت، کچھ یادداشتیں قسط دوم۔۔۔ داؤد ظفر ندیم

جمیعت کے بارے میری پہلی قسط میرے ذاتی تجربے پر مبنی تھی۔ مگر تمام فکری اختلافات کے باوجود یہ بات ماننے والی ہے کہ جمیعت بعض معاملات میں دوسری طلبا تنظیموں سے کافی بہتر تھی۔ عام طلبا کو وہ تنگ←  مزید پڑھیے

حکومت، میڈیا اور عوام ۔۔۔۔ رضا شاہ جیلانی

تاریخ ہمیں بتاتی ہے کہ جنگیں کسی بھی بات کا حل نہیں ہوتیں۔ جنگیں صرف مسائل کو جنم دیتی ہیں. بالآخر دو فریقین کو مصالحت کے لئے مکالمے کی میز پر آنا ہی پڑتا ہے. اگر ہم اپنے آس پاس←  مزید پڑھیے

جنگ نہیں، مذاکرات ۔۔۔۔۔ سبط حسن گیلانی

ہندوستان کی تقسیم ناگزیر تھی۔ کوئی بھی واقعہ راتوں رات رونما نہیں ہوتا۔ بعض اوقات صدیاں ایسے تاریخی واقعات کی پرورش کرتی ہیں۔ یہاں بھی ایسے ہی ہوا تھا۔ اگر یہ حادثہ تھا تو اس کے مجرم ، اگر یہ←  مزید پڑھیے

جنگ سے پہلے پاک بھارت میڈیا کا کردار ۔ ۔ ۔ محمد سعد علی

بچپن میں ہمیں ہمارے بڑے یہ سکھایا کرتے تھے کہ جہاں دو لوگوں کو جھگڑتا ہوا دیکھو تو ان میں صلح کروانے کی کوشش کرو نہ کہ “جلتی پر تیل ڈالو”۔ “لڑائی لڑائی معاف کرو اللہ کا گھر صاف کرو”←  مزید پڑھیے

مکالمے اور مناظرے کافرق۔۔رعایت اللہ فاروقی

مکالمے کی بات کرنے والے مکالمہ چاہتے کہاں ہیں، وہ مناظرے کا شوق رکھتے ہیں جس کے لئے مکالمے کا عنوان استعمال کرتے ہیں۔ کیونکہ مناظرہ معیوب تو تھا ہی اب جاکر آؤٹ آف فیشن بھی ہوگیا۔ یہی وجہ ہے←  مزید پڑھیے

خواجہ سراؤں کے متعلق ایک بے بنیاد تحریر کا پوسٹ مارٹم ۔۔۔ معاذ بن محمود

سنا تھا اوسط انسان اپنے دماغ کی 10 فیصد سے بھی کم صلاحیت استعمال کرنے کے قابل ہوتا ہے. کچھ دن پہلے اس افواہ کے رد میں ایک مضمون پڑھنے کو ملا. ویسے تو مضمون میں شماریات و عقلی دلائل←  مزید پڑھیے

گلا سڑا نظام ۔۔۔عامر حسینی

میں “او بل ” کی فلم ” ریم پیچ ،دی پریذیڈنٹ ڈاؤن ” دیکھ رہا تھا –اس فلم کا بنیادی تھیم ہے کہ امریکی اشرافیہ کی ریاست اور میڈیا دونوں غلامی کررہے ہیں اور وہاں عام اور کم تنخواہ پہ←  مزید پڑھیے

جمیعت کے بارے کچھ یادداشتیں ۔۔۔ داؤد ظفر ندیم

مضمون شروع کرنے سے پہلے یہ واضح کردوں کہ یہ کوئی جمیعت کی فکری اور نظریاتی تفہیم کے جواب میں لکھا گیا مضمون نہیں، نہ ہی اس حوالے سے جمیعت کا جائزہ لیا گیا ہے۔ یہ 89 کے پنجاب یونی←  مزید پڑھیے

جہاد اور غربت کا باہمی تعلق…عظمت نواز

ہم پانچویں جماعت میں تھے تو ایک نیا طالب علم ہماری جماعت میں داخل ہوا، نام سمیع اللہ۔ بولنے میں ذرا سا توتلا مگر بہت ذہین بچہ طالب علم۔ کوئی اتا پتہ نہ تھا کہ کہاں سے ہے اور کون←  مزید پڑھیے

قوم اور قوم پرستی کا فلسفہ۔۔۔ عمران شاھد بھنڈر

دوسرا حصہ: زبان کے علاوہ اقوام کی تشکیل کے تصور میں مذہب نے ہمیشہ سے ایک فیصلہ کن کردار دا کیا ہے۔ مختلف ممالک میں زبان کے فرق کے باوجود عقائد کی یکسانیت لوگوں کے درمیان اتحاد کو قائم رکھتی←  مزید پڑھیے

خودکش بمبار بنام ماں۔۔ واجد محمود خٹک

اسلام علیکم! پیاری ماں آج آپ بہت یاد آ رہی ہیں۔ قاری صاحب سے اجازت لے کر آپ کو خط لکھ رہا ہوں۔میں یہاں خیریت سے ہوں اور قاری صاحب کے ساتھ بہت خوش ہوں۔ ہمارے قاری صاحب اور ان←  مزید پڑھیے

سماجی ہم آہنگی اور مذہبی رواداری ۔۔۔۔ عمار خان ناصر

سماجی ہم آہنگی اور مذہبی رواداری پر قراقرم یونیورسٹی میں دو روزہ ورک شاپ قراقرام انٹرنیشنل یونیورسٹی گلگت میں ۷ اور ۸ ستمبر ۲۰۱۶ءکو ”سماجی ہم آہنگی، مذہبی رواداری اور ہماری اجتماعی ذمہ داریاں“ کے عنوان پر اقبال مرکز برائے←  مزید پڑھیے