عارف خٹک کی تحاریر
عارف خٹک
عارف خٹک
بے باک مگر باحیا لکھاری، لالہ عارف خٹک

مقدمہ(غیر سیاسی کالم اور بااخلاق مضمون)۔۔۔۔عارف خٹک

لڑکیوں کےساتھ گوشت اچھا لگتا ہے۔ لڑکی اگر بھرے بھرے جسم کی ہو، تو دیکھنے میں بھی اچھی لگتی ہے۔اور محسوس کرتے ہی بندہ چرس کو طلاق دیدے۔ کرنل خان لکھتے ہیں کہ مس لوسی کامڈن دوہرے اخلاق کی حامل←  مزید پڑھیے

آؤ بچو آپ کو دبئی گھماؤں ۔۔۔ عارف خٹک

ہم جب پشاور میں تھے، تو گل زمین خان بولتا تھا کہ یار ایک بار آجاؤ دُبئی۔ آپ کو مزے نا کرائے،تو نام بدل دینا۔ خیر پروگرام بناتے ہوئے میں نے اُس سے کہا کہ دُبئی میں نہ گُھومنے پھرنے←  مزید پڑھیے

آئی ایس آئی یا انٹر سروسز انٹیلیجنس۔۔۔۔عارف خٹک/قسط1

مکالمہ ←  مزید پڑھیے

مشر منظور پشتین بھائی۔۔۔۔عارف خٹک

“مشر منظور پشتین بھائی ” السلام علیکم، میری ایک پنجابی محبوبہ تھی۔ بہت پیاری اور کومل سی۔نہایت شریف النفس اور لیے دئیے انداز میں رہنے والی شخصیت تھی۔ بیچاری نے کبھی کسی بات پر مُجھ سے شکوہ تک نہیں کیا۔←  مزید پڑھیے

میری قوم کے شاہین۔۔۔۔عارف خٹک

ہمارے پشتون دوست جب اپنے گاؤں یا علاقے سے دور کسی اور شہر یا ملک چلے جاتے ہیں،تو فوراً  سے پیشتر اپنی جیب اور شلوار کھجانی شروع کر دیتے ہیں۔ جیب میں پیسوں کا لمس محسوس کرکے وہ مطمئن ہوجاتے←  مزید پڑھیے

پاپڑ۔۔۔عارف خٹک

میں شیشے کے سامنے کھڑا حسرت سے اس شخص کو تک رہا تھا جو آئینے میں نظر آرہا تھا۔اس کی آنکھوں میں بے خوابی کے ہلکے سرخ ڈورے تھے اور چہرے پر درماندگی کے نقوش،میرے ہونٹوں پر مسکراہٹ در آئی۔۔ایک←  مزید پڑھیے

بنکاک نہیں شام چلتے ہیں۔۔۔عارف خٹک

بنکاک تھائی لینڈ میں ہے اور تھائی لینڈ ایشیاء میں ہے۔ بچپن سے لے کر آج تک سُنتے آئے تھےکہ بنکاک عیاشیوں کا اڈہ ہے۔ لہٰذا جوانی تک پُہنچتے پُہنچتے ماسکو، فِن لینڈ، پولینڈ، اٹلی، یوکرائن، ڈنمارک، ترکی، ایران، ارمینیا،←  مزید پڑھیے

یادیں ۔۔۔۔۔عارف خٹک

مجھے ہمیشہ سے اُس کا ہاتھ پکڑنے کی عادت تھی۔ راہ چلتے ہوئے میں اُس کا ہاتھ پکڑ لیتا تھااور وہ ایک ناز سے جھٹک دیتی۔ مسئلہ یہ نہیں تھا،کہ اس کو ہاتھ پکڑنے پر اعتراض ہوتا تھا۔ بلکہ میں←  مزید پڑھیے

ہماری ادھوری کہانی۔۔۔۔عارف خٹک

ماں کے مسلسل فون آرہے تھے۔تین ماہ ہوگئے ماں سے ملاقات نہیں ہوئی تھی۔ جب اپنی بے بہامصروفیات سے چھٹیاں ملیں  تو سوچا یار دوستوں کے پاس جایا جائے۔ ہفتہ دس دن کے بعد پھر ماں کو سلام کرنے پہاڑوں←  مزید پڑھیے

میں کون ہوں؟۔۔۔۔عارف خٹک

میں دن بدن عقل و خرد سے بیگانہ ہوتا جارہا ہوں۔ میرے الفاظ آہستہ آہستہ بانجھ ہوتے جارہے ہیں۔ میری انگلیاں شَل ہوتی جارہی ہیں۔ میرا حافظہ دن بدن میرا ساتھ چھوڑتا جارہا ہے۔ میں لامکاں ہوتا جارہا ہوں۔ میں←  مزید پڑھیے

اپنے بچوں کو مُرجھانے سے بچائیں۔۔۔۔عارف خٹک

میٹرک میں الحمداللہ میرے 457 نمبر آئے تھے،اور  والد صاحب نے ڈنڈا دے دیا تھا۔ زبردستی F.Sc کروائی،جس کو کرتے کرتے فزکس اور کیمسٹری سے شدید نفرت ہوگئی۔سیکنڈ ایئر میں 610 نمبر آئے۔ ابا نے ڈنڈا دےکر دوبارہ امتحان دلوایا،تو←  مزید پڑھیے

وزن کیسے کم کیا جائے؟ایک معلوماتی تحریر۔۔۔۔عارف خٹک

وزن کم کرنا وزن بڑھانے سے زیادہ آسان ہے۔ چور زرداری اور چور نواز شریف کے دور حکومت میں پیٹ دن دُگنی رات چوگنی ترقی کے منازل طے کرتے کرتے صوبہ پنجاب بن گیا تھا  کہ اچانک یعنی سڈنلی دل←  مزید پڑھیے

افغان سفیر عاطف مشعل صاحب متوجہ ہوں۔۔۔۔عارف خٹک

کبھی کبھار ایسا محسوس ہوتاہے،کہ جہاں پاکستانی اور افغانی ایک دوسرے کی ضد بن جاتے ہیں۔اور سوشل میڈیا یا کھیل کے میدان میں بچوں جیسی حرکتیں کرنے لگتے ہیں۔وہاں افغان حکومت بھی ان سے کُچھ کم نہیں۔کابل میں افغان حکومتی ←  مزید پڑھیے

کابل میں قائم پاکستانی سفارت خانے کی رشوت ستانیاں۔۔۔۔عارف خٹک

سفارت خانے کی دیوار کے پاس سینکڑوں کی تعداد میں لوگ لیٹے ہوئے ہیں۔اُنہیں دیکھ کر آپ کو لگے گا،کہ یہ سب بے گھر افغانی ہیں۔ ہر گز نہیں، بلکہ یہ سب مجبور، لاچار اور بیمار افغانی ہیں۔جو ویزے کے←  مزید پڑھیے

فلم “کتکشا “یا ابو علیحہ کا پاگل پن۔۔۔۔۔عارف خٹک

پاکستان جیسے ملک میں،جہاں کوئی فلم گنڈاسے، کلاشنکوف، حُب الوطنی اور چُوماچاٹی کے بغیر بنانا تو دُور کی بات،آپ کسی پروڈیوسر کو اپنا سکرپٹ دکھا دیں صرف،تو بھی مان جاؤں۔ کیوں کہ پروڈیوسر کو معلوم ہے،کہ عوام کو 44 انچ←  مزید پڑھیے

مُونچھ اور پشتون شاعر۔۔۔عارف خٹک

پشتو شاعری میں دو بندوں کےساتھ بہت ظُلم ہوتا آیا ہے۔ایک نرینہ محبوب سے اور دوسرا رقیب سے۔ نرینہ محبوب کو اشعار میں جلیبیاں کھلا کھلا کر اس کا منہ شیرے سے لتھڑا جاتا ہے۔اور پھر شاعر کہتا ہے کہ←  مزید پڑھیے

میرے ہم وطنو سنو۔۔۔۔عارف خٹک

اگر میں اپنی بات کروں تو میرے بچے کیمبرج سکولوں میں پڑھتے ہیں۔خود اچھا کھاتا ہوں۔ اچھا کماتا ہوں اور اچھا پہنتا ہوں۔ میں اپنی زندگی سے الحمداللہ بہت مُطمئن ہوں۔ اگر اس کے باوجود بھی کچھ ناہنجار کیڑے مجھے←  مزید پڑھیے

گریبان میں جھانکیں برائے مہربانی۔۔۔۔عارف خٹک

آج میں نے ایک مضمون لکھا۔جس میں، میں نے پی ٹی ایم میں موجود شرپسندوں کی طرف اِشارہ کیا۔ مگر پی ٹی ایم کے مجاہدین نے جس طریقے سے میری ماں اور خاندان کو ٹارگٹ کیا۔ اس پر افسوس ہی←  مزید پڑھیے

سفر نامہ لاہور۔۔۔۔عارف خٹک/دوسری قسط

بستر پر دراز ہوتے ہی ڈاکٹر خرم خٹک کا فون آگیا کہ وہ ڈاکٹر عارف مروت اور ڈاکٹر زاہد خٹک کے ساتھ آرہے ہیں۔ دس منٹ بعد تینوں بچے اندر آگئے۔ پانچ منٹ تک میں بُردباری اور متانت سے ان←  مزید پڑھیے

سفرنامہ لاہور۔۔۔۔عارف خٹک/قسط1

اسلام آباد ایئرپورٹ پر اُترا۔ تو عبدہُ کا فون آیا کہ جلدی نکل آ،لاہور چلنا ہے۔ میں نے داڑھی پر ہاتھ پھیرا اور یارِ غار فضل بڑیچ کو یاد کیا۔پھرخود ہی خود کو لعن طعن کیا کہ پنجاب کا آلۂ←  مزید پڑھیے