نگارشات

طلبہ مدارس کی سیاسی سرگرمیاں۔۔۔عبدالغنی محمدی

مدار س کے طلبہ پر ہر طرح کی بیرونی سرگرمیوں پر پابندی ہوتی ہے ۔ مدارس کی حدودمیں رہتے ہوئے کسی سیاسی ، سماجی ، عسکری جماعت  کے ونگز بنانے یا ان کے ساتھ  کام کرنے پر پابندی ہوتی ہے←  مزید پڑھیے

سچ خونی درندہ ہے۔۔۔ رمشا تبسم کی ڈائری “خاک نشین” سے اقتباس

ہر روز یہاں قتل ہوتا ہے۔ہر روز ارضِ وطن ماتم کناں ہوتی ہے۔۔ہر روز زمین کی آبیاری کسی نہ کسی کے خون سے کی جاتی ہے۔۔قاتل بھی سچا ,مقتول بھی سچا۔۔ قاتل کا سچ اور ہے مقتول کا سچ اور←  مزید پڑھیے

اشارے تو واضح ہیں سمجھنے کو ۔۔۔۔مشتاق خان

بھٹو، جونیجو، بینظیر، نواز شریف، شوکت عزیز، چوہدری شجاعت، یہ سب کے سب جب بھی حکمران بنے اس وقت کی فوجی قیادت کی رضا مندی یا ان کی مدد سے ہی بنے ۔ اس لئے خان صاحب کا فوج کی←  مزید پڑھیے

دل میں جگہ دینے والے رحمت علی رازی۔۔۔۔محمود ہاشم چوہدری

خوشیوں کے باغ   اجڑنے کا غم ابھی تازہ تھا کہ ایک اور دل فِگار خبر آئی۔۔۔ جی کی اداسی اور بڑھی، لکھناپڑھنا تو تھا ہی اوڑھنا بچھونا مگر وہ خدائی خدمت گار بھی تھا کسی عوامی نمائندے کی طرح←  مزید پڑھیے

لڑ کر مر جائیں؟ ۔۔۔ حسن کرتار

پھر کبھی کبھی یہ بھی ہوتا کہ یہ غلط ذرائع سے حاصل کی گئ شہرت الٹا گلے پڑ جاتی ہے جیسا کہ اس نوجوان بلال کے کیس میں ہوا۔۔۔ اب کچھ لوگ بلال کا مذاق اڑا رہے ہیں یا اسکے قتل کو سیریسلی نہیں لے رہے کہ یہ شدت پسند نوجوان تھا۔ مشال کے قتل پر اس نے اپنا مخصوص شدت پسندانہ مذہبی پروپیگنڈہ چلایا، لوگوں کے خلاف بلاسفیمی کی کمپینز چلایا کرتا تھا۔ اور بہت سے لوگوں کی دلآ زاری کرتا بالخصوص لبرلز اور مخالف فرقے سے تعلق رکھنے والوں کی۔۔۔←  مزید پڑھیے

لیاقت علی خاں اور آئین سازی کا عمل۔۔۔داؤد ظفر ندیم/قسط6

جناب لیاقت علی خاں آکسفورڈ یونیورسٹی سے تعلیم یافتہ تھے۔ وہ اس وقت مسلم برصغیر کی سیاست میں مشہور ہوئے جب لیاقت علی خاں نومبر 1936ءمیں آل انڈیا مسلم لیگ کے جنرل سیکرٹری منتخب ہوئے اور ایک مختصر مدت کے←  مزید پڑھیے

الجھی تانڑیں۔۔۔رانا اورنگزیب

عید سے پہلے رمضان میں جب میں بازار گیا تو دیکھا دو چھوٹے چھوٹے بچے جوکہ کاغذ سرکنڈے اور مٹی سے بنے کھلونے بیچ رہے تھے۔ان سے پوچھا بیٹا سکول کیوں نہیں جاتے؟ جواب ملا ہمارے پاپا فوت ہوگئے ہیں←  مزید پڑھیے

قدیم یونان کا تمدن ۔۔۔۔۔۔ اجمل صدیقی

بحیرہ روم   ایک ہتھیلی کی پھیلا ہوا ہے۔ جنوبی حصہ خشکی سے متصل ہے مشرق اور مغرب سمندری جزائر سے اور سامنے شمال میں بحر روم بہہ رہا ہے۔براعظمی حصہ سطح مرتفع چھوٹے دریاوں  سے بھرا ہے اور شہر←  مزید پڑھیے

عصمت ۔۔۔ معاذ بن محمود

درانی کے لیے اس کی مدد اور اس کی قربت دو الگ معاملات تھے۔ اس کے پاسپورٹ کی تصحیح میں کچھ تکنیکی مسائل تھے۔ اسلام آباد سے بھیجے جانے والے خاص بیوروکریٹ کی حیثیت سے مگر وہ کراچی میں بھی اچھا خاصہ اثر و رسوخ رکھتا تھا۔ پاسپورٹ ٹھیک ہونے میں وقت لگنا لامحالہ تھا۔ دوسری جانب اس کی جسمانی ساخت درانی کو اس میں دلچسپی لینے پر مجبور کیے رکھتی۔ عمر میں وہ درانی سے بیس سال کم تھی مگر کھاتے پیتے آسودہ گھرانے سے تعلق رکھنے کے باعث خوشحال ظاہر اس کے افسردہ باطن پر حاوی رہتا۔←  مزید پڑھیے

نانا کے نام۔۔۔۔اُمِ یوسف/اختصاریہ

یہی کوئی پانچ ،چھ برس کی ہوں گی میں۔ گرمیوں کی چھٹیاں لالہ موسیٰ میں گزرتی تھیں۔ چھت پر کھلے آسمان تلے سونے کی وجہ سے صبح صبح آنکھ کھل جاتی تھی ۔ناشتہ کرنے نیچے آتے تو ابا جی کی←  مزید پڑھیے

میرواعظ شمالی کشمیر!ہے یہی میرےزمانے کا امام برحق۔۔۔۔اشفاق پرواز

خدا  تعالیٰ کا نظام بڑا ہی عجیب ہے۔ وہ وقتاً فوقتاً ایسے افراد کو پیدا کرتا ہے جو اصلاح و رشد کا مینارہ نور، اخلاق و کردار کا کوہِ ہمالہ، شریعت و طریقت کا حسین سنگم، دعوت و ارشاد اور←  مزید پڑھیے

چے گویرا کے پہلے یومِ شہادت پر۔۔۔۔۔۔ کامریڈکم ال سنگ

(کامریڈ کم ال سنگ نے یہ مقالہ اکتوبر1968میں کامریڈ چے گویرا کے پہلے یومِ شہادت کے موقع پر ایشیا،افریقہ اور لاطینی امریکا کے اتحاد کی تنظیم کے نظریاتی مجلہTRICONTINENTAL کے لیے تحریر کیا تھا) لاطینی امریکا کا سپوت کامریڈ ارنسٹو←  مزید پڑھیے

لیاری کی شناخت۔۔۔۔ذوالفقار علی زلفی

کراچی میں لیاری کا حوالہ ہمیشہ بلوچ رہا ہے ـ اس کی اہم ترین وجہ یہاں کی سیاسی ثقافت میں بلوچوں کا فعال کردار ہے ـ پہلی بلوچ سیاسی تنظیم “بلوچ لیگ” یہاں بنی ـ عہد ساز طلبا تنظیم “بلوچ←  مزید پڑھیے

بابا جانی۔۔۔ یہ زندگی باپ کی وجہ سے ہی تو زندگی ہے/رمشا تبسم

ان کے سائے میں بخت ہوتے ہیں باپ گھر میں درخت ہوتے ہیں “بابا جانی, ابوجی,پاپا جانی, دوست, محافظ,سایہ, کہوں یا زندگی کہوں کس نام سے پکاروں, کن الفاظ میں پکاروں؟۔ انگریزی, اردو,فارسی بلکہ تمام زبانوں میں ایسا کوئی لفظ←  مزید پڑھیے

پاکستان کے ساتھ کیا ہونے والا ہے؟۔۔۔حسن کرتار

مسئلہ بہت ہی گھمبیر نوعیت کا ہے اسلئے کوشش ہوگی کہ سادہ مختصر اور فوکسڈ باتیں کی جائیں۔ یوں تو پاکستان اپنی پیدائش سے پہلے ہی کا یہ سنتا چلا آ رہا ہے کہ یہ ملک خطرے میں ہے۔ پھر←  مزید پڑھیے

تھپڑ سے نہیں ڈرتی صاحب! آئرن ڈیفیشنسی سے ڈر لگتا ہے۔۔۔صائمہ نسیم با نو

انعام رانا بھائی کی ایک پوسٹ میں سوال لکھا دیکھا کہ “تھپڑ کی سائنس کیا ہے؟” تھپڑ کی سائنس جاننے کے لئے ہم نے اپنے غیر سائنسی دماغ سے کچھ ریزننگ کی تو مندرجہ ذیل نتائج موصول ہوئے. تھپڑ ایک←  مزید پڑھیے

یہ طوطے قصر صدارت کے۔۔۔علی اختر

کہتے ہیں کہ سکندر اعظم کو ہندوستان کے ایک راجہ نے تحفتاً ایک پرندہ دیا تھا ۔ یونانی تو اس پرندہ کی حقیقت سے واقف نہ تھے سو شکریہ کے ساتھ قبول فرما لیا ۔ دراصل یہ ایک جاسوس طوطا←  مزید پڑھیے

انقلاب اور ٹوپی۔۔۔۔آزر مراد

سوال: چی گویرا کون تھا؟ جواب: چی گویرا صرف ایک انسان کا نام نہیں ہے اور چی گویرا کو صرف ایک انسان تک محدود رکھنا بھی زیادتی ہوگی. چی گویرا ایک نظریہ، سوچ، فکر، عہد، وقت یا پھر ایک پورا←  مزید پڑھیے

دوسرا رُخ۔۔۔سرفراز قمر

دس ماہ پہلے اختر مینگل صاحب نے حکومت سے اتحاد کرتے ہوئے چھ  نکاتی چارٹر آف ڈیمانڈ دیا تھا۔جس میں بلوچ مسنگ پرسنز کو منظر عام پر لانے سے لے کر بلوچوں کے حقوق وغیرہ شامل تھے۔مزے کی بات ان←  مزید پڑھیے

روتے قہقہے۔۔۔رمشا تبسم کی ڈائری”خاک نشین” سے “خود کلامی کی اذیت” کا اقتباس

کسی کے آ کر چلے جانے سے کتنی اذیت ہوتی ہے۔خدا نہ  کرے کبھی تم اس اذیت سے گزرو۔۔۔ہر شخص اس کرب, اس تکلیف کو برداشت نہیں کر سکتا۔۔۔جو روح کو دہکتے کوئلوں میں جھلسا دے۔۔ تم نے کہا تھا←  مزید پڑھیے