مکالمہ کی تحاریر
مکالمہ
مکالمہ
مباحثوں، الزامات و دشنام، نفرت اور دوری کے اس ماحول میں ضرورت ہے کہ ہم ایک دوسرے سے بات کریں، ایک دوسرے کی سنیں، سمجھنے کی کوشش کریں، اختلاف کریں مگر احترام سے۔ بس اسی خواہش کا نام ”مکالمہ“ ہے۔

مارکسزم اور جدیدیت / ترقی کی جدلیات و تضادات(قسط1)۔۔۔کامریڈ بشارت عباسی

ہم جب بھی کسی نظریہ کے متعلق بات کرتے ہیں تو پہلا سوال یہی ذہن میں آتا ہے کہ آخر جس نظریے کے متعلق بات کی جا رہی ہے ،وہ ہے کیا؟ ۔ تو بحث کو آگے بڑھانے سے پہلے←  مزید پڑھیے

دس روپے میں عزتِ نفس دیں(وباء کے دنوں میں سخیوں کو ایک فضول مشورہ)۔۔۔اعظم معراج

میرے ایک دوست نے مجھ سے اپنی چھوٹی سی کہانی شیئر  کی ،اچھی لگی،آپ بھی سُنیے! میرا یہ دوست مسیحی ہے،اور معاشرے میں مناسب سی معاشی سماجی و معاشرتی حیثیت رکھتا ہے۔لیکن میلے ٹھیلوں سے دور بھاگتا ہے۔کچھ دن پہلے←  مزید پڑھیے

برکت۔۔ربیعہ سلیم مرزا

چینی کی قیمت 70 روپے سے بڑھ کے 80روپے ہو گئی ۔وزیراعظم نے اسکا نوٹس لے لیا ۔۔۔ ٹی وی کی تیز آواز سے اس کی آنکھ کھل گئی ۔ “اٹھ بھی جاؤ مجھے بھوک لگی ہے ” اس بندے←  مزید پڑھیے

نواز شریف ہم سب کے دلوں کی دھڑکن ہے۔۔محمد اسلم خان کھچی ایڈووکیٹ

1996 سے شروع ہونے والی 24 سالہ جدوجہد اپنے انجام کی طرف گامزن ہے۔ تاریخ لکھی جائے گی کہ ایک شخص اٹھا اس نے ایک شاہانہ طرز زندگی ٹھکرا کے قوم کو ایک عظیم قوم بنانے کی کوشش کی۔ ملک←  مزید پڑھیے

مجھے کرونا سے خوف کیوں نہیں آتا؟۔۔احمد صہیب اسلم

کرونا سے زندگی اور اس کی رنگینیاں بدل رہی ہیں، ہر طرف بے یقینی کی کیفیت ہے لیکن اس مشکل وقت نے گزر جانا ہے ۔ میرے لئے کرونا تھوڑی سی ہاتھ دھونے ، چہرے کو ٹچ نہ کرنے اور←  مزید پڑھیے

عطائیت کے حوالے سے عوام کی غلط فہمیاں۔۔آصف خان

کراچی کے علاقے پنجاب کالونی میں  ایک شخص عطائیت کی بھینٹ چڑھ گیا جب عطائی ڈاکٹر نے اسے کرونا کا مریض قراردے دیا تھا ،جس پر اس شخص نے اپنے خاندان کو بچانے کی  خاطر خودکشی کرلی لیکن اب تک←  مزید پڑھیے

اے دلِ ناداں،آرزو کیا ہے۔۔۔۔رفعت علی خان

ہاں جوان، اب بتاؤ کہ تمہارا تعلق کہاں سے ہے، اور کس چیز کی  تلاش تمہیں سفر میں کھینچ لائی؟ میزبان نے پوچھا۔۔ مہمان نے لمبی سانس لی، اور یوں گویا ہوا۔۔ اے مرے محسن، قصّہ کچھ یوں ہے، کہ←  مزید پڑھیے

اٹھارہویں صدی کے دو اہم واقعات۔۔۔توقیر کھرل/قسط1

مغل بادشاہ بہادر شاہ ایک وسیع القلب انسان تھے۔وہ ہندوؤں کے جذبات کی بھی قدر کرتے تھے اور ان کی بعض رسوم بھی ادا کرتے تھے۔ انہوں نے شاہ عباس کی درگاہ پر ایک علم چڑھانے کے لیے لکھنؤ بھیجا←  مزید پڑھیے

”ناخن بال نرس اور کورونا ویکسین“ (فکاہیہ)۔۔مرزا یاسین بیگ

گھر بیٹھے بیٹھے سب سے زیادہ تیزی سے بال اور ناخن بڑھ رہے ہیں۔ ایسا لگ رہا ہے کہ ہم کام کاج کیے بغیر جو اضافی کھانا کھارہے ہیں وہ صرف بالوں اور ناخنوں کو لگ رہا ہے ۔ گھر←  مزید پڑھیے

ہم تیار نہیں تھے ۔۔۔ مسعودچوہدری

ایک پاکستانی باپ ، بھائی، بیٹا، ہونے کی حیثیت سے راقم آپ کے سامنے معافی مانگتا ہے۔ جب آپ معاف کر دیں گے تو اللہ رب العزت بھی فوراً معاف فرما دیں گے۔ آپ حیران ہوں گے کہ میں آپ←  مزید پڑھیے

ہمہ نا امیدی ، ہمہ بدگمانی۔۔رضوانہ سیّد علی

میری امی بتایا کرتی تھیں کہ تقسیم کے وقت جب لاہور میں فسادات پھیل گئے ، تب شہر کو کرفیو لگا کر ، ڈوگرہ رجمنٹ کے حوالے کر دیا گیا ۔ یہ رجمنٹ اپنی شقاوتِ قلبی کے حوالے سے پورے←  مزید پڑھیے

وبا اور نااہلی۔۔ڈاکٹر وقاص احمد

ہمارے معاشرے میں تفریق کا عمل کتنا گہرا ہو چکا ہے ۔اگر اس مظہر کا فیس بک کے ذریعے اندازہ لگانے کی کوشش کی جائے تو نظر آتا ہے کہ وبا جیسی آفت بھی ہمیں ایک مشترکہ کاز کے لئے←  مزید پڑھیے

ایسا دیس تھا میرا۔۔۔عارف خٹک

1995 میں یاشیکا کیمرے میں 150 روپے اگفا کی فلم ڈال کر سرسوں کے  کھیت میں اکڑوں بیٹھ کر تصویریں بنوانے  کا بھی اپنا ایک مزہ تھا۔ جس شام ٹھنڈی ٹھنڈی ہوائیں چلتی تو سرسوں کے پھول دائیں بائیں کانوں←  مزید پڑھیے

آکاس بیل۔۔عمر قدیر اعوان

یہ مارچ کے آخری ایام تھے جب دن خوب کھلے ہوئے ،تمازت بھری دھوپ سے بھرپور اور راتیں خاموشی، سکون اور خُنکی  لیے ہوئے ہوتی ہیں۔ ایسی ہی ایک چاند کی چودھویں رات میں کلر کہار جھیل کے قریب ایک←  مزید پڑھیے

درگاہ نظام الدین اولیا۔۔لیاقت علی

اب توچھ سات سال ہونے کو آئے ہیں کہ بھارت جانے کا موقع نہیں ملا۔ اُ س سے پہلے متعدد باربھارت جانا ہوا۔بھارت کے دارالحکومت دلی جائے تو نظام الدین اولیا کی درگاہ پر نہ جائے یہ شائد ممکن نہیں←  مزید پڑھیے

موذی وبا، حکومت کی کوششیں اور سفارتکاری۔۔علی عمران

دسمبر 2019 ہمارے ہمسایہ ملک چین اور یہاں کے باسیوں کے لیے بہت تکلیف دہ ثابت ہوا اور اس  کی وجہ صرف اور صرف ووہان سے پھوٹنے والی انسانی تاریخ کی بد ترین اور موذی وباء Covid 19  ہے ،جو←  مزید پڑھیے

ایدھی صاحب! آپ نے اچھا نہیں کیا ۔۔۔ شاہکام جمال

ان کی نظریں مشکل وقت میں ہمیشہ ایدھی صاحب اور مخیر حضرات پر مرکوز رہیں۔ جب جب اس قوم پر مشکل وقت پڑا، اس قوم کو جذباتی نعرے دیئے گئے۔ 65 کی جنگ ہو یا 2005 کا زلزلہ اس قوم نے فلاحی کاموں میں اس قدر بڑھ چڑھ کر حصہ لیا کہ مشکلات بھی ان کے عزم و ہمت کا مقابلہ نہ کرسکیں۔←  مزید پڑھیے

پاکستانی مسیحی کا کھتارسس، چند معاشی سفارشات۔۔اعظم معراج

پاکستان میں شعبہ صفائی سے وابستہ اٹھانوے فیصد افراد کا تعلق پاکستان کے 33لاکھ مسیحیوں اور پانچ لاکھ شیڈول کاسٹ ہندوؤں میں سے ہے۔گوکہ ان میں پہلے روسں ، امریکہ اور ہمارے دور اندیشوں کی کوشش سے ہزاروں افغانی بھی←  مزید پڑھیے

موت کی آخری قسط۔۔احمد نعیم

جنگل میں صدیوں سے ڈٹا ہوا یہ پتلا گزشتہ صدی تک تو خاکی رنگ سے میٹ میلا ہوا تھا، مگر ان دس دہائیوں کے درمیان یہ مسلسل سیاہ ہوتے ہوتے اِس قدر منحوس سیاہ ہوگیا ہے، اِس کی سیاہی اور←  مزید پڑھیے

کرونا:آئیے مل کر کچھ کریں

دوستو کرونا کی شکل میں آنے والی اس آفت میں ہم سب فکرمند ہیں، اک دوجے کی ڈھارس بندھاتے ہیں مشورے دیتے ہیں ڈراتے ہیں احتیاطی تدابیر بتاتے ہیں۔ بلاشبہ یہ اہم کام ہے۔ لیکن اب جبکہ جزوی سہی لاک←  مزید پڑھیے