گوشہ ہند

سوچھ بھارت اَبھیان اوردلت سماج۔۔ابھے کمار

 دواکتوبر کے روز آپ نےاخباروں میں سوچھ بھارت ابھیان کی کامیابی سے متعلق بہت سارے اِشتہار دیکھے ہوں گے۔ ٹی وی کیمرے کے سامنے ملک کے بڑے بڑے لیڈر جھاڑوپکڑے، سفائی کرتے دیکھے  گے۔ پریس کی موجودگی میں بڑے بڑے فلم سٹاراوردیگر مشہور شخصیات صفائی کرتے ہوئے پوز دیتی  رہیں←  مزید پڑھیے

بالا کوٹ، کشمیر اور ہندوستان۔۔ارون دھتی رائے/انگریزی سے ترجمہ- ارجمند آرا

حملہ کتنا بھی افسوس ناک کیوں نہ ہو، نریندر مودی کےلیے یہ ایک شاندار سیاسی موقع تھا ایسا کچھ کرنے کا جس میں وہ ماہر ہے—شاندار نمائش۔ ہم میں سے بہت سے لوگوں نے مہینوں پہلے پیش گوئی کرکے آگاہ←  مزید پڑھیے

آزادی کے۷۵ سال اورمسلمان۔۔ابھے کمار

گزشتہ دنوں بھارت کی آزادی کی ۷۵ ویں سال گزر جانے کا بڑا جشن منایا گیا۔ ہر طرف لوگ قومی پرچم لیے ملک پر اپنی جان قربان کر دینے والے مجاہد آزادی کو خراج عقیدت بھی پیش کیا۔ یہ موقع←  مزید پڑھیے

کابل میں طالبان: قیافے اور حقیقت۔۔ڈاکٹر وید پرتاپ ویدک

کابل پر افغان طالبان کے قابض ہو جانے کے بعد ان کے بارے کئی طرح کے قیافے لگائے جا رہے ہیں‘ اور اندازے قائم کئے جا رہے ہیں۔ ایک کہتا ہے کہ طالبان فلاں ملک کے تابع ہیں جبکہ دوسرا←  مزید پڑھیے

کابل:بھارت کی بولتی بند کیوں؟۔۔ڈاکٹر وید پرتاپ ویدک

پچھلے کئی ہفتوں سے میں برابر لکھ رہا تھا اور ٹی وی چینلوں پر بول رہا تھا کہ کابل پر طالبان کا قبضہ ہونے والا ہے لیکن مجھے حیرانی ہے کہ بھارتی وزیراعظم کا دفتر‘ وزارتِ خارجہ اور خفیہ محکمہ←  مزید پڑھیے

کورونا وبا اور ہندو میلے۔۔ڈاکٹر وید پرتاپ ویدک

آج کل بھارت کی حکومت کے کئی اہم فیصلوں کاآخری فیصلہ عدالتیں کر رہی ہیں۔ ایسا ہی ایک بڑا معاملہ کانوڑ یاترا میلے کا ہے۔اس میلے میں 3 سے 4کروڑ لوگ حصہ لیتے ہیں۔ اترپردیش کی بھاجپا سرکار نے اس←  مزید پڑھیے

شہنشاہ جذبات دلیپ کمار کی یاد میں خراج عقیدت۔۔دیپک بُدکی

میں کشمیر گورنمنٹ آرٹس ایمپوریم کے اشوکا ہوٹل نئی دہلی برانچ میں ١٩٧٢ میں بحیثیت منیجر تعینات تھا۔ بالی ووڈ کی کئی شخصیات ہوٹل میں آتی تھیں اور کچھ دن قیام کرتی تھیں۔ چند ایک کا اتفاقاً سامنا ہوا، میں←  مزید پڑھیے

عمران خان اور ان کے مخالفین کا بُغض۔۔محمد غزالی خان

میں پاکستان کبھی نہیں گیا۔ممکن ہے اس بنیاد پر بہت سے دوست یہ اعتراض کریں کہ میں کسی ایسے ملک کی سیاست پر تبصرہ کیسے کرسکتا ہوں جو میں نے کبھی دیکھا تک نہیں۔ مگر ایسے تو دنیا کے بہت←  مزید پڑھیے

ڈاکٹر ابھے کمار:جدید اردو صحافت کا ایک بے لوث خادم۔۔وصی احمد الحریری

وہ جمعہ کا دن تھا اور نماز سے ذرا قبل ہم اپنے ہاسٹل کے میس میں چند دوستوں کے ساتھ لنچ کر رہے تھے کہ ابھے کمار بھائی کے اسی دن روزنامہ انقلاب میں شائع کسی مضمون پر کھانے کے←  مزید پڑھیے

امرتا پریتم کی “رسیدی ٹکٹ” کا جائزہ۔۔وکی کمار ایڈووکیٹ

امرتا پریتم کی لکھی ہوئی سوانح عمری”رسیدی ٹکٹ” کو آج پڑھ کر مکمل کیا ہے اور کمال کی بات تو یہ ہے کہ “رسیدی ٹکٹ” (اردو ترجمہ) اردو ادب کی وہ پہلی کتاب ہے جس کو میں نے ایک ہی ←  مزید پڑھیے

مودی جی شکست تسلیم کیوں نہیں کرنا چاہتے؟ دیدی سے کیا الرجی ہے؟۔۔عبدالعزیز

نریندر مودی نے ممتا بنرجی کو بنگال کے اسمبلی انتخاب میں ہرانے کے لیے ہر حربے کا بے دریغ استعمال کیا۔ تہذیب سے گری ہوئی حرکتیں کیں۔ دیدی اودیدی کا طنزیہ فقروں کا ہر انتخابی جلسے میں استعمال کیا۔ دو←  مزید پڑھیے

مودی کا نیاپی ایم ہاؤس یا شداد کی جنت۔۔افتخار گیلانی

کرونا وائرس کی دوسری خوفناک لہر سے نپٹنے میں ہنوز ناکامی اور مغربی بنگال کے صوبائی انتخابات میں شکست نے وزیر اعظم نریندر مودی اور انکے حواریوںکی چولیں ہلا کر رکھ دیں ہیں۔ بین الاقوامی میڈیکل جریدے لانسٹ نے اپنے←  مزید پڑھیے

کرونا مہاماری سے مچی تباہی میں مسیحا بننے کی ضرورت۔۔غازی سہیل خان

گزشتہ ہفتے میرا ایک کالم اس مہلک بیماری کے حوالے سے مکالمہ اور  کشمیر کے موقر روزنامہ   میں شائع ہواتھا۔اور آج مجبوراً اسی طرح ملک کے درد  نا ک  حالات کودیکھتے ہوئے  پھر سے  لکھنے پہ مجبور ہو گیا ہوں←  مزید پڑھیے

کامریڈ سَرین! آپ کو آخری لال سلام۔۔ارجمند آراء

کامریڈ رمیش کمار سرین کا جیون ایک لمبا سنگھرش تھا۔ دو تین سال کے تھے جب کسی بیماری میں ان کی آنکھیں چلی گئیں۔ بڑے ہوتے ہوتے لیکن اس محرومی سے وہ ٹوٹے بکھرے نہیں۔ زندگی کے چیلنجوں کو مات←  مزید پڑھیے

کرونا کا وحشت نا ک رُخ- حکمرانوں کی بے حسی کا شاخسانہ۔۔غازی سہیل خان

کورونا کی دوسری شدید   لہر نے اس وقت پورے بھارت کو اپنی لپیٹ میں لے لیا ہے۔بیماری بڑی تیزی سے پھیل رہی ہے پہلی لہر میں تو تیس سال سے زائد عمر کے لوگوں کو یہ بیماری زیادہ متاثر کر←  مزید پڑھیے

کیا بھارت میں مکافات عمل ہو رہا ہے؟۔۔علی بخاری

کرونا کی حالیہ لہر پر لکھنے کے لیے کئی دوستوں نے حکم دیا ،لیکن ہر ایک کو یہی کہا کہ کیا لکھیں، کیوں لکھیں اور کیسے لکھیں کہ جس سے کسی اربابِ اختیار کے کان پر جوں رینگ جائے، جب←  مزید پڑھیے

دہلی کی تہاڑ جیل میں گزرا رمضان(ایک پرانا کالم)۔۔افتخار گیلانی

کرونا وائرس نے لاک ڈاؤن کے ذریعے پوری دنیا کو ایک قید خانہ میں تبدیل کردیا ہے۔ جنہوں نے کبھی جیل نہیں دیکھی یا آزاد ممالک کی آزاد فضاؤں میں ہی سانسیں لی ہوں، ان کو قید و بند کی←  مزید پڑھیے

مقبوضہ کشمیر سے منسلک ماضی کی تدفین۔۔غزالی فاروق

” بھارت اور پاکستان کے مستحکم تعلقات جنوبی اور وسطی ایشیا کی اُن صلاحیتوں کو کھولنے کی چابی ہیں،جن سے اب تک فائدہ نہیں اٹھایا گیا ۔۔۔اس مسئلے کی بڑی وجہ کشمیرکا تنازعہ ہے۔ ہم محسوس کرتے ہیں کہ اب←  مزید پڑھیے

بھارت: نیکسلائٹوں کا پیغام اور قبائلی تشخص۔۔افتخار گیلانی

تقریباً آٹھ سال کی نسبتاً خاموشی کے بعد بھارت کے وسطی صوبہ چھتیس گڑھ میں بائیں بازو کے ماوٗ نواز انتہا پسندوں جنہیں عرف عام میں نکسلائٹ کہتے ہیں، نے گھات لگا کر ایک بڑا حملہ کرکے 22سیکورٹی اہلکاروں کو←  مزید پڑھیے

ادبی فائل/باقی ہے نام ساقیا تیرا تحیرات میں ( صلاح الدین پرویز کی یاد میں )(دوسری قسط،ب)۔۔۔مشرف عالم ذوقی

”وہ اپنے گھر سے نکل پڑاتھا سپید شب کی مسافری سے سیاہ سورج کا غم اٹھائے وہ اپنے گھر سے نکل پڑا تھا یہ کیسا گھر ہے مہک رہا ہے یہ کیسا بستر ہے جل رہا ہے خدا: تو ہمارے←  مزید پڑھیے