مہمان تحریر کی تحاریر
مہمان تحریر
مہمان تحریر
وہ تحاریر جو ہمیں نا بھیجی جائیں مگر اچھی ہوں، مہمان تحریر کے طور پہ لگائی جاتی ہیں

ایران کے مقابلے میں ڈونلڈ ٹرمپ کی بوکھلاہٹ۔۔عبدالحمید بیاتی

موجودہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے برسراقتدار آتے ہی عالمی معاہدوں سے یکطرفہ طور پر دستبرداری کا سلسلہ شروع کر دیا تھا۔ انہی معاہدوں میں سے ایک ایران، مغربی ممالک، روس اور امریکہ کے درمیان طے پانے والا جوہری پروگرام←  مزید پڑھیے

موجودہ حکومت و اپوزیشن کا کردار اور ڈرامہ ارتغرل غازی میں مماثلت۔۔یوسف خان

اگر حقیقت کی نگاہ سے دیکھا جائے تو پاکستان پر اس وقت ایک قبیلہ کی حکومت ہے جسے باجوہ قبیلہ کہا جاتا ہے جبکہ جمعیت علماء اسلام اس سارے سیناریو میں قائی قبیلے کا کردار ادا کررہی ہے، ن لیگ←  مزید پڑھیے

ہم نے سورج نکلتے نہیں دیکھا۔۔شاہد ملک

قصہ تو بہت سادہ سا ہے، لیکن اسے پڑھ کر انسان کی ہنسی بھی چھوٹ سکتی ہے اور مارے غم کے آنکھوں میں آنسو بھی آ سکتے ہیں۔ ابتدائی کہانی انگلش لٹریچر میں ایم فل کی ڈگری اور سات سالہ←  مزید پڑھیے

گلی بھر کی مسافت(قسط1)۔۔عارف امام

نوجوانی میں ایک شعر کہا تھا “اک عمر چلا اور ترے گھر تک نہیں پہنچا یہ ایک گلی بھر کی مسافت بھی عجب ہے” یاد داشتیں لکھنے بیٹھا تو وہ گلی بھی یاد آئی اور یہ شعر بھی، سوچا کہ←  مزید پڑھیے

حمل سرا سے مرد کا بلاوا اور عورت کا گناہ۔۔طاہرہ کاظمی

ڈاکٹر فرحت ہاشمی کا بصیرت افروز لیکچر سنا !مرد کے بلاوے پر عورت کے انکار کی پاداش میں ارواح قدسی کی لعنت کی وعید پا کر، یقین جانیے، روح تک لرز گئی۔ دل کی دھڑکن تیز ہو گئی، ٹھنڈے پسینے←  مزید پڑھیے

مغربی دنیا اور بچوں کے حقوق(1)۔۔ڈاکٹر راشد عباس

عالمی اور مغربی میڈیا مغرب اور امریکہ کو انسانی حقوق کے لیے مثالی اور آئیڈیل قرار دیتا ہے۔ میڈیا کا پروپیگنڈا اس قدر شدید اور وسیع ہے کہ انسانی حقوق کا نام آتے ہی مغربی دنیا کا نرم و ملائم←  مزید پڑھیے

سیاست کو عزت دو۔۔خورشید ندیم

سیاست کو عزت ملے گی تو اپوزیشن کو عزت ملے گی۔ اپوزیشن ہی کو نہیں، میڈیا کو بھی۔ سرتوڑ کوشش جاری ہے کہ سیاست دانوں کی آڑ میں سیاست اور صحافیوں کی آڑ میں صحافت کو گالی بنا دیا جائے۔←  مزید پڑھیے

امریکہ اور جوہری ہتھیاروں کی نئی دوڑ۔۔محمد افخمی

جب ایک امریکی وزیر امریکہ کی جوہری طاقت میں اضافے کی بات کرتا ہے تو اس کا مطلب یہ ہے کہ وہ چین اور روس کے پاس موجود جوہری ہتھیاروں کے مقابلے میں اپنی پسماندگی کو بھانپ چکا ہے۔ البتہ←  مزید پڑھیے

پاکستان میں نئے شہر بسانے کے منصوبے اور خستہ حال موجودہ شہر۔۔رضوان اکبر علی

گزشتہ تین ہفتوں میں ہمارے مرکزی شہر کچھ اس طرح سے خبروں کی زینت بنے؛ 1۔ اسلام آباد میں وفاقی وزارت ماحولیاتی تبدیلی غیر قانونی تعمیرات کے خلاف پالیسی بنانے پر غور کر رہی ہے۔ پالیسی کا مقصد اسلام آباد←  مزید پڑھیے

طالبہ کی خودکشی، استاد کا قتل۔۔علیم احمد

سوشل میڈیا کے زہریلے تیروں سے ڈاکٹر اقبال کی عزت کا قتل کرنے کے بعد تیز دھار ہیش ٹیگز سے لاش کا مثلہ کیا جارہا ہے۔ آپ مجھ سے اختلاف کیجیے یا اتفاق، لیکن میں یہی کہوں گا کہ نادیہ←  مزید پڑھیے

گیٹ نمبر نو کے چوکیدار اشرف نذیر کا اپنی بیٹی ثریا کے نام خط ۔

میری جان ، 1993 میں ڈبل میتھس فزکس میں بی ایس سی کرنے کے باوجود مجھے کوئی ڈھنگ کی نوکری نہ ملی تو یہاں سکیورٹی اسسٹنٹ کے طور پر ملازمت شروع کر دی کیونکہ تمھاری ماں رقیہ کی چھاتیوں میں←  مزید پڑھیے

سکندر اعظم بھی نقشہ جاری کر کے پوری دنیا فتح کر سکتا تھا۔۔صلاح الدین مغل

۵ اگست کو پاکستان بھر میں یومِ استحصالِ کشمیر منایا گیا۔ چھوٹے بڑے تمام شہروں میں کشمیری بھائیوں سے اظہار یکجہتی کیلئے ریلیاں نکالی گئیں اور اقوام عالم کو اس دیرینہ مسئلہ کے حل کی جانب متوجہ کرنے کی کوشش←  مزید پڑھیے

کشمیر میں بھارت اسرائیل کی راہ پر۔۔سید ثاقب اکبر

جب کبھی مسلمان خاص طور پر عرب فلسطینیوں کے حقوق کے بارے میں بظاہر سنجیدہ تھے، بھارت اسرائیل سے اپنے تعلقات کو مخفی رکھے ہوئے تھا۔ اب فلسطینی حقوق کے دعویدار عرب اسرائیل سے دوستی کی پینگیں بڑھانے میں ایک←  مزید پڑھیے

اُسوۂ ابراہیمی! سرِ تسلیم ہے خم تیری رضا کے آگے۔۔۔محمد اعظم ندوی

آج قربانی کا عظیم الشان دن ہے،ہم اپنی اپنی استطاعت کے مطابق اللہ کی رضا کے لیے جانوروں کی قربانی کریں گے،عید الاضحی ہمارے دو سالانہ تہواروں میں ایک ہے،ہم آپ کو دل کی گہرائیوں سے عید الاضحی کی مبارکباد←  مزید پڑھیے

آمنہ مفتی کا ناول “پانی مر رہا ہے” : اردو ناول مر رہا ہے ۔۔فیصل اقبال اعوان

موسمی نقادوں اور مبصروں نے عظیم، اہم، رجحان ساز، شاندار اور عمدہ ناول جیسی اصطلاحات کو ان کے بے موقع و بے محل کثرتِ استعمال سے بے وقعت اور حقیر کر دیا ہے۔ قارئین ان صاحبان کے جھوٹے تبصروں اور←  مزید پڑھیے

بزدار کب جائیں گے؟۔۔خورشید ندیم

عمران خان عثمان بزدار صاحب کی پشت پہ بدستور کھڑے ہیں۔ صحافتی پیش گوئیاں ایک بار پھرخطرے میں پڑ گئیں۔ جس سیاست کی کوئی کَل سیدھی نہ ہو، اس کے بارے میں کوئی پیش گوئی کیسے کی جا سکتی ہے؟←  مزید پڑھیے

جب جگدیپ کا اصلی سورما بھوپالی سے ٹاکرا ہو۔۔سفیان خان

یہ 1976 کا ایک دن تھا، ’شعلے‘ سپر ڈوپر ہٹ ہو چکی تھی اور جگدیپ اس کی کامیابی کے مزے لوٹ رہے تھے۔ جگدیپ جعفری ایک فلم کی عکس بندی میں مصروف تھے۔ فلم کے سیٹ پر سبھی تیار تھے،←  مزید پڑھیے

ایک گھونٹ کافی دینا۔۔جاوید چوہدری

یہ اس زمانے کی بات ہے جب میں ویگنوں‘ بسوں اور ٹرینوں میں سفر کرتا تھا‘ آپ بھی اگر کبھی اس لذت سے ہم کنار رہے ہیں تو پھر آپ اچھی طرح جانتے ہیں ٹرین میں کوئی ایک بے چارہ←  مزید پڑھیے

سرمد کھوسٹ کی فلم اور مجھے ’’بکری‘‘ بنانے والا ماحول۔۔نصرت جاوید

ترکی کے صدر نے پندرہ سو برس قبل تعمیر ہوئی ایک عمارت میں خلافتِ عثمانیہ کے دوران بنائی مسجد کی ’’بحالی‘‘ کا اعلان کیا تو اس کی بابت کچھ لکھنے کی ضرورت محسوس ہوئی۔متعلقہ کالم کے آغاز ہی میں نہایت←  مزید پڑھیے

تیسری قوت؟۔۔خورشید ندیم

سیاست میں تیسری قوت کا کوئی وجود نہیں ہوتا۔ اسے بھی مغالطوں کی فہرست میں شامل کر لیجیے: دسواں مغالطہ۔ سیاست فطری ہو، جیسے امریکہ یا برطانیہ میں ہے یا غیر فطری، جیسے پاکستان میں ہے، بنیادی قوتیں دو ہی←  مزید پڑھیے