کالم    ( صفحہ نمبر 141 )

قدرِمشترک اور دردِمشترک۔ہارون الرشید

یہ عام مشاہدے کی بات ہے کہ  کسی زمانے میں پمفلٹس اور ہینڈ بلز کے ذریعے ایسا ہوتا تھا، پھر موبائل فونز پر پیغامات کے ذریعے ہونے لگا اور اب سوشل میڈیا کے ذریعے ہوتا ہے کہ ہر سال محرم الحرام←  مزید پڑھیے

کیا ہم آزاد ہیں؟۔۔۔ راؤ شاہد محمود

پاکستان کو آزاد ہوئے 70سال ہو چکے ہیں لیکن اس ملک میں ہوے والا ظلم  نا انصافی اور بعض مقتدر حلقوں اور ان میں چھپے افراد کی طرف سے کروڑوں عوام کو محسوس اور غیر محسوس طریقے سے باور کرانا←  مزید پڑھیے

داعش کی فکری شکست بہت ضروری ہے(آخری قسط)۔۔۔ طاہر یاسین طاہر

جیسا کہ یہ بات طے ہے کہ عام اور سطحی مذہبی رحجان والوں کو جہاد،خلافت یا صحابہ و دیگر قابل تعظیم ہستیوں کے نام پر ورغلانا  بہت آسان ہوتا ہے۔ ہم دیکھتے آرہے ہیں کہ ایسا ہی ہو رہا ہے←  مزید پڑھیے

دامن خالی!ہاتھ بھی خالی۔محمد اظہار الحق

فیض آباد دھرنا کس کے لیے چیلنج تھا؟ وفاقی حکومت کے لیے وفاقی حکومت کس کی تھی؟ مسلم لیگ نون کی! مسلم لیگ نون کا سربراہ کون ہے؟ میاں محمد نواز شریف قائداعظم ثانی! پارٹی میں ان کا نائب کون←  مزید پڑھیے

داعش کی فکری شکست بہت ضروری ہے(حصہ اول)۔۔۔طاہر یاسین طاہر

وحشتوں کے ہر سفیر کا مقدر شکست ہے۔خواہ وہ القاعدہ ہو یا داعش،تحریک طالبان پاکستان ہو یا لشکر جھنگوی العالمی یا مقامی۔تاریخ انسانیت حسن بن سباح کے فدائین فتنے سے بھی آگاہ ہے۔ہر انسانیت کش کا انجام بالاآخر شکست و←  مزید پڑھیے

سن 1856 کا پاکستان۔۔ انعام رانا

 سن اٹھارہ سو ستاون نے برصغیر میں بہت کچھ بدل ڈالا، ہمیشہ کیلئیے۔ مگر سن اٹھارہ سو چھپن میں وہ سب کچھ بدل رہا تھا۔ عظیم مغل سلطنت قدموں پہ تھی گو ابھی سجدے میں جا کر سر کٹانے میں←  مزید پڑھیے

گل وچ ہور اے۔منصور ندیم

22 دن کے دھرنے کے بعد قوم کو کیا ملا، 6 لوگوں کی ہلاکت، سیکنڑوں کے زخمی ہونے ، اربوں روپے کے نقصان اور ملک کا تشدد آمیز چہرہ بیرون ملک دکھانے کے بعد اگر اب وزراء مستعفی ہونے جارہے←  مزید پڑھیے

واجب القتل کون؟۔۔۔روبینہ فیصل

مولوی صاحب!!کیا اسلام صرف نماز، روزہ، داڑھی اور عبا و عمامہ کا نام ہے؟ کیا اسلام جنت میں حوریں، شہد، اور دودھ کی نہروں کا لالچ یا دوزخ کی دہکتی آگ کا ڈراوا ہے؟ اور روح کی صفائی کا کوئی←  مزید پڑھیے

زندہ درگور بُڑھیا۔محمد اظہار الحق

بال بکھرے ہوئے تھے۔چہرے پر خراشیں تھیں ۔ٹخنوں سے خون بہہ بہہ کرجوتوں میں جم گیا تھا۔گھٹنے زخمی تھے۔ہاتھوں کی کئی انگلیاں ٹوٹی ہوئی تھیں ۔چلی تو لنگڑا رہی تھی۔سانس فوراً پھول جاتا تھا۔ مجھے دیکھا تو  رُک گئی۔ اس←  مزید پڑھیے

داعش کے خاتمے کی قیمت؟؟؟ڈاکٹر ندیم عباس

داعش ایک طوفان کی طرح شام اور عراق میں داخل ہوئی، ہزاروں ڈبل کیبن گاڑیوں پر سوار راکٹ لانچر تھامے لمبی داڑھیاں رکھے یہ لوگ دنوں میں موصل جیسے بڑے شہر پر قابض ہوگئے۔ حیرت کی بات یہ ہے کہ←  مزید پڑھیے

بیٹا چڑھ جا سولی ،رام بھلی کرے گا۔محمد اظہار الحق

چوہدری صاحب کے بچوں نے پڑھنا لکھنا تو تھا نہیں ،ضرورت بھی نہیں تھی۔کھیت،زمینیں ،لمبی چوڑی جاگیر،جس کی پیمائش ہی نہ ہوسکتی تھی۔گاڑیوں کے بیڑے،اسمبلی کی جدی پشتی ممبریاں ،وزارتیں سب کچھ تو میسر تھا۔ایسے میں کالج، یونیورسٹی کی پڑھائیاں←  مزید پڑھیے

انسانی جان بچانے والی ادویات کی قیمتوں میں اضافہ کیوں؟۔۔۔ طاہر یاسین طاہر

حکومتیں خواہ جمہوری ہوں یا آمرانہ، بادشاہت ہو کوئی اور طرز حکمرانی،سب کی کچھ نہ کچھ اولین ذمہ داریاں ہوتی ہیں۔ جمہوری حکومت فی الواقع قائم ہو یا نام نہاد ہو، اس کی ذمہ داریاں بہر حال زیادہ ہو جاتی←  مزید پڑھیے

میاں صاحب کا طرزِ حکومت،تازہ ترین مثال۔محمد اظہار الحق

میاں محمد نواز شریف کے  عہدِ حکومت میں اداروں کی تباہی کی بات اتنی بار دہرائی جاچکی ہے کہ اس کا تذکرہ کرنا عبث لگتا ہے۔ دونوں بھائیوں  کو خدا سلامت رکھے ‘اس قدر مستقل مزاج ہیں  کہ کسی احتجاج’←  مزید پڑھیے

ایم ایم اے کی اثر پذیری ۔ طاہر علی خان

کیا ایم ایم اے یعنی متحدہ مجلس عمل بحال ہوجائے گی؟ کیا ایم ایم اے کی بحالی سے مذہبی سیاسی پارٹیوں کو کوئی خاص کامیابی مل سکے گی؟ ایم ایم اے کی بحالی کے حامی کہتے ہیں پاکستانی راۓ دہندگان←  مزید پڑھیے

ہم علما کے پیروں کی خاک ہیں۔محمد اظہار الحق

رائے ونڈ میں  عالمی تبلیغی اجتماع کی آمد آمد تھی۔نو نومبر کو مولانا طارق جمیل  جاتی امرا  میں سابق  وزیراعظم میاں محمد نواز شریف کے پاس تشریف لے گئے ۔میڈیا  کی خبروں کے مطابق  انہوں نے وہاں ڈیڑھ گھنٹہ قیام←  مزید پڑھیے

بلوچستان کے مسئلے کو یوں بھی دیکھتے ہیں۔۔۔طاہر یاسین طاہر

کئی موضوعات موجود ہیں،مگر میں سعودی عرب میں پیش آنے والے ڈرامائی واقعات پہ چند دن سے غور و فکر میں ہوں۔اس دوران میں پاکستان سمیت دنیا بھر میں کچھ ایسے ہی سانحات و واقعات رونما ہوئے جنھوں نے عالمی میڈیا←  مزید پڑھیے

بیواؤں کی آہ۔محمد اظہار الحق

عمر پچھتر اور اسی کے درمیان ہوگی۔چہرے کے نقوش اب بھی لطافت کا پتہ دے رہے تھے۔لباس صاف پرانا لگ رہا تھا مگر اجلا۔پاؤں میں ربڑ کے سیاہ جوتے۔ہاتھ میں لاٹھی۔گاڑی سے نکل کر دکان کی طرف جارہا تھا کہ←  مزید پڑھیے

کھڑکیاں سمندر کی طرف کھلتی ہیں۔محمد اظہار الحق

میں تو ایک جھیل ہوں ۔جاڑا آتا ہے تو کونجیں اترتی ہیں ،دور دور سے آئی ہوئی،سائبیریاسے،صحرائے گوبھی کے اس پار سے برف سے، مستقل ڈھکے پہاڑوں سے،آکر میرے کناروں پر بیٹھتی ہیں ، باتیں کرتی ہیں ۔میرے ترسے ہوئے←  مزید پڑھیے

دو قومی نظریے پر کلیدی خطبہ گاندھی جی دیں گے۔محمد اظہارالحق

ہمارے دوست معروف دانشور  ،جناب خورشید ندیم تحریر میں کم خواب و پرنیاں جیسے الفاظ  استعمال کرتے ہیں ،گفتگو میں بھی نرم ہیں اور بعض اوقات امیدیں قائم کرنے میں بھی ضرورت سے زیادہ فیاض۔ دارالحکومت کی ایک یونیورسٹی کے←  مزید پڑھیے

یہ سب تمہارا کرم ہے آقا۔۔۔حسن رضا چنگیزی

1987 کی بات ہے۔ بلوچستان یونیورسٹی کے شعبہ کیمیا میں وہ میرا پہلا سال تھا۔ سردیوں کی طویل چٹھیاں قریب آ رہی تھیں اور مختلف شعبوں کے طلبا حسب روایت مطالعاتی دوروں کی منصوبہ بندی کر رہے تھے۔  ہماری کلاس←  مزید پڑھیے