عبداللہ خان چنگیزی کی تحاریر
عبداللہ خان چنگیزی
عبداللہ خان چنگیزی
ہمم دشتِ جنوں کے سودائی

دوسری شادی، گنہگار مرد ہی کیوں؟۔۔۔عبداللہ خان چنگیزی

بہت دنوں سے لگ رہا ہے کہ فیس بک پر دوسری شادی کے بارے میں لکھنا ہر طرح سے مقبول ہوتا جا رہا ہے، جس کا سہرا ایک معزز محترمہ کے سر جاتا ہے، جو کافی غور و فکر کے←  مزید پڑھیے

نکاح میں تاخیر کی وجوہات۔۔۔۔عبداللہ چنگیزی

پاکستان میں ا ن گنت لڑکیاں مناسب رشتے نہ ملنے کی وجہ سے بوڑھی ہو رہی ہیں، اور لاکھوں دوشیزائیں شادی کی عمر گزار چکی ہیں. ویسے بھی عورتیں 49 فیصد اور آدمی 50.5 فیصد ہیں. اس جدید دور میں←  مزید پڑھیے

مہندی۔۔۔عبداللہ خان چنگیزی

تیسرے روز بھی وہی حال تھا اس نے اپنی  گود میں رکھی  کدال کو فٹ پاتھ کے ایک طرف رکھ دیا اور اپنے شانوں پر موجود چادر سے  ماتھے کو صاف کرنے لگا جو سڑک پر چلتی  گاڑیوں کے دھوئیں←  مزید پڑھیے

مُحَمَّد مُصطفیٰ ﷺ زمانہ جدید کے پیغمبر۔۔۔عبداللہ خان چنگیزی/مکالمہ عظمتِ محمد ﷺ ایوارڈ

بسم اللہ الرحمن الرحیم ‏ہــــو لاکھ آفتابِــــ قیامتــــ کی دُھوپــــ تیز میرے لیے تو سائیء دیوان آپ ﷺ ہیں تعارف : اللہ سبحان تعالی کا بڑا کرم ہے کہ سبحان تعالی نے ہمیں دو نعمتیں ایسی عطا فرمائی ہیں جن←  مزید پڑھیے

بیچارے شادی شدہ؟۔۔۔۔عبداللہ خان چنگیزی

میرے مطابق بیوی اپنے شوہر سے اپنے بارے میں جو مشکل ترین سوالات پوچھتی ہیں ، وہ کم و بیش دنیا بھر میں یکساں نوعیت کے ہوتے ہیں۔ ان سوالات کی تعداد پانچ ہے اور وہ کچھ اس طرح کے←  مزید پڑھیے

پاکستانی معاشرے میں شدت پسندی اور عدم برداشت کی تاریخی وجوہات اور ان کا تدارک ۔۔۔عبداللہ خان چنگیزی/مقابلہ مضمون نویسی

ہمارے معاشرے میں عدم برداشت اور شدت پسندی کے بڑھتے ہوئے تناسب نے جہاں اخلاقیات کا جنازہ نکالا ہے وہاں ہی معاشرے میں عدم استحکام کو بھی جنم دیا ہے اور یہ رحجان دن بدن بڑھ رہا ہے اور عوام←  مزید پڑھیے

بکھرا آشیانہ۔۔۔۔۔عبداللہ خاں چنگیزی

  زندگی کے خشک صحراؤں کے جلتے ہوئے ریت پر سب کو ہی چلنا پڑتا ہے کوئی چاہے یا نا چاہے کسی کے اختیار سے کوسوں دور کی یہ بات ہے اُس کے ماتھے کی لکیروں اور ہاتھ کی ریکھاوں←  مزید پڑھیے

شرط۔۔۔۔عبداللہ خان چنگیزی

“کہاں تھے تم کل سے تم کو بول رکھا تھا آج کے میلے میں جانے کو کیا کرتب تھے اس پہلوان کے” ایسا کیا دیکھا تم نے جو اتنی تعریفیں کر رہے ہو؟ “تم کیا جانو وہاں عقل کو مات←  مزید پڑھیے

مجھے جینے دو۔۔۔۔ عبداللہ خان چنگیزی

وہ جب بھی اُس بوسیدہ سے مکان سے نکلنے کا سوچتی تو اُس کے سامنے وہ لا تعداد کالی، سرخ  اور کچھ سستی شراب کے خمار میں ڈوبی غلیظ آنکھیں اُس کا تعاقب کرتی رہتی لیکن وہ اب اِس سب←  مزید پڑھیے

خاکی ابلیس۔۔۔۔ عبداللہ خان چنگیزی/افسانہ

گندے بدبودار گہرے مٹیالے گٹر کا پانی رواں دواں تھا ہر کوئی اپنا دامن بچاتا ہوا کبھی یہاں کبھی وہاں چھلانگیں لگاتا ہوا جارہا تھا سمجھ نہیں  آتا تھا کہ  شہر کے بلدیاتی نظام کو کس کی نظر لگی تھی←  مزید پڑھیے

حکم کریں صاحب — عبداللہ خان چنگیزی

زندگی کے ساتویں سال میں داخل ہوتے ہی نوید کی بچپن کی بہاروں میں ظالم خزاں نے ڈھیرے جما لئے لیکن وہ اُس خرگوش کو دیکھتے ہوئے بہت خوشی محسوس کرتا رہا جو بنگلے کے لان میں یہاں سے وہاں←  مزید پڑھیے

سڑک کے اس پار۔ عبداللہ خان چنگیزی

ہمارے ایک دوست بھی عجیب طرح کے انسان نما ٹھرکی ہیں وہ بھی درجہ اول کے ۔ نام کے مرزا ہیں کام کے اول مقام کے کاہل و ناہنجار۔ عادات کے اتنے کچے جیسے مٹی کا گھڑا اُس سے لاکھ←  مزید پڑھیے