عبداللہ خان چنگیزی کی تحاریر
عبداللہ خان چنگیزی
عبداللہ خان چنگیزی
ایک کمزور سا انسان، جو تلاشِ معاش کے دوران حادثاتی طور پر لکھنے لگا جو محسوس ہوا لفظوں کے حوالے کر دیا۔

ناچ میری بُلبل کہ کچھ نہ ملے گا۔۔۔عبداللہ خان چنگیزی

عنوان میں جو لکھا ہے وہ ایک قیاس ہے آپ اِسے ایک دیوانے کی ذہنی اختراع سمجھ سکتے ہیں ایک ایسا جملہ جس کے معانی بظاہر تو واضح دکھائی دے رہے ہیں مگر جن وجوہات کی بنا پر یہ جملہ←  مزید پڑھیے

فاٹا میں جہالت یا تعلیم کا فقدان؟۔۔۔۔عبداللہ خان چنگیزی

ملک خداداد کے وسیع و عریض شہروں میں دیہاتوں میں اور چھوٹے چھوٹے گاوں میں جہاں ہر جگہ مسائل کے انبار موجود ہیں آزادی کے دن سے لیکر آج تک وہ ہم سمجھ سکتے ہیں کہ وسائل کی کمی اور←  مزید پڑھیے

سستا خون ۔۔۔ عبداللہ خان چنگیزی

خلیجی ممالک میں سر کٹی  لاشوں کے نام جب جب کسی خبر میں یہ دیکھتا اور سنتا ہوں کہ آج جمعرات کے دن ایک یا دو یا زیادہ پاکستانیوں کے سر قلم کردیئے گئے اِس جرم میں کہ وہ کسی←  مزید پڑھیے

موت کے سوداگر۔۔۔عبداللہ خان چنگیزی/قسط4

دس اقساط کی چوتھی قسط سکندر کا سانس جیسے رکا ہوا تھا وہ اتنا ڈرپوک یا کمزور دل کا مالک نہیں تھا مگر اُسے یہ پریشانی ہو رہی تھی کہ اگر آنے والے اُسے دیکھ لیں تو لازمی بات ہے←  مزید پڑھیے

جنسی درندہ ۔۔۔ عبد اللہ خان چنگیزی

انسان کو اللہ تعالی نے اشرف المخلوقات بنایا، مطلب تمام جانداروں میں افضل عقل و شعور رکھنے والا ایک ایسا جاندار جس کے ذہن میں اللہ تعالی نے انتہائی وسیع پیمانے پر احساسات و جذبات اور ہر مسئلے سے نمٹنے کا←  مزید پڑھیے

عنا یت اللہ التمش،جنگی وقائع نگار۔۔۔۔عبداللہ خان چنگیزی

ایک شخص جو اسلام اور پاکستان کی محبت میں جیا اور اسی کی طرف دعوت دیتے دیتے اپنے رب کی بارگاہ میں حاضر ہو گیا ۔ عنایت اللہ مغربی پنجاب کی سطح مرتفع پوٹھوہار کے معروف شہر (اس وقت کا←  مزید پڑھیے

گنجے بندر، بارہ سنگھا اور شیر کے پنجے۔۔۔عبداللہ خان چنگیزی

دوسرا دن تھا جنگل کے شہنشاہ کی طبیعت نہایت خستہ حال تھی جنگل کے سارے جانور جِن میں لومڑی ڈاکٹرنی اپنے ساتھ کام کرنے والے نوکر گدھے کے ساتھ موجود تھی ۔گدھے کی  پیٹھ پر بہت سی جڑی بوٹیاں رکھی←  مزید پڑھیے

صاحب ویزہ لگ جائے گا؟۔۔۔۔عبداللہ خان چنگیزی

ایک خوشنما باغ کی سیر جو پختونوں کو کروائی جا رہی ہے فضاء سوگوار تھی ہر طرف ایک ہڑبونگ مچی ہوئی تھی لوگ دھڑا دھڑ یہاں سے وہاں بھاگتے پھر رہے تھے بازاروں میں رش اتنا کہ پاوں رکھنے کو←  مزید پڑھیے

وہ ایک دیوانہ جو ہر لمحے میں مرتا گیا۔۔۔۔عبداللہ خان چنگیزی

اچانک اُس کی آنکھ کُھلی اور کچھ نہ سمجھتے ہوئے بھی اُس نے اتنا جان لیا کہ اُس کی اماں رو رہی ہے وہ کچھ لمحے یونہی لیٹا رہا اور رونے کی آواز سنتا گیا کہ اچانک کمرے کا دروازہ←  مزید پڑھیے

آپ بیتی: گیارہ پنکچر اور ہمارا روزہ ۔۔۔ عبداللہ خان چنگیزی

قصہ کچھ یوں ہے کہ رمضان المبارک کا مہینہ تھا اور گرمی اپنے زوروں پر تھی جس کی وجہ سے پیاس سے بھی بُرا حال ہو چکا تھا۔ پاکستان کی بجلی کی مثال نہیں دوں گا کیونکہ ہم سب اِس قیمتی←  مزید پڑھیے

جب بم پھٹتے ہیں۔۔۔عبداللہ خان چنگیزی

وہ 7 نومبر 2007 جمعہ مبارک کا دن تھا، جب پاڑاچنار شہر میں ہر طرف ایک عجیب سی ویرانی چھائی ہوئی تھی ہر طرف ہُو کا عالم، وہ شہر جہاں ہر روز لاکھوں لوگ ہنستے گنگناتے رہتے تھے صبح سویرے←  مزید پڑھیے

لائکس کمنٹس، کیا ہم ذہنی مریض ہیں؟۔۔۔عبداللہ خان چنگیزی

موجودہ دور میں دنیا کی ترقی کا یہ عالم ہے کہ سینکڑوں میلوں دور دنیا کے ایک سرے میں بیٹھا ہوا شخص دنیا کے دوسرے سرے میں بیٹھے ہوئے شخص کے ساتھ نہایت صاف و شفاف انداز میں بلا روک←  مزید پڑھیے

موت کے سوداگر۔۔۔عبداللہ خان چنگیزی/قسط3

دس اقساط کی تیسری قسط! ٹرک اپنی منزل کی طرف روں دواں تھا اور سکندر اِس سوچ میں ڈوبا ہوا تھا، کہ نہ  تو اُس کے پاس کوئی پیسے ہیں اور نہ  ہی کوئی جان پہچان والا، وہ ایسی حالت←  مزید پڑھیے

کشمیر کے فریڈم فائٹرز۔۔عبداللہ خان چنگیزی

جیسا کہ  نام سے ہی پتہ چلتا ہے کہ کچھ لوگوں کو جو اپنی آزادی کی خاطر اپنی قوت سے ہزار گنا طاقتور دشمن اور غاصب اور جبری طور پر مسلط کردہ سسٹم سے آزادی کی خاطر جان لڑانے والوں←  مزید پڑھیے

مرد بھی رونا چاہتا ہے ۔۔۔ عبد اللہ خان چنگیزی

مضمون کا موضوع انگلستان میں جائے پذیر دوست کی تازہ ترین پوسٹ سے لیا گیا ہے۔  جب جہاں میں ایک اماں ایک ابا کے گھر اولاد کی پیدائش بیٹے کی صورت میں ہوتی ہے تو سارا گھر خوشیوں سے بھر←  مزید پڑھیے

آو پاڑاچنار کی سیر کریں۔۔۔۔۔عبداللہ خان چنگیزی

پاراچنار، پاڑہ چنار، پاڑاچنار، توتکائے، یہ چاروں ایک ہی شہر نما وادی کے نام ہیں، جیسا کہ  نام سے ہی ظاہر ہوتا ہے کہ ایک درخت کا نام اس شہر نے اپنے ساتھ جڑ کے رکھا ہے اور اس درخت←  مزید پڑھیے

ہماری تصویر قابل رحم ہے۔۔۔عبداللہ خان چنگیزی

کچھ دن پہلے آئی ڈی کاڑد کی تجدید کرنے نادرہ آفس گیا سفید رنگ کے اجلے کپڑے پہنے شیو ہلکی سی چھوڑ دی کہ اچھا لگے گا ٹوکن نمبر لیا اور باری کا انتظار کرنے لگا، جب میری باری آئی←  مزید پڑھیے

راہِ روشن۔۔۔عبداللہ خان چنگیزی

ناجانے کیوں میرا یہ احساس مجھے بار بار ڈستا رہتا ہے کہ اب میری حیات میں سرفرازی و کامرانی نہیں اور میں سب کچھ کھو بیٹھا ہوں ایسا لگتا ہے کہ میں اپنا سب کچھ قربان کر چکا ہوں اور←  مزید پڑھیے

ایک پرواز، تخیل سے تخلیق تک۔۔۔عبداللہ خان چنگیزی

کبھی ایسا بھی ہوتا ہے کہ میں اپنے ذہنی خیالات کے بھنور میں بہت گہرائی تک ڈوب جاتا ہوں، اپنے دل کے پنہاں خانوں کے پراسرار راز مجھے سونے نہیں دیتے. میں کیا ہوں کون ہوں شاید یہی وہ لمحہ←  مزید پڑھیے

موت کے سوداگر۔۔۔۔عبداللہ خان چنگیزی/قسط2

دس اقساط کی دوسری قسط ٹیکسی سٹیشن کے حدود سے نکل کر کھلی سڑک پر چلتی اپنے مقام کی طرف بڑھ رہی ہے پیچھے بیٹھا شخص ٹیکسی کے شیشوں سے باہر کے مناظر دیکھ رہا ہے اس کی نگاہیں سامنے←  مزید پڑھیے