عزیز اللہ خان کی تحاریر

کیا میں قابلِ عزت ہوں ؟۔۔۔عزیز خان ایڈووکیٹ/قسط2

میرے سابقہ افسران بالا نے میری پچھلی تحریر دیکھی اور پڑھی ،اُنہیں یہ لگا کہ میں نے کسی خاص افسر کی ذات پر بات کی ہے حالانکہ ایسی کوئی بات نہیں تھی لیکن اگر وہ یہ سمجھتے ہیں کہ اُن←  مزید پڑھیے

کیا میں قابل عزت ہوں۔۔۔عزیز خان ایڈووکیٹ/قسط1

پولیس کو پوری دنیا میں اچھا نہیں سمجھا جاتا پر پچھلے ایک ہفتہ سے پنجاب پولیس زیرِ  عتاب ہے، رحیم یار خان میں صلاح الدین پولیس تشدد کیس میں پولیس ملازمین کے خلاف مقدمہ درج ہے جس میں جوڈیشل انکوائری←  مزید پڑھیے

قصوروار کون؟۔۔۔عزیزخان

جہانگیر ٹو کنٹرول (جہانگیر DPO) کنٹرول ٹو جہانگیر کیری آن سر کنٹرول خالدصدر کدھر ہے ؟ (خالد SHO) سر اُن کی سرکاری گاڑی کے دونوں ٹائر پھٹ گئے ہیں وہ پرائیویٹ گاڑی پر چھوٹے سیٹ کے ساتھ گشت پہ ہیں۔۔←  مزید پڑھیے

اردلی روم اور تھانہ کلچر۔۔۔عزیز اللہ خان

پولیس کی نوکری میں سزا اور جزا ایک ساتھ چلتے ہیں یہ اور بات ہے  کہ سزا جزا پر حاوی ہے، انعام یا جزا ملتے مہینے لگ جاتے ہیں جبکہ سزا فوری اور تیز ۔۔۔پولیس کی نوکری میں جو دوست←  مزید پڑھیے

کالی بھیڑیں اور سفید بھیڑیے۔۔۔عزیز خان

“مینوں مارو گے تے نئیں ؟میں اک گل پوُچھنی سی تُسیں مارنا کتھوں سیکھیا اے؟” یہ ہیں وہ الفاظ جو مرحوم صلاح الدین نے پولیس افسر کو تفتیش کے دوران کہے اور وہ پولیس والا بولتا ہے میں تھانیدار ہوں←  مزید پڑھیے

کیا ہم زندہ قوم ہیں ؟۔۔۔عزیز خان

میں نے فیس بُک پر ایک پوسٹ لگائی۔۔۔۔”سوہنی دھرتی اللہ رکھے،قدم قدم آبادتجھے”۔ میری اس پوسٹ پر صرف 12 دوستوں نے  آمین لکھا،  اور تین نے لائیک کیا۔ ایک خوبصورت جوان لڑکی نے لکھا آج مجھے نزلہ کھانسی بُخار ہے۔←  مزید پڑھیے

کشمیر کیوں نہ روئے؟۔۔۔عزیز خان

کِھچی ہوئی ہے میرے دل پہ یہ خونی سُرخ لکیر تو ہی بتا دے کب ٹوٹے گی پاؤں کی زنجیر اے میرے کشمیر ! آج بُہت دنوں بعد کُچھ لکھنے کو دل کیا، جب سے کشمیر کے بارے میں خبر←  مزید پڑھیے

تصویر بناتا ہوں ۔۔۔عزیز خان

ہر دور میں تصویر کی اپنی اہمیت رہی ہے، ویڈیو کیمرہ اور جدید ٹیکنالوجی آنے کے بعد اس کی اہمیت اور افادیت اور بھی بڑھ گئی ہے،کیونکہ اخبار اور سوشل میڈیا پر بھی یہی تصاویر لگتی ہیں اور انہیں تصاویر←  مزید پڑھیے

قوموں کی عزت ہم سے ہے ۔۔۔عزیز خان

کل مریم نواز کے جلوس میں ایک متوالے نے بدتمیزی کی اور مریم نواز نے اپنے کارکُن کو لات دے ماری بے شک وہ کارکُن اس سے بھی زیادہ سزا کا حقدار تھا ,اب جب اتنے کیمروں کی آنکھ سے←  مزید پڑھیے

بلڈ پریشر۔۔۔۔عزیز خان

بلڈ پریشر ایک ایسی بیماری ہے جو امیر لوگوں ،بیوروکریٹس اور حکمران خاندانوں میں بکثرت پائی جاتی ہے کبھی کبھی ایسے سیاستدان جو کرپشن میں جیل جائیں تو شروع شروع میں ان کا بلڈ پریشر ہائی اور بعد میں low←  مزید پڑھیے

میں بولوں کہ نہ بولوں ؟۔۔۔عزیز خان

فالواپ! میرے ایک دوست ہیں جو بنک سے سینئر وائس پریزیڈنٹ ریٹائر ہوئے ہیں، یہ اُن کی کہانی ہے، میرے یہ  دوست بُہت پڑھے لکھے ہیں  اور ان کی پوری زندگی ایمانداری اور ڈسپلن سے گزری ہے۔ کہانی کُچھ یوں←  مزید پڑھیے

کیا ہم سب بھی لوٹے ہیں ؟۔۔۔عزیز خان

مجھے آج بھی 1970 کے الیکشن یاد ہیں، میرے والد صاحب مرحوم جو ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن آفسر تھے، کی پوسٹنگ ڈیرہ غازی خان  میں تھی، شاید دسمبر کا مہینہ تھا، ہم تینوں بھائی والد صاحب کے پاس ڈیرہ غازی خان←  مزید پڑھیے

قلم اور اُنگلی کی طاقت۔۔۔۔عزیز خان /اختصاریہ

کل عرفان صدیقی صاحب کی ایک تصویر دیکھی اُن کے جس ہاتھ میں ہتھکڑی ہے اُسی ہاتھ میں قلم پکڑا ہوا ہے۔ بہُت دکھ ہوا۔۔۔ جس نے بھی کیا اچھا نہیں ، ایک 78 سال کے اُستاد کے ساتھ یہ←  مزید پڑھیے

قلم کی طاقت۔۔۔۔عزیز خان

کُچھ تحریریں لکھتے وقت لکھنے والے کو اس بات کا وہم وگماں بھی نہیں ہوتا کہ اُسکی یہ تحریر کتنی مقبول ہو گی ،خاص طور پر جب لکھنے والا بالکل  نیا ہو۔۔ کُچھ دنوں پہلے میں نے اپنے ذاتی تجربات←  مزید پڑھیے

کالم کا بچہ/تیسری بیوی۔۔۔عزیز خان

ایک شخص کی دو بیویاں تھیں زندگی عذاب تھی آپس میں لڑائی جھگڑا گالی گلوچ کرتی تھیں ،لڑائی کا کوئی موقع نہیں جانے دیتی تھیں۔ ایک دوسرے کے خاندان اور ماں باپ کی شان میں قصیدے کہے جاتے تھے۔۔ اس←  مزید پڑھیے

کالم کا بچہ/ساڈی گل ہور اے۔۔۔۔عزیز خان

سن 80 کی دہائی میں ایک لطیفہ مقبول تھا کہ دبئی کے ایک سینما گھر میں فلم شروع ہونے سے پہلے اشتہارات چل رہے تھے جن میں پی آئی اے کا اشتہار پردے پہ آیا تو گیلری میں بیٹھے پاکستانی←  مزید پڑھیے

ہاں میں چور ہوں ۔۔۔۔عزیز خان

میں احمد پور شرقیہ کے ٹاٹ والے پرائمری سکول سے پنجم کا امتحان بڑی مُشکل سے پاس کر کے ہائی سکول پہنچ  ہی گیا۔۔۔ گورنمنٹ ایس اے ہائی سکول کے بڑے بڑے گراونڈ اور اچھی بلڈنگ سے جہاں دل خوش←  مزید پڑھیے

پُرانا نعرہ،نئے چہرے۔۔۔۔۔عزیز خان

بطور سٹوڈنٹ لیڈر گورنمنٹ ایس اے کالج کئی دفعہ سٹو ڈنٹس کے جلوس کو لیڈ کرنے کا اتفاق ہوا۔۔لوگوں کو اکٹھا کرنا اور مجمع بنانا بہت آسان ہے ،پر اُس کو کنٹرول کرنا بہت مشکل ہوتا ہے۔ 1975/76 کا دور←  مزید پڑھیے

پولیس والا غنڈہ ۔۔۔ عزیز خان

پولیس اور عوام کے درمیان نفرت کی کہانی بہت پرانی ہے برصغیر پاک و ہند میں جب انگریز کی حکومت بن گئی تو اُسے لوگوں پر حکمرانی کے لیے غدار وطن جاگیرداروں کے علاوہ جنہیں سر کا اعزاز ملا ایک←  مزید پڑھیے

بدبو دار نظام اور ہم عوام۔۔۔عزیز خان

پچھلے کُچھ دنوں سے احتساب عدالت کے جج ارشد ملک کے حوالے سے جو باتیں سُننے کو مل رہی ہیں ،سن کر  انصاف سے اعتبار ہی اُٹھ گیا ہے ،مُنہ کھُلے کے کھُلے رہ گئے کہ جج بھی ایسا کر←  مزید پڑھیے