سائنس، - ٹیگ

ٹائم اینڈ سپیس ٹائم۔۔ادریس آزاد

یہ بات بہت کم لوگوں کے علم میں ہے کہ آئن سٹائن کو ملنے والا نوبل پرائز، آخر اُسے اضافیت کی بجائے فوٹو الیکٹرک ایفکٹ پر کیوں دیا گیا؟ واقعہ یوں ہے کہ چھ اپریل ۱۹۲۲ کے روز آئن سٹائن←  مزید پڑھیے

کینسر (25) ۔ چار زہر/وہاراامباکر

مڈغاسکر کے ایک پودے سے حاصل ہونے والا زہریلا کیمیکل ونکرسٹین تھا۔ یہ ایک پستہ قد بیل تھی جس میں جامنی پھول اگتے تھے۔ یہ کیمیکل 1958 میں دریافت ہوا۔ اس پر ذیابیطس کے لئے تحقیق کی جا رہی تھی←  مزید پڑھیے

جدید فزکس کا پس منظر۔۔ادریس آزاد

آئن سٹائن کے ’’نظریۂ خصوصی اضافیت‘‘یعنی ۱۹۰۵ کے بعد کی تمام تر فزکس کو جدید فزکس کہا جاتا ہے۔ اس سے پہلے کی فزکس کو قدیم فزکس یا کلاسیکل فزکس کے نام سے یاد کیا جاتا ہے۔ جدید فزکس کو←  مزید پڑھیے

ایماں مجھے روکے ہے جو کھینچے ہے مجھے کفر۔۔بنت الہدیٰ

ایماں مجھے روکے ہے جو کھینچے ہے مجھے کفر۔۔بنت الہدیٰ /میرا شمار بھی پاکستان کی اس اسّی فیصد آبادی میں ہوتا ہے جنہوں نے مطالعے یا کتب بینی کی ابتدا مذہبی کتابوں سے کی۔ نصابی کتابوں کے علاوہ گھر میں←  مزید پڑھیے

کوانٹم سے آگے (24) ۔ متوازی کائناتیں/وہاراامباکر

کوانٹم مکینکس میں ترمیم کی ضرورت ہے۔ یعنی کہ ہمیں معلوم ہو جاتا ہے کہ کوانٹم مکینکس اپنی اصل شکل میں مکمل ہے تو اس کا مطلب کیا ہو گا؟ یا تو رئیلزم کو الوداع کہہ دینا ہو گا یا پھر اس کا جو مطلب رہ جائے گا، ایوریٹ نے اپنے پیپر میں اس کا بتایا تھا۔ اس کو کوانٹم مکینکس کی مینی ورلڈز تشریح کہا جاتا ہے۔اس کا مطلب یہ ہے کہ ہم ان گنت متوازی حقیقتوں میں سے ایک کا تجربہ کرتے ہیں۔←  مزید پڑھیے

کیا بزنس سکول کاروبار کو درست پڑھا رہے ہیں ؟۔۔تحقیق و تحریر: عاطف ملک

بزنس سکولوں نے کاروباری اخلاقیات کے کورسز بنا کر پڑھانے شروع کیے ہیں مگر کیا یہ کورسز اس طرح کے واقعات کا سدباب کر سکتے ہیں؟ خصوصاً اگر بزنس سکولوں میں پڑھائی جانے والی تھیوریاں ہی ایسے واقعات کی ذمہ دار ہوں۔ اس کی ایک مثال ہاورڈ یونیورسٹی کے پروفیسر جینسن اور روچسٹر یونیورسٹی کے پروفیسر میکلنگ کی دی گئی ایجنسی تھیوری ہے جو دنیا بھر کے کاروباری سکولوں میں پڑھائی جاتی ہے۔←  مزید پڑھیے

کوانٹم سے آگے (22) ۔ Collapse/وہاراامباکر

کوانٹم مکینکس کی روایتی تشریح بتاتی ہے کہ ویو فنکشن پھیلا ہوا ہے اور جب پیمائش کی جاتی ہے تو یہ کولیپس ہو کسی جگہ پر مل جاتا ہے۔ اور یہاں پر ایک مسئلہ ہے۔ کیونکہ “پیمائش کس کی اور کب ہو رہی ہے؟” اس سوال کا جواب صرف اور صرف ہم دیتے ہیں! ←  مزید پڑھیے

کوانٹم سے آگے (21) ۔ عجیب سائنسدان؟/وہاراامباکر

کوانٹم مکینکس کی تشریح کوپن ہیگن میں طے ہو چکی تھی۔ متبادل تشریحات مسترد کر دی گئی تھیں۔ ڈی بروئے اپنی تشریح کے بارے میں ہار تسلیم کر چکے تھے۔ صرف آئن سٹائن اور شروڈنگر بچے تھے جو ابھی تک پوری طرح قائل نہیں ہوئے تھے لیکن ان کے اختلاف کا اثر نہیں تھا۔←  مزید پڑھیے

کوانٹم سے آگے (20) ۔ کوانٹم مکینکس کی پیدائش/وہاراامباکر

کوانٹم انقلاب برپا کرنے والے ہائزنبرگ، ڈیراک، پالی جورڈن، وان نیومن، بوہر نئی نسل کے نوجوان تھے۔ ان کے ریڈیکل خیالات اکیڈیمیا کا حصہ بن گئے۔ نئی نسل کے لئے یہی روایتی فکر بن گئی اور اگلی نصف صدی تک کوانٹم تھیوری کو پڑھانے کا صرف ایک ہی طریقہ رہا←  مزید پڑھیے

کوانٹم سے آگے (19) ۔ روشنی کے پیکٹ/وہاراامباکر

 روشنی ویو بھی ہے اور پارٹیکل بھی۔ یہ آئیڈیا سب سے پہلے آئن سٹائن کی سٹڈی میں ہے۔ اس سے پہلے فزسسٹ یا تو ایسی تھیوریوں پر کام کرتے تھے جس میں روشنی ایک پارٹیکل ہو یا ان پر جن میں یہ ایک ویو ہو۔←  مزید پڑھیے

کوانٹم سے آگے (18) ۔ کوانٹم مکینکس کیا نہیں بتاتی؟/وہاراامباکر

 کوانٹم مکینکس ہمیں ایٹم کی دنیا کے بارے میں بہت کچھ بتاتی ہے لیکن تمام سوالات کا جواب نہیں دیتی۔ مختصراً یہ کہ کوانٹم مکینکس دو اقسام کی خاصیتوں کی پیشگوئی اور وضاحت کرتی ہے۔ انفرادی سسٹم کی خاصیتوں کے بارے میں اور بہت سے انفرادی سسٹم کی اوسط کے بارے میں۔ اور ان میں بڑا فرق ہے۔←  مزید پڑھیے

بحری ٹیکسی اور کنگ عبداللہ سائنس و ٹیکنالوجی یونیورسٹی۔۔منصور ندیم

یہ کوئی سیاحتی کشتی نہیں بلکہ آپ اسے “بحری ٹیکسی” کہہ سکتے ہیں۔ یہ بحری ٹیکسی سعودی عرب کے ضلع مکہ کے شہر جدہ کے کنگ عبداللہ اکنامک سٹی King Abdullah Economic City سے کنگ عبداللہ سائنس اینڈ ٹیکنالوجی یونیورسٹی←  مزید پڑھیے

کوانٹم سے آگے (16) ۔ کوانٹم میاں بیوی

 “اگرچہ روزمرہ زندگی میں یہ تصور مفید ہے کہ ہم سے باہر حقیقت کا آزادانہ طور پر وجود ہے لیکن ایسے نکتہ نظر کو مزید برقرار نہیں رکھا جا سکتا”۔۔جان وہیلر فرض کیجیے کہ ہمارے پاس ایک الیکٹران اور ایک←  مزید پڑھیے

کوانٹم سے آگے (12) ۔ ہر شے کی تھیوری؟/وہاراامباکر

فزکس کا مقصد نیچر کے سب سے جنرل قوانین کی تلاش ہے۔ کوانٹم مکینکس کسی بھی سائنسی تھیوری کے مقابلے میں فطری مظاہر کی وسیع ترین رینج کو کامیابی سے بیان کرتی ہے۔ اور ساتھ ہی ساتھ یہ اس پر←  مزید پڑھیے

ملیں خلا کے “کورئیر بوائے” سے۔۔زبیر بشیر

چین میں شاپنگ فیسٹیول کی ریکارڈ ساز سیل کے اربوں کورئیرز کی تیز رفتار ڈلیوری ہو یا وبا کے دوران صارفین کو بلا تعطل اشیائے ضروریہ کی فراہمی، اس تمام عمل کے دوران چین کے “کورئیر بوائز” کا کردار ابھر←  مزید پڑھیے

ہو رہا ہے جہانِ نو پیدا ۔۔ڈاکٹر مختیار ملغانی

جس دور سے ہمارے اجداد نے اپنی کہانیاں اور رودادِ زندگی کے خاکے غاروں کی دیواروں اور پتھروں پر بنانے شروع کئے، گویا کہ وقت کی سوئی کے ناکے سے تہذیب و فن کا دھاگہ گزارنے کی سعی کر رہے←  مزید پڑھیے

ارتقائی نفسیات (11)۔۔وہاراامباکر

ارتقائی نفسیات کی موجودہ صورت کا آغاز سوشیوبائیولوجی سے ہوا۔ یہ ارتقا کی تھیوری کی شاخ ہے جو جانداروں (اور خاص طور پر انسانوں) کے رویوں کی وضاحت کی کوشش ہے۔ یہ وضاحت کرتی ہے کہ ارتقا کے عمل نے←  مزید پڑھیے

سائنس اور خدا۔ اندھی تقلید اور انسانی ریوڑ۔۔علیم احمد

سائنسی رجحان رکھنے والے مذہبی طبقے کا خیال ہے کہ سائنس کا مطالعہ آپ کو وجودِ باری تعالیٰ کے عقلی ثبوت دیتا ہے اور نتیجتاً آپ کا ایمان پختہ ہوتا ہے۔ لیکن دوسری جانب الحاد پرست طبقہ ٹھیک اسی سائنسی←  مزید پڑھیے

حقیقت کا ادراک (75)۔۔وہاراامبار

کوانٹم تھیوری کے بانیوں کی بنائی کوانٹم تھیوری ہماری روزمرہ کی زندگی کی فزکس کی سمجھ نہیں تبدیل کرتی لیکن اس نے ہماری روزمرہ زندگی بدل دی ہے۔ اتنی بڑی تبدیلی ہے جتنی صنعتی انقلاب تھا۔ کوانٹم تھیوری کے قوانین←  مزید پڑھیے

نسلِ انسانی کا اگلا پڑاؤ(5،آخری قسط)۔۔محمد شاہ زیب صدیقی

مریخ سے ہماری دل لگی ہے کہ بڑھتی ہی چلی جارہی ہے، اس دلگی کو چیلنج کرنے سیارہ زہرہ بھی کُود پڑا ہے، جہاں کچھ دن قبل سائنسدانوں کی جانب سے فاسفین گیس کی موجودگی کے شواہد پیش کیے گئے،←  مزید پڑھیے