محمد جاوید خان کی تحاریر
Avatar
محمد جاوید خان
میراتعلق خانیوال سے ہے روزنامہ نیا دور سنگ میل سمیت کچھ akhbara

یونیورسٹیاں،دانش گاہیں اَور خطرات۔۔۔ جاویدخان

کبھی انسان اپنے وجود سے آگاہ نہیں تھا۔آہستہ آہستہ وہ آگاہ ہوتا گیا۔خودسے،اپنے گھر (سیارہ زمین) سے اور اس میں رہنے والی دوسری حیات سے۔آگاہی کایہ عمل بنا رُکے آج تک جاری ہے۔قبل مسیح میں یونان کے ایک دانشور کے←  مزید پڑھیے

ناسا کے ویگیانک اور گائے۔۔۔ جاویدخان

گائے ایک شکتی شالی چوپایہ ہے۔کبھی بھی اسے بے لگام نہیں دیکھا گیا۔مسئلہ بیل کا ہو سکتا ہے۔مگر وہ سانڈ نما بیل جو ہر طرح کے کام سے آزاد،کلے سے بندھاصرف چارہ کھاتا ہے۔کمزور ہڈیاں نکلے،لاغر بیل جن پر منوں←  مزید پڑھیے

کشمیر َاور سی پیک۔۔۔۔ جاویدخان

چین کابحیرہ جنوبی شوریدہ آبی راستہ   ہے۔ جیسے کشمیر شوریدہ ہے اور اب سی پیک شوریدہ زمینی راستہ ہے۔چینیوں کے ذمہ  بہت کچھ جاتا ہے۔جیسے چائے،پودینے کا استعمال اور ریشم۔چینی چائے کی کاشت کیسے کرتے ہیں۔؟ کس ماحول میں←  مزید پڑھیے

کشمیر کالاوہ اور تین ایٹمی طاقتیں۔ جاویدخان

انتہا پسند چاہے مذہبی ہو یاغیر مذہبی،خطرناک ہوتاہے۔وہ ایسا رسک لے سکتا ہے جس کا اَنت خوف ناک موت ہے۔جب کسی جتھے،قوم یاملک کو ایک انتہا پسند  بطور قیادت تھمادیا جاتا ہے۔تو یہ موت صرف ایک فرد یا انتہا پسند←  مزید پڑھیے

فسادات کاعہد اور منٹو۔۔۔۔محمد جاوید خان

فن پارے کو سمجھنے کے لیے اس دور کے معروضی حالات کو سمجھنا ضروری ہے۔جس دور میں وہ فن پارہ تخلیق ہواتھا۔سارے سندیسے ایک دم غیب سے نہیں آتے۔زمانی حالات منعکس ہو کر ادب بن جاتے ہیں۔اسی لیے کافکا کے←  مزید پڑھیے

سلیم صاحب۔۔۔ جاویدخان

سلیم صاحب کو مَیں نے ہمیشہ جوان دیکھا۔ایک سدا بہار جوان کا روپ ان سے کبھی نہ اُترسکا۔پانچ فٹ کے قریب قریب قد،گول چہرہ،سیاہ آنکھیں اور چھوٹی چھوٹی کالی داڑھی۔جو ان کے چہرے پر خوب جچتی تھی۔لڑکپن میں وہ زیادہ←  مزید پڑھیے

مون سون اور پانی ۔۔۔۔جاویدخان

ہمالیہ دنیا کا مہان پربت ہے۔کئی دیومالائی داستانیں  اس سے جُڑی ہیں۔لمبا،چوڑا اور بہت ہی پھیلا ہوا۔اندازاً7 سے0 1کروڑ سال پہلے یہ وجود میں آیا۔کئی اندازوں کی طرح،ہمالہ کی عمر کے بارے میں بھی یہ ایک اندازہ  ہے۔کہتے ہیں بحیرہ←  مزید پڑھیے

جُھلسے ہوئے دنوں کا ایک پرندہ ۔۔۔۔جاویدخان

ہاڑ کے آخری دن ہیں۔جھلسے ہوئے دن،اِن دِنوں میں لُو لگ جاتی ہے۔فصلیں،پتے اَور سبزیاں مُرجھا جاتی ہیں۔سبزے کا پسینہ خشک ہو جاتا ہے۔نباتاتی زندگی کاحسن مُرجھاہٹ کاشکار ہے۔گھنے پیڑوں کو لُولگنے سے پتے پیلے پڑ گئے ہیں۔زیر زمین پانی←  مزید پڑھیے

حنّان ۔۔۔۔جاویدخان

اَندازاً کوئی اٹھارہ برس ہوئے، اُدھر کی بات ہے۔میں نے ریڈفاونڈیشن سکول سون ٹوپہ  تدریسی فرائض سنبھالے۔  آس پاس  کے بچے شا م ڈھلے تک میرے گھر کے صحن میں براجمان ہوتے۔تدریس میں نئے نئے دن تھے۔سکول ریڈ کے زیر←  مزید پڑھیے

عُرس اور تصوف۔۔۔۔۔محمد جاویدخان

ضلع پونچھ کشمیر کاایک بڑا ضلع ہے۔1947 ء کے بعد کشمیرکی طرح پونچھ بھی دو حصوں میں تقسیم ہو گیا۔بڑا حصہ مقبوضہ کشمیر میں اور کچھ حصہ آزادکشمیر میں آگیا۔سون ٹوپہ آزاد کشمیر والے پونچھ کا گاؤں ہے۔ ٹو پہ←  مزید پڑھیے

اصلاح مشکل ہو تی ہے۔۔۔۔ جاوید خان

کہتے ہیں کسی زمانے میں،کسی ملک پر ایک عادل بادشاہ حکومت کرتا تھا۔اس کے کئی بیٹے تھے۔یہ سب کے سب لائق او ر کسی نا کسی فن میں یکتا تھے۔بادشاہ کو اپنے چھوٹے بیٹے سے زیادہ پیار تھا۔اس میں بے←  مزید پڑھیے

خُو ش گمانیوں پرنہیں ،حقیقت پر۔۔۔۔۔ جاویدخان

ہم ایک عظیم الشا ن نظام شمسی کے بیچ،چھوٹے سے کُرّے پر رہ رہے ہیں۔جسے سیارہ زمین کہتے ہیں۔ہمارا نظام شمسی ایک بڑی گلیکسی کا حصہ ہے۔اس گلیکسی میں اَن گنت سیارے،نظام اور ان کی دھول ہے۔آسمان صرف ہمارے سر←  مزید پڑھیے

اِک مہم جو کی نفسیات ۔۔۔۔۔جاوید خان

مہم جوئی انسانی فطرت کاخاصا ہے۔کسی میں یہ کم ہوتی ہے کسی میں زیادہ۔تجسس اور پھرمثبت تجسس نے انسان کے لیے خلاؤں کے دروازے کھول دئیے ہیں۔نیل آرمسٹرانگ عظیم شخص تھا جس نے چاندپر پہلا قدم رکھا۔اُس نے تمام عالم←  مزید پڑھیے

اسلام آباد میں دو دن ۔۔۔۔جاویدخان

اسلام آباد،آب پارہ کے سامنے ذرا سا دائیں جانب،”یاسمین اینڈ روز“گارڈن ہے۔یہ ایک وسیع اَور خوب صورت پارک ہے۔یہاں اَپریل سے یاسمین اَور گلاب کے پھول کھلنا شروع ہو جاتے ہیں۔اِسی پارک سے لگ کر دائیں جانب ”پاک چائنہ سنٹر“کی←  مزید پڑھیے

میرے اَندازے،شاخ شاخ پھول ہے۔۔۔۔۔ جاوید خان

اپریل گزر گیا ہے۔کشمیر ہمالیہ کے دامن میں خوب صورت وادی ہے۔برفوں کی سفید چادر تقریباً 90 فیصد رقبے سے ہٹ چکی ہے۔جہاں جہاں سے برف  پگھلتی گئی  ہے ۔وہاں وہاں زمین کی بیداری کا عمل ہوتا گیا۔پیرپنجال،دیوسائی،نانگا پربت اَور←  مزید پڑھیے

کامریڈ! تُم خوش قسمت ہو۔۔۔ جاویدخان

سیدی (سید ابواعلیٰ مودودی)،سید ابوالخیر مودودی (سیدمودودی کے بڑے بھائی) اور جو ش ملیح آبادی،نیاز فتح پوری کے اخبار سے منسلک تھے۔ماحول علمی تھا،ادبی تھااور بہت ہی دوستانہ بھی۔یہاں تک کہ جب نظریاتی اختلافات بڑھ کر سمندر کے دو الگ←  مزید پڑھیے

ایمان۔۔۔۔ جاویدخان

معصوم چہرے اور تیکھے نقوش والی ایمان ،ہمارے دوست ملک خضرصاحب کی بھانجی تھی۔پیدائش کے فوراً بعد والدہ کے ساتھ ننھیال آگئی۔ننھیال بھر کی اکیلی لاڈلی تھی۔تعلیم کے پہلے سال میں بیمار ہوئی تو عمر کے ساتھ ساتھ بیماری بھی←  مزید پڑھیے

سکیم۔۔۔۔ جاوید خان

اُردو میں اسے ”مَنصوبہ بندی“کہتے ہیں۔صحیح طرح معلوم نہیں ہو سکا کہ یہ مونث ہے یامذکر۔اگرچہ تذکیر و تانیث کی کتابوں میں اس پر بحث ضروری نہیں سمجھی گئی۔ بس اُردو کادو حرفی ”منصوبہ بندی“ انگریزی میں مختصر ہو کر←  مزید پڑھیے

مکالمہ کا کتھارسس ۔۔۔۔۔۔جاویدخان

کہتے ہیں زمانوں پہلے یونان کی دانش گاہوں میں ایک سر پھرے دانش وَر نے یہ نسخہ دِیا کہ  اِنسانی جذبات جو اَندر ہی اَندر گھُٹ کر ہمارا ستیاناس کرتے رہتے ہیں۔اَگر اُنھیں زبان و بیان کاموقع دِیا جائے تو←  مزید پڑھیے

چلے تھے دیوسائی۔۔۔۔۔۔ محمد جاوید خان/قسط 30

مِنی مَرگ کاسُریلا پانی :۔ مِنی مَرگ کے اِس نالے میں اُجلا پانی بہتا ہے۔شفاف پانیوں کا ترَ نُّم بھی شفاف ہو تا ہے۔ پار جنگل میں دَرختوں کی ٹہنیاں مَچل مَچل کر لہراتی ہُو ئی ہَو ا ؤں کا←  مزید پڑھیے