نفسیات، - ٹیگ

اعتبار،بے اعتباری اور ہماری نفسیات/ڈاکٹر اختر علی سیّد

پاکستان کی سیاسی تاریخ آمریت اور سیاسی عدم استحکام کے مختلف ادوار سے عبارت ہے۔ آمریت تو ظاہر ہے عوام کو اس خوش فہمی میں بھی مبتلا نہیں ہونے دیتی کہ وہ حکومتی معاملات میں شراکت داری کا سوچ بھی←  مزید پڑھیے

پاکستان، نفسیات اور خالد سعید صاحب/ڈاکٹر اختر علی سیّد

خالد سعید صاحب کی شخصیت اور کام کے لیے یہ کہنا مشکل ہے کہ وہ ایک نثر نگار تھے، شاعر تھے، نقاد تھے، مترجم تھے، ماہر نفسیات تھے، ماہر تعلیم تھے یا فلسفی۔ ۔۔ بہت سے لوگوں کو یہی الجھن←  مزید پڑھیے

حماقت پر کچھ زور نہیں۔۔تنویر سجیل

کچھ نظر ان عقلمندوں کی باتوں پر ۔۔نہیں نہیں توقعات پر۔۔ مجھے غصہ بہت آتا ہے کوئی حل بتا دیں ؟ میں ہر وقت اداس رہتی ہوں کوئی طریقہ بتائیں کہ کیسے یہ اداسی ختم ہو؟ میری سسرال والوں سے←  مزید پڑھیے

جذباتی بندوق کا گھوڑا۔۔تنویر سجیل

جذباتی بندوق کے ٹریگر ہوتے ہیں جن کو دوسروں اور خاص کر قریبی لوگوں کی بات، رویے اور عمل کا ہلکا سا دباؤ چاہیے اور پھر دھڑادھڑ فائرنگ شروع ہو جاتی ہے←  مزید پڑھیے

مزاح کی نفسیات کے راز۔۔ ڈاکٹر خالد سہیل

مزاح کا ذہنی صحت کے ساتھ قریبی رشتہ ہے اس لیے ایک ماہر نفسیات اور ادیب ہونے کے ناطے میں نے سوچا کہ مجھے مزاح کی نفسیات کے بارے میں کچھ جاننا چاہیے ۔ہو سکتا ہے مزاح کے راز مجھے ایک بہتر ماہر نفسیات بننے میں مدد کریں اور میں اپنے مریضوں کی بہتر خدمت کر سکوں۔←  مزید پڑھیے

اخلاقی نفسیات (53) ۔ ذات سے آگے/وہاراامباکر

ہم اپنی فطرت میں خود پسند ہیں لیکن ہماری فطرت میں ایک سوئچ بھی ہے (جسے ہائیٹ Hive switch کا نام دیتے ہیں)۔ یہ ہر وقت آن نہیں ہوتا۔ اس کا آن ہونا ہمیں اپنی ذات سے آگے لے جاتا←  مزید پڑھیے

اخلاقی نفسیات (52) ۔ خوشحالی/وہاراامباکر

انسانوں نے اپنے ساتھ رفاقت کے لئے بہت سے جانوروں کو سدھایا ہے۔ بھیڑ، بکری، کتا، بلی ۔۔۔ اس کا نتیجہ یہ رہا ہے کہ ہمارے سدھائے ہوئے جانوروں میں جارحانہ رویے کی کمی اور دوستانہ رویہ پایا جاتا ہے۔←  مزید پڑھیے

اخلاقی نفسیات (51) ۔ معاشرت کے دھاگے/وہاراامباکر

“یہ ناقابلِ تصور ہے کہ آپ کبھی بھی دو چمپینزیوں کو دیکھیں جنہوں نے ملکر درخت کا تنا اٹھایا ہو”۔ مائیکل ٹوماسیلو جو چمپینزی کے ذہن پر تحقیق کے ماہر ہیں، ان کا یہ فقرہ سمجھنا انتہائی اہم ہے۔ ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔←  مزید پڑھیے

سپردگی ۔۔ڈاکٹر مختیار ملغانی

سپردگی کا عمل فرد کی کامل زندگی میں ایک بڑی رکاوٹ ہے، اس عمل کا ظہور صرف انفرادیت تک محدود نہیں بلکہ یہ سماج کی اجتماعی معاشرت میں بھی جڑ پکڑ سکتا ہے، مایوس کن بات یہ ہے کہ ایسے مظاہر ایک نسل سے اگلی نسل میں بھی منتقل ہوسکتے ہیں ۔←  مزید پڑھیے

اخلاقی نفسیات (49) ۔ گروہی چناؤ/وہاراامباکر

ستر کی دہائی کو “فرد کی دہائی” کہا جاتا ہے۔ انفرادیت پسندی کا عروج اس وقت میں آیا۔ سماجی سائنس میں ہونے والی تبدیلیاں بھی اسی کے ساتھ ہی۔ مثال کے طور پر، سماجی نفسیات میں fairness کے لئے کی←  مزید پڑھیے

اخلاقی نفسیات (48) ۔ خودغرض جین؟/وہاراامباکر

ایک نوجوان بائیولوجسٹ جارج ولیمز 1955 میں دیمک کے ماہر کا لیکچر سن رہے تھے۔ لیکچر دینے والے کا دعویٰ تھا کہ دیمک کی طرح ہی کئی جانور ایک دوسرے سے تعاون کرتے ہیں اور مددگار ہوتے ہیں۔ بڑھاپا اور←  مزید پڑھیے

اخلاقی نفسیات (43) ۔ آزادی/وہاراامباکر

بوہم صحرائے کالاہاری کے کنگ قبیلے کا ایک واقعہ بتاتے ہیں۔ “توی نام کے ایک شخص نے تین لوگوں کو قتل کر دیا تھا۔ اس کے خلاف کمیونیٹی اکٹھی ہوئی۔ کھلے عام دن میں لوگوں نے اس پر حملہ کیا←  مزید پڑھیے

اخلاقی نفسیات (42) ۔ برابری/وہاراامباکر

تمام پرائمیٹ جبلی طور پر درجہ بندی (hierarchy) والے گروہوں میں رہتے ہیں اور اگر اسے سٹڈی کیا جائے تو انسانی معیار کے حساب سے یہ بڑا جابرانہ نظام ہے۔ انسانی گروہ ایسے کام نہیں کرتے۔ بلکہ قدیم خانہ بدوش←  مزید پڑھیے

اخلاقی نفسیات (39) ۔ پستی/وہاراامباکر

سن 2001 میں ایک جرمن کمپیوٹر ٹیکنیشن ارمن میوس کی طرف سے انٹرنیٹ پر ایک عجیب اشتہار دیا گیا۔ “مجھے 21 سے 30 سالہ شخص درکار ہے جس کا مضبوط جسم ہو۔ میں اسے ذبح کر کے کھانا چاہتا ہوں”۔←  مزید پڑھیے

اخلاقی نفسیات (34) ۔ امتحان /وہاراامباکر

ہر بے لوث کام، ہیرو ازم یا انسانی شرافت کے پیچھے یا تو خود غرضی ہے یا بے وقوفی۔ یہ والا نکتہ نظر کئی سوشل سائنٹسٹ رکھتے رہے ہیں جن کی نظر میں انسان Homo economicus ہے۔ ایسی مخلوق جو←  مزید پڑھیے

اخلاقی نفسیات (27) ۔ مشرق کا سفر (الف)/وہاراامباکر

مندرجہ ذیل احوال جوناتھن ہائیٹ کا ہے۔ “میں اپنی تحقیق کے لئے تین ماہ کے لئے انڈیا میں اڑیسہ گیا۔ میری میزبانی بہت گرمجوشی سے کی گئی۔ ایک خوبصورت اپارٹمنٹ ملا جس میں ایک باورچی اور ذاتی ملازم بھی تھا۔←  مزید پڑھیے

اخلاقی نفسیات (26) ۔ تین موضوعات/وہاراامباکر

شویڈر نے جب اخلاقیات کے موضوع کے جمگھٹے بنائے تو ان کو تین ذیلی موضوعات میں تقسیم کیا۔ پہلا خودمختاری کا ہے۔ دوسرا گروہی ہے۔ اور تیسرا تقدیس کا ہے۔ خودمختاری کے ایتھکس کا مرکزی خیال یہ ہے کہ خودمختار←  مزید پڑھیے

ادبی تخلیقات میں نفسیات کا عمل/ ڈاکٹر خالد سہیل سے ارباب قلم کینیڈا کے ادبی چہاردرویشوں کا زوم پر مکالمہ(دوسرا،آخری حصّہ)

فیصل عظیم نفسیاتی پیچیدگی اگر تخلیقیت میں معاون ہوتی ہے تو اس کا حل ہونا کیا تخلیقی اپچ کو متاثر کر سکتا ہے۔؟ خالد سہیل۔ یہ بھی دلچسپ سوال ہے اس کی ایک مثال ورجینیا وولف تھیں دوسری مثال ساقی←  مزید پڑھیے

اخلاقی نفسیات (25) ۔ عقل کا سراب/وہاراامباکر

“ایک غلط تصور اور کسی یقین پر مصر رہنا۔ عقل و منطق اس میں دراڑ نہ ڈال سکے۔ جبکہ اس کا حققیت میں وجود نہ ہو”۔ یہ تعریف ویبسٹر ڈکشنری میں لفظ delusion کی کی گئی ہے۔ عقلیت پسندی ایک←  مزید پڑھیے

ادبی تخلیقات میں نفسیات کا عمل/ ڈاکٹر خالد سہیل سے ارباب قلم کینیڈا کے ادبی چہاردرویشوں کا زوم پر مکالمہ(پہلا حصّہ)

فیصل عظیم۔۔ ڈاکٹر صاحب ! ہم آپ سے اس موضوع کے حوالے سے کچھ جاننا چاہیں گے کہ الٹی ہو گئیں سب تدبیریں کچھ نہ دوا نے کام کیا دیکھا اس بیماریِ دل نے آخر کام تمام کیا میر نے←  مزید پڑھیے