معاذ بن محمود کی تحاریر
معاذ بن محمود
انفارمیشن ٹیکنالوجی، سیاست اور سیاحت کا انوکھا امتزاج۔

انٹرنیٹ پر پورن بھی بکتا ہے۔۔۔ معاذ بن محمود

ذاتی طور پہ مجھے دیسی لبرلز یا ماڈرن ملا جیسی اصطلاحات سے شدید چڑ ہے۔ پھر کوئی ایسا واقعہ پیش آتا ہے کہ ان اصطلاحات کے اندر چھپی منافقت صاف دکھائی دینے لگتی ہیں۔ سوشل میڈیا کی مہربانی سے رینکنگ←  مزید پڑھیے

پختونخوا کی نو عددنئی جامعات اور ان کی حقیقت۔۔۔ معاذ بن محمود

اس مضمون کو پڑھنے کے بعد متوقع قلمی جھڑپوں سے بچنے کے لیے پیشگی عرض ہے کہ راقم کا تعلق پشاور سے ہے۔ میٹرک تک تعلیم ایف جی بوائز پبلک ہائی سکول خیبر روڈ پشاور سے حاصل کرتے ہوئے ایڈورڈز←  مزید پڑھیے

اگلا ووٹ کسے دوں؟۔معاذ بن محمود

نئی نئی نوکری شروع کی تو مجھے لگتا تھا کہ مینجمنٹ صرف پیسے حرام کرتی ہے، اصل کام انجینیئر ہی کرتا ہے۔ یعنی دوسرے الفاظ میں وہی سرخوں والی سوچ۔ پھر آہستہ آہستہ اوپر گیا تو سمجھ آئی کہ نہیں،←  مزید پڑھیے

شرمین عبید چنائے کی ڈائری سے اقتباس۔۔۔ معاذ بن محمود

یہ ملک اب رہنے کے قابل نہیں رہا۔ یہ فیصلہ میں نے اس دن کیا جب نادرا والوں نے شناختی کارڈ کے لیے تصویر مانگی۔ گویا قومی شناختی کارڈ بنانے کے بہانے جنسی ہراسمنٹ؟ یہ کیسا ملک ہوا؟ میں نے←  مزید پڑھیے

خلیفہ کی ڈائری سے اقتباس۔معاذ بن محمود

قحط الرجال ہے صاحب، لیکن قوم ہے  کہ انکاری ہے۔ شاعر نے کیا خوب کہا تھا” بڑی مشکل سے ہوتا ہے چمن میں دیدہ ور پید” درویش گزشتہ ایام اوندھے منہ الٹا پڑا رہا۔ شوق ہرگز طبیعت پہ غالب نہ←  مزید پڑھیے

مسئلہ قادیانیت، ریاست اور عوامی جذبات۔معاذ بن محمود

قادیانیت کا مسئلہ تھوڑا ٹیڑھا ہے۔ عموماً اقلیتیں جہاں بھی ہوں، اپنا تشخص برقرار رکھنے کے لیے ممتاز ہونا ان کی ضرورت ہوتی ہے۔ احمدی حضرات کے لیے ممتاز رہنا زہر ہے کیونکہ وہ خود کو مسلمان مانتے ہیں، اور←  مزید پڑھیے

اعتدال پسندوں کی شام غریباں۔معاذ بن محمود

ایک زمانہ تھا جب علامہ طالب جوہری کی شامِ غریباں کو شیعہ سنی سبھی بلاتفریق دیکھا اور سنا کرتے تھے۔ طالب جوہری کی “شامِ غریباں “ پھر اسد جہاں کا نوحہ “گھبرائے گی زینب” اور پھر “سلامِ آخر” دیکھا جانا←  مزید پڑھیے

کون جیتا کون ہارا؟۔۔۔ معاذ بن محمود

ویسے تو یہ ضمنی الیکشن تھا مگر اہم بہت تھا۔ اس اہمیت کی کئی وجوہات تھیں۔ سب سے بڑی وجہ یہ کہ حلقہ ایک وزیراعظم کو معزول کرکے جمہوری میدان کے لیے سجایا گیا۔ دوسری اہم بات یہ کہ اپوزیشن←  مزید پڑھیے

مکالمہ زندہ باد، رونا مردہ باد۔۔۔ معاذ بن محمود

حسن ظن تو یہ تھا کہ آپ ایک بار پوچھ لیتے کہ ایسا مواد کیونکر چھاپا جو حضور کی طبیعت پہ گراں گزرا۔ آپ پوچھتے تو ہم جواب دیتے کہ بھیا مکالمہ ہے اور فی الوقت مکالمے کی شرائط میں←  مزید پڑھیے

حکایتِ نجم شاہ: قصہ ایک گاؤں کا۔۔ معاذ محمود

اس کا نام نجم شاہ تھا۔ خدا نے اس کے ہاتھ میں ہنر رکھا تھا۔ وہ باورچی تھا اور قریب ہر قسم کا پکوان بخوبی پکا لیتا تھا۔ گاؤں میں ہوٹل نہ ہونے کے برابر تھے لہزا ہنرمند ہونے سے←  مزید پڑھیے

مین سٹریم میڈیا، سوشل میڈیا اور گٹر

چند دن پہلے مین سٹریم میڈیا ٹائیکون اور جنگ گروپ کے کرتا دھرتا میر شکیل الرحمن نے غالباً عدالت میں سوشل میڈیا کے لیے “گٹر میڈیا” کی اصطلاح استعمال کی۔ سوشل میڈیا میں اس بیان کا شدید ردعمل آیا اور←  مزید پڑھیے

قصہ اک سرد رات کا – از خلیفہ رشید الہارون

نابود ہوجاتی ہیں وہ اقوام کہ جو اپنے ہیرے سنبھال نہیں پاتیں۔ ہیرے جناب والا ہیرے۔ ہیرے جو آپ سجانے کو مرے جاتے ہیں سنبھال مگر نہیں پاتے۔ الحذر الحذر۔ بیشک انسان خسارے میں ہے۔ بیشک کپتان خسارے میں ہے۔←  مزید پڑھیے

اور لاشیں مل گئیں!

غالباً سال 2012 میں افغانستان سے واپسی پہ بعینہ ایسا ہی واقعہ طور خم بارڈر پہ دیکھا جہاں پہاڑی راستے پہ کہیں اوپر آئل ٹینکر گرا ہوا تھا۔ بہت سے لوگوں کی نسبت (جو اندھا دھند قیاس آرائیوں میں مصروف←  مزید پڑھیے

اپنی اپنی دنیا

نوے کی دہائی سے پہلے معلومات عامہ کا مآخذ کتابوں، ٹیلی وژن اور اخبارات تک محدود تھا۔ ہر طرح کی خبریں ہم تک پہنچنے کا راستہ ڈھونڈ لیتی تھیں کیونکہ خبروں اور معلومات کے ذرائع پہ ہمارا کنٹرول نہ تھا۔←  مزید پڑھیے

ریاستی مفاد اور ایران سعودی چپقلش

ٹرمپ ان دنوں سعودی حکومت کا مہمان تھا۔ چونکہ سعودی عرب سے محبت و نفرت کرنے والوں کی مملکت الباکستان میں بہتات ہے لہٰذاپچھلے ایک ہفتے سے مومنین و صالحین بارش کے بعد جیسے نکلے سے دکھائی دے رہے ہیں۔←  مزید پڑھیے

کون پارسا کون فاحشہ؟

اس نے دعوت دی، میں نے قبول کی ، وہ داعی ہو کے پارسا۔۔ میں مدعو ۔۔پھر بھی فاحشہ، جسم میرا ہی تھا، آنکھ تیری تھی ظالم، تو ناظر رہا اور پارسا، میں حاضر ہوئی ۔۔۔سو فاحشہ! محفل سجائی تو←  مزید پڑھیے

جوابِ شاہنامۂ عمران

ثاقب ملک بھائی کی جانب سے دو اقساط پر مبنی مضمون سامنے آیا جس میں عمران خان کو معصوم عن الخطاء قسم کا مسیحا پیش کیا گیا۔ ثاقب بھائی سے پیار محبت اور تعظیم کا رشتہ ہے جس کی بنیاد←  مزید پڑھیے

ایک خیالی فیصلہ

(Note: this is a piece of literature and merely a satire. It must not be taken as an allegation and/or contempt either to a person or institution. Moreover, Mukaalma.com does not necessarily agree with the words and phrases used) IN←  مزید پڑھیے

عوریائی ڈائری کا ایک ورق

صبح سے طبیعت میں کچھ کثافت سی محسوس کر رہا تھا۔ رات چھولے پٹھورے کھائے اور بوجہ رب کائنات کی جانب سے عطا کردہ ذائقوں کے، بسیار خوری کی حد کو چھو بیٹھا۔ شاید یہی وجہ رہی کہ رات عجیب←  مزید پڑھیے

مقدمہ لبرلزم

لبرل اچھی طرح جانتے ہیں کہ انہیں کیا چاہیے۔۔ وہ فقط آزادی اور برابری چاہتے ہیں اس کے علاوہ تیسرا کوئی مقصد ان کے پیشِ نظر نہیں، ان کا خواب ہر کام کی آزادی ہے پھر چاہے وہ آزادی اظہار←  مزید پڑھیے