محمد احسن سمیع کی تحاریر
محمد احسن سمیع
محمد احسن سمیع
جانتے تو ہو تم احسنؔ کو، مگر۔۔۔۔یارو راحلؔ کی کہانی اور ہے! https://facebook.com/dayaarerahil

تم “منی لانڈرنگ” کرو ہو کہ کرامات کرو ہو۔۔۔محمد احسن سمیع

نیب کی پھرتیوں کے بعد اب صورتحال یہ ہے کہ ورلڈ بینک خود کہہ رہا ہے کہ بھائی ہماری رپورٹ کے اعداد و شمار حقیقی نہیں بلکہ ایک ریسرچ ماڈل کے ذریعے جنریٹ کئے گئے تخمینوں پر مبنی تھے، مگر←  مزید پڑھیے

نہ وہ لیڈر ہے، نہ ہی اس کا کوئی وژن ۔۔۔محمد احسن سمیع

عمران خان نے اپنے جلسے میں دو گھنٹے 92 کے ورلڈ کپ اور شوکت خانم کا راگ الاپنے کے بعد وہ معرکۃ الآراء 11 نکات پیش کئے جو اب مطالعہِ نیا پاکستان میں قائد اعظم کے 14نکات کی جگہ لیں←  مزید پڑھیے

انعام رانا اور اک فرضی  بھوت۔۔محمد احسن سمیع

ہمارے کئی قابل اور فاضل دانشوروں کی نظر میں قرارداد مقاصد ہمیشہ سے ایک ایسا کانٹا رہا ہے جو  وطن عزیز میں سکیولرازم کے نفاذ کی کسی بھی کوشش کے وقت حلق میں چبھنا شروع ہوکر ان کی جرات مند←  مزید پڑھیے

آن پہنچا ہے وہی دن کہ تھا جس کا وعدہ۔۔۔محمد احسن سمیع

منتظر فیضؔ تھے جن لمحوں کے حد سے زیادہ آن پہنچا ہے وہی دن کہ تھا جس کا وعدہ ! ساٹھ سالوں سے میرا مان کچلنے والے جان لے اب کہ ترا یوم جزا دور نہیں وہ نفس، سلب کیا←  مزید پڑھیے

بات اب اپنے حق حکمرانی کی ہے ۔۔محمد احسن سمیع

ہمارا ایم کیو ایم سپورٹر ہونا معروف ہے اور ہماری اس سپورٹ کی اپنی وجوہات ہیں، تاہم ہم نے اس کے باوجود الطاف حسین کے غلط اقدامات پر اسے نہ صرف تنقید کا نشانہ بنایا بلکہ مذاق بھی اڑایا جو←  مزید پڑھیے

کب راج کرے گی خلق خدا؟۔۔۔ محمد احسن سمیع

مجھے یہ تسلیم کرنے کوئی عار نہیں کہ میں ایک بنیاد پرست مسلمان ہوں۔ گناہ گار سہی مگر اپنے گناہوں کو “لبرل اسلام” کا جامہ پہنا کر انہیں جواز بخشنے کے بجائے ان پر نادم ہوں اور اپنی اصلاح کا←  مزید پڑھیے

تحفظ ختم نبوتﷺ اور الیکشن قوانین میں حالیہ ترمیم۔۔۔ محمد احسن سمیع

جب ہر ذی شعور اس لاقانونیت کی مذمت کر رہا تھا، تو پس پردہ ہدایت کاروں کو ایک نئے شوشے کی اشد ضرورت تھی جو عوامی توجہ قانون کی ان کرچیوں سے ہٹا سکے ، جو بوٹوں کی ٹھوکر سے←  مزید پڑھیے

صدیاں حسینؓ کی ہیں زمانہ حسینؓ کا۔محمد احسن سمیع

محرم الحرام کی آمد کے ساتھ ہی یکم محرم سے یوم عاشور تک سانحہ کربلا کے حوالے سے “تاریخی حقائق” کی چھان بین کا سلسلہ شروع ہوجاتا ہے۔ سوشل میڈیا کی آمد سے قبل اس قسم کے مباحثے عموماً کتب←  مزید پڑھیے

’’ہوتا تھا شب و روز تماشہ مرے آگے‘‘

ایک سال میڈیائی سرکس لگانے کے بعد بالآخر پانامہ کا ڈرامہ اختتام پذیر ہوا۔ مجھےیہ کہنے میں کوئی عار نہیں کہ یہ میرے لئے ذاتی طور پر مایوسی کے لمحات ہیں۔ اس کی وجہ یہ ہے کہ آئینی اور قانونی←  مزید پڑھیے

آپ بھی اپنی اداؤں پہ ذرا غور کریں!

میرے لیئے سب سے زیادہ افسوسناک اور تشویشناک امر یہ ہے کہ اچھے خاصے پڑھے لکھے اور مبینہ طور پر سمجھدار لوگ بھی محض بغضِ نواز میں انور لودھی اور اس کی زیم ٹی وی ٹائپ واہی تباہی، بے سروپا←  مزید پڑھیے

انصاف ، میرٹ کا قتل عام اور وطن عزیز

ہمارے ملک میں عوام کو اس نظام سے سب سے بڑا گلہ کیا ہے؟ کون سا شکوہ ایسا ہے جو ہر خاص و عام کی زبان پر ہے؟ یہی کہ ’’اجی اس ملک میں ٹیلنٹ کی کوئی قدر نہیں، میرٹ←  مزید پڑھیے

معیشت کے گورکھ دھندے اور حکومتی کارکردگی! (آخری قسط)

گزشتہ قسط کے اختتام پر ہم نے موجودہ حکومت کی بہتر فنانشل مینجمنٹ کا تذکرہ کیا تھا، کہ کس طرح موجودہ حکومت نے کم بیرونی قرضہ لے کر بھی گزشتہ حکومت کے مقابلے میں بیرونی قرض کے فی ڈالر کےعوض←  مزید پڑھیے

معیشت کے گورکھ دھندے اور حکومتی کارکردگی! (قسط چہارم)

گذشتہ قسط میں ہم نے ان وجوہات کا تفصیلاً ذکر کیا تھا جن کی بنیاد پر حکومتیں قرض لیتی ہیں۔ حکومتوں کا قرض لے کر بجٹ خسارہ پورا کرنا کوئی انہونی بات نہیں۔ کئی ترقی یافتہ معیشتیں بھی بجٹ خسارے←  مزید پڑھیے

معیشت کے گورکھ دھندے اور حکومتی کارکردگی! (قسط سوئم)

تجارتی خسارے کے علاوہ جس بات پر حکومت کے سب سے زیادہ لتے لئے جاتے ہیں وہ غیر ملکی قرضہ جات میں ’’ہوشربا‘‘ اضافہ ہے۔ حکومتیں قرضہ لینے پر کیوں مجبور ہوتی ہیں اس بات کو سمجھنے کے لئے بجٹ←  مزید پڑھیے

معیشت کے گورکھ دھندے اور حکومتی کارکردگی! (قسط دوئم)

گزشتہ قسط میں ہم نے روپے کی قدر کم کرنے یا ڈی ویلیویشن کی اجمالاً بات کی تھی۔ اس اجمال کی تھوڑی سی تفصیل بیان کرنا ضروری ہے کیونکہ عوام کے ذہن میں کرنسی کی قدر میں کمی ایک بھیانک←  مزید پڑھیے

معیشت کے گورکھ دھندے اور حکومتی کارکردگی! (قسط اول)

تجارتی خسارہ ملکی تاریخ کی بلند ترین سطح پر، بیرونی قرضے آسمان سےباتیں کرنے لگے، حکومت نے پھر خسارے کا بجٹ پیش کردیا، زر مبادلہ کے ذخائر تاریخ کی بلند ترین سطح پر، ہرفرد اتنے کروڑ کا مقروض وغیرہ وغیرہ۔←  مزید پڑھیے

اس سے بڑھ کر اور دشمنی کیا ہوگی؟

سوچا تھا آج پاکستان کے ایران اور سعودیہ سے تعلقات میں توازن کے حوالے سے کچھ لکھوں گا، کچھ اعداد و شمار کا گورکھ دھندا سجا کر عقلیت پر مبنی رائے پیش کروں گا، تاہم مردان کی ایک جامعہ میں←  مزید پڑھیے

پاکستان کا پاورسیکٹر: گردشی قرضوں (سرکیولر ڈیٹ) کا خاتمہ کیسے ممکن ہے؟

نوٹ”یونس ڈھاگہ صاحب معروف بیورو کریٹ اور سابق سیکرٹری بجلی و پانی رہے ہیں۔ انہیں تھر کول منصوبوں کا بانی بھی کہا جاتا ہے اور پاکستان میں بجلی کی قلت کو دور کرنے کے لئے بجلی کی پیداوار کے نئے←  مزید پڑھیے

جماعت اسلامی اوربے وقت کی راگنیاں!

جوں جوں الیکشن قریب آتے جارہے ہیں، تقریباً تمام سیاسی جماعتیں اپنی سیاسی شعبدہ بازیوں کو بامِ عروج پر لے جانے کی بھر پور کوشش میں ہیں تاکہ کسی طرح سیاسی منظر نامے میں اپنی موجودگی کا احساس برقرار رکھ←  مزید پڑھیے

فضائلِ حلال میٹرو

جب سے مہاتما بنی گالوی صاحب نے پشاور میں حلال میٹرو کے قیام کا اعلان فرمایا ہے، انصافیوں کی جانب سے شوشل میڈیا پر اس کے فضائل پر مبنی پوسٹس کی تعداد اس قدر بڑھ گئی ہے کہ کبھی کبھار←  مزید پڑھیے