سائنس

فزکس کے دو ٹھنڈے نوبل پرائز۔۔۔وہارا امباکر

ٹھوس، مائع اور گیس۔ مادے کی یہ تین حالتیں آپس میں خاصی ملتی جلتی ہیں۔ ان میں فرق صرف ان کے پارٹیکلز کی آپس میں فورس میں ہے ورنہ پارٹیکل خود الگ الگ ہیں اور اچھی طرح ان کی شناخت←  مزید پڑھیے

سمندر کی تہہ میں ۔ مصنوعی مرجان۔۔۔۔۔وہارا امباکر

امریکی ریاست ڈیلاوئیر میں دریائے ہند بحر اوقیانوس میں گرتا ہے۔ یہاں سے سولہ میل دور اگر سمندر میں اسی فٹ نیچے غوطہ لگایا جائے تو عجب نظارہ دیکھنے کو ملے گا۔ سمندری زندگی کا ایک شہر آباد ہے۔ چھوٹی←  مزید پڑھیے

بائیالوجیکل ایکسپیریمنٹ آن مون۔۔۔۔محمد شاہزیب صدیقی

آپ کو یاد ہوگا کہ کچھ دن پہلے چین کا چانگ 4 مشن چاند کے پچھلے حصے پہ اترا تھا… یہ انسانی تاریخ کا پہلا مشن تھا جس نے چاند کے پچھلے حصے پہ لینڈ کیا… اس مشن نے جہاں←  مزید پڑھیے

جب غرور ٹوٹتا ہے، تب عروج ملتا ہے ۔۔۔۔۔ وہارا امباکر

ستاروں بھری رات میں آسمان کا نظارہ ہمارے چھوٹے پن کا احساس دلانے کو کافی ہے۔ ہم کون ہیں؟ یہ کائنات کیا ہے؟ ان سوالوں کے ملتے جواب انسانی انا پر مسلسل ضربیں لگاتے آئے ہیں۔ ہم اس سے چھوٹے←  مزید پڑھیے

جب شکاری شکار تھا۔۔۔وہارا امباکر

جنوبی افریقہ کے شہر توانگ میں 1924 میں ایک کان کن نے ایک اہم چیز دریافت کی۔ ایک بچے کی کھوپڑی کا فاسل۔ یہ انسان نما آسٹریلوپیتھیکس افریقانس تھا۔ اس اہم نمونے کو توانگ چائلڈ کہا جاتا ہے۔ اس نے←  مزید پڑھیے

ہم دیکھتے کس سے ہیں؟۔۔۔۔وہاراامباکر

آپ نیند سے بیدار ہوئے ہیں۔ آنکھیں کھولی ہیں اور دنیا آپ کی نظروں کے سامنے، کمرے میں سورج کی آتی کرنیں، کمرے کی چیزیں، یہ رنگین دنیا دیکھنا کتنا آسان ہے۔ ٹھیک؟ نہیں۔ بالکل غلط۔ دیکھنا سب سے مشکل←  مزید پڑھیے

نیوہوریزن کا نئے جہاں میں قدم ۔۔۔۔۔۔محمد شاہ زیب صدیقی

بہرحال یہ تسلیم کرنے میں اب کوئی قباحت نہیں رہی کہ ہمیں اندازہ نہیں تھا ،کائنات کو کھوجنے کا نشہ اس قدر گہرا ہے کہ کتنی ہی دہائیاں صرف ہوجانے کے باوجود آج بھی ہمیں گمان گزرتا ہے کہ ہم←  مزید پڑھیے

نیوکلیائی آبدوز کے اندر۔۔۔۔وہارا امباکر

اس وقت جہاں پر دنیا کے ساڑھے چھ لاکھ لوگ زمین سے ہزاروں فُٹ بلند جہاز میں بیٹھے اڑ رہے ہیں، وہاں پر ہزاروں لوگ سمندر کی سطح سے نیچے آبدوز پر موجود ہیں۔ نیوکلئیر آبدوز دنیا کے مہنگے ترین←  مزید پڑھیے

مختلف اقوام کے عقائد۔۔۔۔روبینہ نازلی

انسان سے وابستہ( اس کے جسم کے علاوہ )انسانی باطن، نفس اور روح کے متعلق مختلف اقوام اور مذاہب میں مختلف عقیدے پائے جاتے ہیں درحقیقت روح و نفس مذہبی آفاقی اطلاعات ہیں اور یہ آفاقی اطلاعات ابھی تک پورے←  مزید پڑھیے

ایک تھا گینڈا، بابو کی تصویر۔۔۔۔وہارا امباکر

ساتھ لگی تصویر آج واشنگٹن میں نیشل آرٹ گیلری میں لگی ہے۔ یہ ایک نادر فن پارہ ہے۔ اس میں ایسا کیا؟ اس کے لئے پانچ سو سال پہلے کی دنیا میں چلتے ہیں۔ یہ کہانی سلطان مظفر شاہ کے←  مزید پڑھیے

قدیم انسان۔۔۔۔روبینہ نازلی

آج یہ جاننا انتہائی ضروری ہے کہ ۱۔ قدیم انسان حیوان نہیں انسان ہی تھا ہمیشہ سے۔ ۲۔ قدیم انسان یا ماضی کا انسان آج کے ترقی یافتہ مہذب انسان سے زیادہ ترقی یافتہ، تعلیم یافتہ اور تہذیب یافتہ تھا۔←  مزید پڑھیے

جانوروں سے ہارٹ ٹرانسپلانٹ۔۔۔۔۔۔پہلی بارش

دنیا میں ہر برس لاکھوں مریض دل کے ٹرانسپلانٹ کے امیدوار ہوتے ہیں لیکن بہت کم لوگ موت کے بعد دل عطیہ کرتے ہیں اسلیے دل کے مریضوں کی ایک بڑی تعداد بروقت ٹرانسپلانٹ نہ ہوسکنے کے باعث ہلاک ہو←  مزید پڑھیے

جانے کس جرم کی π ہے سزا ۔۔۔۔ سلیمان جاوید

ساغر صدیقی تو اپنی سزا پوری کرگئے لیکن سائنس دانوں کی سزا پوری نہیں ہوئی۔300 برس بیشتر انگریز ریاضی دان جان ویلس نے پائی کی قیمت معلوم کرنے کا جو کلیہ دریافت کیا تھا اس پر کئی اعتراضات اٹھائے گئے←  مزید پڑھیے

چنداں کہکشائیں۔۔۔۔۔محمد شاہ زیب صدیقی

ہماری کائنات اتنی وسیع ہے کہ اس میں نئے سے نئے مظاہر ہر آن ہمارا انتظار کررہے ہوتے ہیں، یہی وجہ ہے کہ جب فلکیات دان کسی مظہر کے متعلق کہتے ہیں کہ “ہم نہیں جانتے”تو یہ اس بات کا←  مزید پڑھیے

لبرلزم اپنے آخری دم کی طرف ہے۔۔۔۔ضیغم قدیر/اختصاریہ

آرٹی فیشل انٹیلی جنس کا بڑھتا ہوا اثر و رسوخ لبرلزم کے تابوت میں آخری کیل ثابت ہورہا ہے اب تک پوری دنیا میں لبرلزم سے لوگ اس لیے  مرعوب ہورہے ہیں کیونکہ انکو اسکے سوا کوئی دوسرا بہترین سسٹم←  مزید پڑھیے

اجتماعی لاشعور ۔ جاہل مولوی اور ملک دشمن لبرل۔۔۔۔وہارا امباکر

انسان کو معاشرتی حیوان کہا جاتا ہے۔ فنکاروں یا کھلاڑیوں کی مقبولیت، گپ شپ والے مارننگ شو، تازہ گپ والی ویب سائٹ، پارٹیوں کی فوٹو اور خبریں، غیبت، رشک، حسد، سکینڈل وغیرہ یہ سب مثالیں ہیں کہ ہم دوسروں میں←  مزید پڑھیے

انجان جہانوں کے مسافر ۔۔۔ بابر فیروز

اور پھر آج سے چند دن پہلے مورخہ ۵ دسمبر کے دن پروفیسر کو اپنے دوسرے چھوٹے ہونہار بیٹے وائجر دوم کا خط ملا کہ والد صاحب میں اس وقت اپ سے ۱۸ ارب کلومیٹر دور پہنچ چکا ہوں، آج سورج سے نکلنے والی شعاؤں کے ذرات جن کے بارے میں میں نے سراغ رکھا ہوا تھا بالکل ماند پڑ چکی ہیں۔ اب میں سورج کے حفاظتی بلبلے ہیلو پاز کے شمسی کشش کے دائرے سے شام کسی لمحے نکل جاؤں گا۔۔ ←  مزید پڑھیے

یہ دنیا اتنی بری نہیں۔۔۔۔۔وہارا امباکر

“مبارک ہو، تاریخ میں پہلی بار میں ہم ایک تاریخی سنگِ میل تک پہنچ گئے ہیں۔ ہم اب پہلی بار ایک ایسی دنیا میں رہتے ہیں جہاں غربت دنیا کی اکثریت کو تنگ نہیں کرتی”۔ یہ جملہ درست ہے لیکن←  مزید پڑھیے

حجامہ یا کپنگ ۔۔۔۔ارشد غزالی/ہیلتھ بلاگ

حجامہ عربی زبان کے لفظ حجم سے نکلا ہے‘‘ جس کے معنی کھینچنا/چوسنا ہے۔ اِس عمل میں مختلف حصوں کی کھال سے تھوڑا سا خون نکالا جاتا ہے۔ انسانی صحت کا دارو مدار جسمانی خون پر ہے اگر خون صحیح←  مزید پڑھیے

خلائی پروگرام بند کرو! ناسا مردہ باد۔۔۔۔۔وہارا امباکر

خلائی پروگرام اور ٹیکنالوجی وقت اور پیسے کا ضیاع ہیں۔ اربوں ڈالر خرچ کر کے خلا میں چیزیں بھیجی جاتی ہیں جب کہ اس زمین پر ابھی اتنے مسائل حل ہونے والے ہیں۔ کہیں قحط ہے تو کہیں گرمی، اربوں←  مزید پڑھیے