مادھوری کے حاملہ نہ ہونے کا تاریخی معاہدہ

ممبئی: سنجے دت اور مادھوری ڈکشٹ کی محبت بولی وڈ کے اساطیری معاشقوں میں شمار ہوتی ہے۔ یہ محبت کچھ عرصہ چلی لیکن پھر دونوں کی راہیں الگ الگ ہوگئیں۔

اسی معاشقے کی وجہ سے دھک دھک گرل کو ایک ایسا عجیب و غریب معاہدہ کرنا پڑا تھا، جس کی بولی وڈ کی تاریخ میں کوئی مثال نہیں ملتی۔

tripako tours pakistan

ایک بھارتی رسالے کے مطابق 90 کی دہائی میں مادھوری کی سنجے دت سے قربتیں بڑھنے لگیں اور فلم تھانیدار کی شوٹنگ کے دوران دونوں کافی قریب آگئے۔

اس وقت سنجے دت کی اہلیہ رچا شرما انہیں چھوڑ کر بیرون ملک جا چکی تھیں، جس کی وجہ سے دونوں کے بیچ میں حائل تمام رکاوٹیں دور ہو چکی تھیں اور دونوں یک جان دو قالب کا منظر پیش کرنے لگے تھے۔

اس معاشقے کو بلاک بسٹر فلم ‘ساجن’ نے مزید گہرا کردیا۔ جب سنجے دت اکیلے شوٹنگ کر رہے ہوتے تو وہ سیٹ پر مادھوری سے فون پر گھنٹوں باتیں کرتے، جس کا بل پروڈیوسرز کے کھاتے سے ادا ہوتا۔

اسی دور میں ڈائریکٹر سبھاش گھائی نے دونوں کو سپر ہٹ فلم ‘کھل نائیک’ میں سائن کر لیا، تاہم انہیں یہ خدشہ لاحق ہوگیا کہ فلم کی شوٹنگ کے دوران کہیں یہ دونوں ایک دوسرے سے شادی نہ کرلیں یا پھر مادھوری حاملہ نہ ہو جائیں۔

اسی خدشے کے پیش نظر سبھاش گھائی نے مادھوری سے ‘No Pregnancy’ معاہدہ کرلیا جس کے تحت فلم کی تکمیل تک مادھوری حاملہ نہیں ہو سکتی تھیں۔

Advertisements
merkit.pk

سبھاش گھائی اور مادھوری کے مابین یہ معاہدہ طے پانے کے بعد ہی کھل نائیک کی شوٹنگ شروع ہوئی۔ اس معاہدے کے ذریعے سبھاش گھائی عجیب و غریب معاہدہ کرنے والے پہلے اور اکلوتے ڈائریکٹر بن گئے، جبکہ مادھوری نے بھی ایسا معاہدہ کرنے والی پہلی اداکارہ ہونے کا یہ اعزاز اپنے نام کر لیا۔

  • merkit.pk
  • merkit.pk

بذریعہ فیس بک تبصرہ تحریر کریں

Leave a Reply