• صفحہ اول
  • /
  • خبریں
  • /
  • اسحاق ڈار نے 5 سال بعد احتساب عدالت کے سامنے سرنڈر کردیا، عمران خان نے جھوٹا کیس بنایا

اسحاق ڈار نے 5 سال بعد احتساب عدالت کے سامنے سرنڈر کردیا، عمران خان نے جھوٹا کیس بنایا

وزیر خزانہ اسحاق ڈار نے آمدن سے زائد اثاث جات ریفرنس میں خود کو پانچ سال بعد احتساب عدالت کے سامنے سرنڈر کر دیا۔

وزیر خزانہ اسحاق ڈار آج اسلام آباد میں احتساب عدالت کے سامنے پیش ہوئے ، ان کے ہمراہ وزیر داخلہ رانا ثنااللہ بھی تھے، عدالت نے حاضری کے بعد انہیں جانے کی اجازت دے دی۔

عدالت نے اسحاق ڈار کے دائمی وارنٹ گرفتاری منسوخ کرنے کی درخواست پر نوٹس جاری کرتے ہوئے نیب سے 7اکتوبر تک جواب طلب کر لیا۔

عدالت میں پیشی کے بعد میڈیا سے گفت گو کرتے ہوئے اسحاق ڈار نے کہا کہ میرے خلاف کیس جھوٹا ہے،مجھ پر عمران خان نے کیس بنایا انٹر پول نے بھی کلین چٹ دی،ٹی وی چینل نے جھوٹا الزام لگانے پر برطانیہ میں3 کروڑ ہرجانہ ادا کیا۔

عمران خان کے دور حکومت میں ان کا پاسپورٹ منسوخ کیا گیا تھا، ان کے خلاف بے بنیاد کیس بنایاگیا ،جس کی وجہ سے تکالیف برداشت کیں،میں نے پاکستان کے لیے خدمات سرانجام دی ہیں،میں نے کبھی اپنے ٹیکس گوشوارے جمع کرانے میں تاخیر نہیں کی،انتقام اس حد تک پہنچ چکا ہے کہ مجرم پھرتے ہیں اور شریف مشکلات کا سامنا کرتے ہیں۔

عمران خان نے ملکی معیشت کو ناقابل تلافی نقصان پہنچایا،آج بھی اگر معاشی مشکلات ہیں تو یہ عمران خان کی وجہ سے ہیں،اسحاق ڈار نے کہا کہ عمران خان نے پاکستان کا وہ حال کیا جو کوئی دشمن بھی نہیں کرسکتا، انہوں نے پاکستان کی عوام کیلئے بارودی سرنگیں بچھائیں ہیں،عمران خان اپنے کرتوتوں پر اللہ سے معافی مانگو،کچھ خدا کاخوف کریں اور پاکستان کو چلنے دیں۔

پاکستان اس وقت مس مینجمنٹ کا شکار ہے، پاکستان میں معاشی استحکام کے لیے اقدامات کرنے ہوں گے،عمران خان ملک کو مزید مشکلات سے دوچار نہ کریں،عمران خان نے جاتے جاتے معیشت کو نقصان پہنچا یا ،وہ کہتے رہے ہیں کہ میں نے بارودی سرنگ بچھادی ہے،

اسحاق ڈار نے کہا کہ غیر قانونی کام ہوتے رہے ہیں،میرے خلاف کیس کو 10منٹ میں ہوامیں اُڑ جاناچاہیے تھا،میرے آنے سے پاکستان کے قرضوں میں کمی آگئی ہے۔

وزیر خزانہ نے کہا کہ وہ معیشت کو بحال کریں گے سب سے پہلے شرح سود کو نیچے لائیں گے،پاکستان کے 5 سال ضائع ہو گئے اور ملک اب 30 سال پیچھے جا چکا ہے،پاکستان ڈیفالٹ سے دور ہوگیاہے،کچھ دن دیں ،معیشت بہترکرنے کی کوشش کریں گے۔

اسحاق ڈار نے کہا کہ جو کہہ رہے ہیں کہ ڈیل ہوئی ہے ان سے پوچھیں کہ مجھے پاسپورٹ کیوں نہیں دیا گیا،

مفتاح اسماعیل نے اپنے تجرنے کی بنیاد پر معیشت بہترکرنے کی کوشش کی، ان کی وجہ سے پاکستان نادہندہ ہونے سے بچ گیا، وہ ہماری معاشی ٹیم کا حصہ رہیں گے،4سال کی خراب معیشت کو 6ماہ میں ٹھیک نہیں کیاجاسکتا،سیاست کو ایک طرف کرکے ملکی مفاد کے لیے کام کرنا ہوگا۔

اسحاق ڈار نے کہا کہ ن لیگ ملکی معیشت کو اچھی حالت میں چھوڑ کرگئی ،3دھرنوں کے باوجود ہم نے معیشت کو بہترکیا،عالمی معاشی اداروں نے ہمارے دور میں معاشی ترقی کا اعتراف کیا۔

ماضی میں معیشت کے ساتھ جوکچھ ہوا سب جانتے ہیں،ہمارے دورمیں مستحکم معیشت کا گزشتہ حکومت نے بیڑہ غر ق کیا،ہمیں مشکل چیلنجز کا سامنا ہے ،ہم کام کریں گے ،کامیابی اللہ دے گا۔

اسحاق ڈار نے کہا کہ میں نے مارکیٹ میں ڈالر نہیں پھینکے ،الزامات بے بنیاد ہیں،ہمارے دورمیں معیشت اگر بہتر ہوئی تو وہ کامیاب حکمت عملی تھی،1999میں معاشی استحکام کو ن لیگ نے دوام بخشا۔

پاکستانی کرنسی کے ساتھ کسی کوکھیلنے نہیں دیں گے ،روپیہ تگڑا ہورہاہے ،ڈالر کمزور ہوا،قرضوں کا بوجھ کم ہواہے،معاشی امور کو بہتر انداز میں سرانجام دیں گے،ہم نے ایٹمی دھماکے کیے تو دنیانے پابندیاں لگائیں۔

اس موقع پر ایک صحافی کی جانب سے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں بارے سوال کیا گیا جس پر انہوں نے جواب دیا کہ دو چار دن تو دو، ابھی پیٹرول کی قیمتوں پر کچھ کہا نہیں جاسکتا۔

Advertisements
julia rana solicitors london

خیال رہے کہ احتساب عدالت نے عدم حاضری کی بنیاد پر اسحاق ڈار کے دائمی وارنٹ گرفتاری جاری کر رکھے تھے جنہیں گزشتہ ہفتے معطل کر دیا گیا تھا اور عدالت نے حکم دیا تھا کہ انہیں وطن واپس پر گرفتار نہ کیا جائے۔

Facebook Comments

خبریں
مکالمہ پر لگنے والی خبریں دیگر زرائع سے لی جاتی ہیں اور مکمل غیرجانبداری سے شائع کی جاتی ہیں۔ کسی خبر کی غلطی کی نشاندہی فورا ایڈیٹر سے کیجئے

بذریعہ فیس بک تبصرہ تحریر کریں

Leave a Reply