زاہد آرائیں کی تحاریر

ہمارے نظامِ شمسی کے آٹھ سیارے۔۔زمین/قسط6

چاند ہماری زمین کا ایک سیارچہ ہے۔ زمین سے کوئی دو لاکھ چالیس ہزار میل دور ہے۔ اس کا قطر 2163 میل ہے۔ چاند کے متعلق ابتدائی تحقیقات گلیلیو نے 1609ء میں کیں۔ اس نے بتایا کہ چاند ہماری زمین←  مزید پڑھیے

ہمارے نظامِ شمسی کے آٹھ سیارے۔۔۔۔زاہد آرائیں /قسط5

زمین۔۔ Earth ۔۔دوسرا حصّہ۔۔ زمین کے کرۂ ہوائی  کی بنیادی پرتیں۔ کرۂ متغیرہ کرۂ متغیرہ (Troposphere)، کرۂ ہوا کی سب سے نچلی پرت ہے۔ یہ زمین کی قریب ترین فضائی پرت ہے۔ یہ پرت یا کرہ زمینی سطح سے شروع←  مزید پڑھیے

ہمارے نظامِ شمسی کے آٹھ سیارے۔۔۔۔زاہد آرائیں /قسط 4

زمین۔۔ Earth ۔۔پہلا حصّہ۔۔ زمین نظامِ شمسی میں سورج کا تیسرا نزدیک ترین سیارہ ہے۔ زمین نظام شمسی کا وہ واحد سیارہ ہے جہاں پرزندگی موجود  ہے۔ پانی زمین کی 3­/­2 سطح کو ڈھکے ہوئے ہے۔ زمین کی بیرونی سطح←  مزید پڑھیے

ہمارے نظامِ شمسی کے تسلیم شدہ آٹھ سیارے۔۔۔زاہد آرائیں /قسط3

زہرہ۔۔ Venus۔۔دوسرا حصّہ۔۔ مقناطیسی میدان اور مرکزہ 1967 میں وینیرا 4 نے زہرہ پر موجود انتہائی کمزور مقناطیسی میدان دریافت کیا۔ یہ مقناطیسی میدان زمین کے برعکس محض قطبی ہواؤں اور آئنو سفیئر کے درمیان تعلق سے پیدا ہوتا ہے۔←  مزید پڑھیے

ہمارے نظامِ شمسی کے آٹھ سیارے(دوسرا سیارہ زہرہ)۔۔۔زاہد آرائیں /دوسرا حصہ

زہرہ۔۔ Venus۔۔پہلا حصّہ۔۔ سورج سے دوسرا سیارہ ہے اور سورج کے گرد ایک چکر زمینی وقت کے مطابق 224.7 دنوں میں مکمل کرتا ہے۔ اس کا نام قدیم رومن دیوی وینس زہرہ کے نام پر رکھا گیا ہے جو محبت←  مزید پڑھیے

ہمارے نظامِ شمسی کے آٹھ سیارے’عطارد۔۔۔۔زاہد آرائیں /قسط1

عطارد ہمارے نظام شمسی کا سب سے اندرونی سیارہ ہے جو سورج کے گرد ایک چکر زمینی اعتبار سے 87.969 دنوں میں پورا کرتا ہے۔ اس کے علاوہ سورج کے گرد لگنے والے ہر دو چکروں میں عطارد اپنے محور←  مزید پڑھیے