طاہر یاسین طاہر کی تحاریر
طاہر یاسین طاہر
طاہر یاسین طاہر
صحافی،کالم نگار،تجزیہ نگار،شاعر،اسلام آباد سے تعلق

امریکہ کی اسرائیل نوازی ۔۔۔طاہر یاسین طاہر

ہر دور کی توفیق ہے ظالم کی وراثت مظلوم کے حصے میں تسلی نہ دلاسا جابروں کی تاریخ اس امر کی گواہ ہے کہ انھوں نے ہمیشہ ظالم طبقات کی حمایت و نصرت کی۔ اللہ اور اللہ والوں کے سوا←  مزید پڑھیے

افغان خواتین کی خود کشیاں اور ہم۔۔۔طاہر یاسین طاہر

خود کشی حرام ہے،لاریب حرام ہے ،لیکن خود کو موت کے حوالے کرنے والے زندگی کو نہ ہی نعمت تصور کرتے ہیں نہ ہی انھیں حلال و حرام سے کوئی غرض ہوتی ہے۔اپنے سماجی و نفسیاتی مسائل سے چھٹکارے کے←  مزید پڑھیے

نگران حکومت کی مبہم ترجیحات اور درپیش مشکلات۔۔۔طاہر یاسین طاہر

موضوعات کا موسم اپنے جوبن پر ہے۔ جنرل الیکشن سے لے کر سیاسی جماعتوں کے منشور اور امیدواروں کے انتخابات سے لے کر امیدواروں کی قلت تک سارے موضوعات بکھرے پڑے ہیں۔ الیکٹیبلز کی پی ٹی آئی کی طرف اڑان کو←  مزید پڑھیے

اسلام آباد میں تعینات امریکی سفارتی عملہ۔۔۔طاہر یاسین طاہر

فاتح قوموں کا رویہ بڑا ہی جارحانہ ہوتا ہے۔جب جنگیں گھوڑوں،ہاتھیوں اور پیادہ فوجوں کی مدد لڑی جاتی تھیں، اس وقت فاتحین جس شہر میں داخل ہوتے اس میں لوٹ مار، قتل و غارت گری کرنے کے بعد شہر کوآگ←  مزید پڑھیے

ٹکراو تو نظر آ رہا ہے۔۔۔۔ طاہر یسین طاہر

 ریاستیں اداروں کے ستون پہ ہی قائم رہتی ہیں۔ ادارے کمزور اور شخصیات مضبوط ہوں تو ریاستیں ٹکڑوں میں بٹ جایا کرتی ہیں۔ انارکی پھیل جایا کرتی ہے، طوائف الملوکی کا راج ہوتا ہے۔ جب بھی حکومت یا ریاست کی←  مزید پڑھیے

عمران خان کا قابل تحسین فیصلہ۔۔۔طاہر یسین طاہر

کہنے والوں کا کیا ہے؟ وہ کہتے رہیں گے اور تا دیر کہتے رہیں گے کہ عمران خان کو سیاست نہیں آتی۔ ہمارا سماجی رویہ بڑا جارحانہ ہے۔ ہم کسی شخص میں برائی تلاش کرنے نکلیں تو سارے جہان کی←  مزید پڑھیے

شام پر امریکی حملہ اور سلامتی کونسل کی معذوری۔۔۔طاہر یسین طاہر

نہ تو امت کہیں نظر آ رہی ہے ارو نہ ہی اسلامی فوجی اتحاد، کوئی 40 کے لگ ملکوں کے اس اتحاد کی فوجی مشقیں شروع ہوگئی ہیں، جس میں تقریباً 24 اسلامی ملک حصہ لیں گے، ان جنگی مشقوں←  مزید پڑھیے

چین امریکہ تجارتی تعلقات کے ممکنہ اثرات۔۔طاہر یسین طاہر

ملکوں کے تعلقات مفادات پہ بنتے بگڑتے اور پروان چڑھتے ہیں، قوموں کی تاریخ یہی ہے۔ جیسے افراد کے اندر طاقت اور خود نمائی کا جذبہ موجود ہوتا ہے، بالکل اسی طرح اقوام کے اندر بھی خود نمائی اور طاقت←  مزید پڑھیے

اسرائیل کی درندگی۔۔طاہر یاسین

اسرائیل کا وجود ختم ہو جائے گا یا باقی رہے گا؟ کیا اسرائیل کو ختم ہو جانا چاہیے؟ اسرائیل کو خطرات کیا ہیں کہ وہ ختم ہو جائے گا؟ یا اسرائیل اگر کمزور ریاست بنتا ہے یا وہ ختم ہوتا←  مزید پڑھیے

روس اور افغان طالبان کے تعلقات کی حقیقت۔۔۔طاہر یاسین طاہر

دنیا ایک نئی سرد جنگ کی طرف چل پڑی ہے۔ اس جنگ کے مرکزی کردار بھی بے شک روس اور امریکہ ہی ہوں گے، جبکہ چین اس بار روس کا اعلانیہ پارٹنر اور اس جنگ کا فرنٹ لائن ہوگا۔ روس←  مزید پڑھیے

ایم ایم اے کی بحالی پہ ایک نظر۔۔۔طاہر یاسین طاہر

انتخابات متوقع ہیں اور سیاسی جماعتیں اپنی فطری ضرورتوں کے مطابق جوڑ توڑ میں مگن نظر آ رہی ہیں، بے شک ہر انتخابی عمل کے دوران میں سیاسی اتحاد بنتے ٹوٹتے ہیں۔ ایم ایم اے یعنی متحدہ مجلس عمل بحال←  مزید پڑھیے

تبلیغی اجتماع کے نزدیک خود کش دھماکہ۔۔۔طاہر یاسین طاہر

لاہور ایک بار پھر لہو لہو ہو گیا ہے۔دنیا دیکھ لے کہ کیا پاکستان دہشت گردوں کا پشتی بان ہے یا خود دہشت گردی کا شکار ملک؟ بے شک آخر الذکر ہی حقیقت ہے۔ دہشت گردی کے خلاف پاکستان کی←  مزید پڑھیے

جمہوریت یا خاندانی جمہوریت۔۔طاہر یٰسین طاہر

جدید تاریخ میں انسان کی اجتماعی دانش نے معاشرتی حیات کو کسی ضابطے کے تحت لا کر چلانے کے لئے جس نظام پہ اعتماد کیا، اسے جمہوریت کہا جاتا ہے۔ جمہوریت کا یہ حسن ہے کہ اس میں حق ِ←  مزید پڑھیے

امریکی مقاصد آشکار ہیں۔۔۔ طاہر یاسین طاہر

امریکہ ایک طاقتور ریاست ہے۔ معاشی اور عسکری حوالے سے، ٹیکنالوجی میں اسے برتری حاصل ہے۔ اس کے تھینک ٹینکس ہمہ وقت ملکوں، خطوں اور قوموں کا تجزیہ کرنے میں لگے رہتے ہیں۔ دنیا کے ہر کونے میں امریکی مفادات←  مزید پڑھیے

تصادم تو ہو رہا ہے۔۔طاہر یسین طاہر

زندگی کسی نظریئے کی بجائے خواہشوں کے پیڑ تلے گزارنے والوں پہ کڑا وقت ہے۔ فرد معاشرے کی اکائی ہے۔ یہ جملہ کئی بار دہرایا میں نے اور یہی اکائی معاشرے کا مجموعی مزاج تشکیل دیتی ہے۔ ہم جس معاشرے←  مزید پڑھیے

پاکستان کیخلاف عالمی پروپیگنڈہ۔۔۔طاہر یاسین طاہر

ہمیشہ کی طرح لکھنے کو کئی ایک موضوعات موجود ہیں۔ عالمی و علاقائی سطح پر پیش آنے والے تیز رفتار واقعات اور داخلی سیاسی ہیجان سب ہی اپنی طرف متوجہ کرتے ہیں۔ دنیا ایک نئی جنگ میں الجھی ہوئی ہے۔←  مزید پڑھیے

مشال قتل کیس اور مذہبی جماعتوں کا رویہ۔۔۔ طاہر یاسین طاہر

قتل چھپتے تھے کبھی سنگ کی دیوار کے بیچ اب تو کھلنے لگے مقتل بھرے بازار کے بیچ بارہا محسن نقوی کے اس شعر کے سہارے کالم شروع کیا۔آج پھر اسی شعر کا عصا لیے درکار ہے، میرے سامنے مذہبی←  مزید پڑھیے

ووٹ کا تقدس یوں بھی بحال کریں۔۔۔طاہر یاسین طاہر

ہر ایک کا عدل، انصاف، خبر، سچائی اور جھوٹ کا اپنا اپنا معیار ہے۔ یہ معیار ذاتی مفادات کی چادر اوڑھے ہوئے ہے۔ اسی چادر کی اوٹ سے معیارات جانچے جاتے ہیں۔ اگر کوئی جے آئی ٹی بنتی ہے اور←  مزید پڑھیے

زینب کا قاتل یہ نظام بھی ہے۔۔۔ طاہر یاسین طاہر

ہم وحشتوں کے سفیر ہیں،ہیجان پسند معاشرے کے افراد۔آئے روز کوئی نہ کوئی ہیجان خیز معاملہ ہمارے نفسیاتی ذوق کی تسکین کرتا ،نئے واقعے کی راہ ہموار کر رہا ہوتا ہے ،ہم مگر روایتی مذمتی بیانات،اور سوشل میڈیا ٹرینڈز کو←  مزید پڑھیے

پیغام ِ پاکستان فتویٰ۔۔۔طاہر یاسین طاہر

دیر سے ہی سہی مگر کوئی کام تو ہوا، کوئی پیش رفت تو ہوئی۔ منزل کا تعین تو ہوا،دو گام سامنے کو تو اٹھے۔علما نے تاخیر کی جو انھیں نہیں کرنی چاہیے تھی، دہشت گردی کا مسئلہ بڑا واضح اور←  مزید پڑھیے