ملک گوہر اقبال خان راما خیل کی تحاریر

خدا ہی بہتر جانتا ہے۔۔۔ملک گوہر اقبال خان رما خیل

ڈیئر ناسا۔ میرا نام” جیک ڈیوس” ہے اور میں ” پلانیٹری پروٹیکشن آفیسر” کی ملازمت کے لیے درخواست دینا چاہتا ہوں۔ میں 9 سال کا ہوں لیکن میرا خیال ہے کہ میں اس ملازمت کے لیے موزوں ہوں۔ اس کی←  مزید پڑھیے

ولی اللہی نعرہ فک کل نظام۔۔۔ملک گوہر اقبال خان رما خیل

اے بادشاہوں۔ ملاء اعلیٰ کی مرضی اس زمانے میں اس امر پر مستقر ہوچکی ہے کہ تمام تلواریں کھینچ لو اور اس وقت تک نیام میں داخل نہ کرو جب تک مسلم، مشرک سے بلکلیہ جدا نہ ہو جائے۔ اور←  مزید پڑھیے

دی رائزنگ آف شکاگو۔۔۔۔ملک گوہر اقبال خان رما خیل

جب مون سون کی بارشیں شروع ہوتی ہیں تو ہوا کے دوش پر رقص سحاب ہوتا ہے۔ پھوار کا ہلکا سا نقاب حسینہ ء   فطرت کے چہرے پر آویزاں ہوتا ہے۔ ہر طرف سبزہ لہراتا ہے، پھول پتیاں بارش←  مزید پڑھیے

زمانے کے فراعنہ فیصلہ صادر کر چکے ہیں۔۔۔۔ملک گوہر اقبال خان رما خیل

کہتے ہیں ایک بادشاہ نے دس جنگلی کتے پالے ہوئے تھے۔ وزراء میں سے جب بھی کوئی وزیر غلطی کرتا بادشاہ اسے ان کتوں کے آگے ڈال دیتا اور کتے اس کی بوٹیاں نوچ نوچ کر اسے مار دیتے۔ ایک←  مزید پڑھیے

دی گاڈ آف مینجمنٹ۔۔۔۔ملک گوہر اقبال خان رما خیل

آج سے تقریباً 125 سال پہلے جاپان کے شہر” واکایاما” کے ایک لینڈ لارڈ کے گھر ایک بچہ پیدا ہوا جس کا نام” کنوسکے” رکھا گیا۔ اس بچے کا باپ لوکل اسمبلی کا ممبر بھی تھا اور ایک عرصے سے←  مزید پڑھیے

تحریک پاکستان میں حضرت تھانوی کا کردار۔۔۔۔ملک گوہر اقبال خان رما خیل

میاں شبیرعلی ! ہوا کا رخ بتا رہا ہے کہ لیگ والے کامیاب ہوجائیں گے اور بھائی جو سلطنت ملے گی وہ انہی لوگوں کو ملے گی جن کو آج سب فاسق و فاجر کہتے ہیں مولویوں کو تو ملنے←  مزید پڑھیے

یارو مجھے معاف رکھو ،میں نشے میں ہوں۔۔۔ملک گوہر اقبال خان رما خیل

کہتے ہیں ایک شیر ،  بھیڑیا اور ایک لومڑی دوست بن گئے اور شکار کے لیے نکلے۔ انہوں نے گدھے، ہرن اور خرگوش کا شکار کیا۔ شیر نے بھیڑئیے سے کہا کہ شکار کی تقسیم تو کردے۔ اس پر بھیڑیے←  مزید پڑھیے

مجدد الف ثانی شیخ احمد سرہندی ۔۔۔۔ملک گوہر اقبال خان رما خیل

جس وقت تاجدارِ ہندوستان شہنشاہ جلال الدین محمد اکبر دنیا میں امن و آشتی کا نعرہ لگائے ہوئے ایک مشترک دین کی تلقین کر رہا تھا۔ اور آسمان آئین و دانش کے تارے ابو الفضل، فیضی، بیربل، راجہ ٹوڈرمل اور←  مزید پڑھیے

کچھ بھی ہو سکتا ہے۔۔۔۔ملک گوہر اقبال خان رما خیل

انہوں نے جب رسی کاٹی تو چند لمحے بعد ایک آدمی ایسی کرسی پر بیٹھا ہوا  پایا جسے غباروں کے خوشے سے باندھا گیا تھا، آسمان میں اڑتا ہوا بادلوں کے بیچ میں نظر آیا۔ یہ بات بظاہر تو  پریوں←  مزید پڑھیے

بروقت صحیح فیصلے۔۔۔۔ملک گوہر اقبال خان رما خیل

15 جنوری 2009 کو امریکی ائیرویز کی فلائٹ 1549 معمول کے مطابق لاگارڈیا ائیرپورٹ نیویارک سے شارلٹ ڈگلس ائیرپورٹ شمالی کیرولائنا اڑنے کے لیے تیار تھا۔ ائیربس A 320 کا کپتان 57سالہ ” چالسی سولن برگر” عرف” سولی” ایوی ایشن←  مزید پڑھیے

دارالعلوم دیوبند کیسے بنا۔۔۔ملک گوہر اقبال رما خیل

ہماری تعلیم کا مقصد ایسے نوجوان تیار کرنا ہے جو رنگ و نسل کے لحاظ سے ہندوستانی ہوں  لیکن دل و دماغ کے لحاظ سے اسلامی ۔ جن میں اسلامی تہذیب و تمدن کے جذبات بیدار ہوں اور دین و←  مزید پڑھیے

نظریہ پاکستان اور پی ٹی ایم۔۔۔۔ملک گوہر اقبال رما خیل

امریکی اور برطانوی اعلیٰ افسران کے ایک اجتماع میں یہ سوال پوچھا گیا کہ نظریہ پاکستان کا بانی کون ہے؟ اجتماع میں موجود مسلمانوں کے ایک لیڈر نے جواب دیا مسلمان! وہ پوچھنے لگے کیسے؟ انہوں نے فرمایا کہ جونہی←  مزید پڑھیے

شیخ الاسلام ابن تیمیہ۔۔۔ملک گوہر اقبال خان رما خیل

جماعت صحابہ وتابعین نے دین اسلام کو اس کی اصل صورت میں قائم رکھنے کی مکمل پاسداری کی تھی ۔ لیکن جو جو صحابہ، تابعین اور آئمہ مجتہدین کا زمانہ گزرتا چلا گیا تو اس کے ساتھ ساتھ اسلام بھی←  مزید پڑھیے

ہم کچھ بھی حاصل نہیں کر سکے۔۔۔۔۔ملک گوہر اقبال خان رما خیل

کہتے ہیں ایک مسافر سخت گرمی میں ایک جھونپڑی میں جاپہنچا جس پر ناریل کے درخت کا سایہ تھا۔ جھونپڑی والے میزبان نے مسافر کو شراب، دودھ اور حلوہ نہایت ہی عمدہ برتنوں میں پیش کیا۔ مسافر نے حیرت بھرے←  مزید پڑھیے

کیونکہ آپ اس کے اہل نہیں ہیں ۔۔۔۔ملک گوہر اقبال خان رما خیل

شام کے وقت بادشاہ کے شہر میں آنے کا اعلان کیا گیا۔ آگے آگے فوجی بینڈ دھنیں بجاتا چل رہا تھا اردگرد کئی محافظ تھے جن کے درمیان میں بادشاہ سلامت چل رہے تھے۔ بادشاہ کو اس حال میں دیکھ←  مزید پڑھیے

چائے والا اور ڈگری والا۔۔۔ملک گوہر اقبال رما خیل

اس منحوس دن سے جب مسلمانوں نے ہندوستان میں قدم رکھا ہے آج تک ہندو قوم ان کے خلاف بہادری سے جنگ لڑ رہی ہے۔ قومیت کا احساس جاگ رہا ہے۔ ہندوستان ہندوؤں کی سرزمین ہے اور اس میں صرف←  مزید پڑھیے

اور سمرقند دوبارہ فتح ہوگیا۔۔۔۔ملک گوہر اقبال خان رما خیل

صبح سے دوپہر تک فرائض سر انجام دینے کے بعد جب وہ قیلولہ کرنے کے لیے لیٹنا ہی چاہتا تھا تو نوجوان فرزند عبد الملک نے آکر عرض کیا کہ اگر آپ سو گئے تو مظلوموں کی داد رسی کون←  مزید پڑھیے

اپنے اندر چھپے اس ٹیلنٹ کو ڈھونڈیں۔۔۔۔ملک گوہر اقبال خان رما خیل

ایک دن ڈاکٹر میرے پاس آکر کہنے لگا ” محترمہ” میں نے سنا ہے کہ آپ ایک آرٹسٹ بننا چاہتی تھیں لیکن آپ ایک ہاؤس وائف بن گئیں۔ آپ کے لیے انتہائی بری خبر یہ ہے کہ اب آپ اس←  مزید پڑھیے

دربار اکبری اور دربار نیازی۔۔۔۔۔ملک گوہر اقبال خان رما خیل

دین الٰہی میں آفتاب کی عبادت دن میں چار وقت لازمی طور پر کی جاتی تھی۔ جس میں ایک ہزار سورج کے ہندی ناموں کو وظیفہ بنا کر صرف عبادت ہی نہیں کی جاتی بلکہ ربوبیت میں بھی اس کو←  مزید پڑھیے

انسان امن نہیں چاہتا ۔۔۔ملک گوہر اقبال خان رما خیل

السلام علیکم! سلامتی ہو آپ پر اور سلامتی ہو ہم پر۔ جنابِ سپیکر 15 مارچ کا دن اب ہمیشہ کے لیے ہماری مجموعی یادوں میں نقش رہے گا۔ جمعہ کی  ایک پرسکون دوپہر کو ایک شخص نے ایک پرامن عبادت←  مزید پڑھیے