ہلدی:فائدے اور نقصانات۔۔۔۔داود ظفر ندیم

بہت سے لوگ کسی غذا کے بارے تعریفوں کے پل باندھتے ہیں تو اس کے منفی پہلو نہیں بتلاتے اس کی ایک مثال ہلدی کا استعمال ہے ہلدی کے استعمال میں چند احتیاطی تدابیر اختیار کرنے کی ضرورت ہے
۔ دل کے مریض اور جن کا خون بہت پتلا ہو ان کو مسلسل ہلدی استعمال نہیں کرنی چاہئے یا اپنے معالج کو اس بارے میں ضرور آگاہ کرنا چاہیے۔

نقصانات/احتیاط

ہلدی ایک ایسا مسالہ ہے جو سبزیوں کے ذائقہ اور رنگ کو بڑھانے کے لئے استعمال کیا جاتا ہے ۔اس کے علاوہ ہلدی میں کئی قسم کی  اینٹی بیکٹیریل خصوصیات ہیں، جو صحت کے لئے فائدہ مند ہیں، لیکن تمام لوگوں کے لئے ہلدی فائدہ مند نہیں ہے کیونکہ اسے ہضم کرنا تھوڑا مشکل ہوتا ہے۔ آیئے جانتے ہیں کہ کون لوگ ہلدی کے زیادہ استعمال سے متاثر ہوسکتے ہیں۔

کڈنی کا مسئلہ !
گردے کے مسئلے کے لئے ہلدی زہر بھی ہے۔ گردوں سے متعلقہ مسائل کے ساتھ لوگ کم ہلکی  غذا کھاتے ہیں کیونکہ آکزیلیٹس ان میں موجود ہیں جو گردے کو نقصان پہنچاتے ہیں۔

سرجری ہونے پر!
حال ہی میں کرائی ہوئی سرجری سے تعلق رکھنے والے افراد کے لئے ہلدی اچھی  نہیں ہے۔ چونکہ یہ خون پتلا کرتی ہے، اس لئے ، ہلدی کی مقدار کو کم سے کم لیں ۔ تاکہ آپ کی سرجری کا زخم جلد ہی بھر سکے۔ اور آپ پہلے کی طرح ہی صحت مند ہوسکیں۔

خون کی کمی!
جسم میں آئرن کی کمی سے خون کم ہونے لگتا ہے، جو بعد میں اینیمیا کی شکل اختیار کر لیتا ہے۔ بدن میں آئرن کی کھپت بڑھ جاتی ہے ، جس سے جسم میں خون کی کمی ہو جاتی ہے اور اینیمیا کا مریض ہو جاتا ہے۔ اگر آپ پتلے ہوتے ہیں اور آپ کو ہر وقت کمزوری ہے تو پھر ہلکا پھلکا انتباہ آپ کے لئے زہر ثابت ہوسکتا ہے۔

ہاضمہ !
کھانے کو ہضم کرنے کے لئے، ہلدی کبھی بھی اس طرح سے استعمال نہیں کی جاتی ہے، اور کھانے کے فورًا بعد، ہلدی دودھ نہ پئیں ۔ ہلدی میں موجود کرکیومین گیس اور اسیڈیٹی کا مسئلہ پیدا کرتا ہے۔ اس طرح کے معاملات میں، جن کا ہاضمہ کمزور ہے وہ اسے نہیں کھاتے۔

پتھری کا مسئلہ!
اس کے زیادہ استعمال کی وجہ سے بلیڈر کے بہت سے مسائل ہیں۔ اس کے علاوہ، ہلدی میں موجود آکسیجن گردوں میں پتھر پیدا کرتا ہے۔ لہذا اگر آپ پہلے ہی پتھری کے مسائل سے جوجھ رہے ہوں یا آپ کو یہ مسئلہ پہلے سے ہی ہے، تو آپ ہلدی کا استعمال کم کردیں۔

حیض کا مسئلہ!
حیض کے دوران ہلدی کا استعمال کم کیا جانا چاہیے کیونکہ خون پتلاہوتا ہے ، جس سے دوران حیض زیادہ خون بہہ جانے کا خدشہ ہے۔ اس لئے حیض کے دنوں میں ہلدی سے بالکل ہی دوری بنا کر رہیں ۔ تاکہ آپ کو بہت  زیادہ  پریشانی کا سامنا نہ کرنا پڑے ۔

Avatar
دائود ظفر ندیم
مجھے لکھنے پڑھنے کا شوق نہیں بلکہ میری زندگی لکھنے پڑھنے سے وابستہ ہے

بذریعہ فیس بک تبصرہ تحریر کریں

براہ راست تبصرہ تحریر کریں۔

Your email address will not be published. Required fields are marked *