جائیداد۔۔۔۔اسامہ ریاض

آج بڑے خوش لگ رہے ہو حمید

خیریت تو ہے نا ۔ ہاں ہاں۔۔

یہ لو پہلے میٹھائی کھاؤ  پھر بتاتا ہوں۔

بڑے بھائی اور بھابی کا تو تمہیں پتا ہی ہے، کمبخت کہیں کے۔

ساری جائیدار اپنے نام کروانا چاہتے تھے۔

لیکن میں نے بھی اُن پر کیس کر دیا۔۔۔۔

آج فیصلہ آیا ہے ۔

کیا فیصلہ آیا ہے پھر ؟؟؟

فیصلہ میرے حق میں آیا۔ آدھی جائیدار اب میری ہے۔

میں نے اُن دونوں کو محلے اور خاندان میں بہت ذلیل کروایا ہے۔

منہ دیکھانے کے قابل نہیں چھوڑا۔

اُن کی بیٹی کے سسرال بھی گیا تھا میں۔۔

وہاں کیوں گئے تم حمید میاں ؟

اُس کا رشتہ تڑوانے۔

وہاں بھی خوب ذلیل کروایا انہیں میں نے۔

اور اب تو اپنے حصہ سے بھی دست بردار ہو چکے ہیں۔

واہ جی واہ حمید میاں۔ یہ تو بڑی خوشی کی بات ہے۔

پچیس سال بعد ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

حمید صاحب کیا ہوا۔ اتنی جلدی میں کہاں جا رہے ہیں ؟

کیا بتاؤ ں رشید۔۔۔میری تو زندگی عذاب کر ڈالی ہے اِس جائیداد نے

کیوں ایسا بھی کیا ہو گیا حمید۔۔

چھوٹے بیٹے نے جائیداد کے پیچھے بڑے بھائی کو گولی مار دی ہے۔

وہ ابھی ہسپتال ہے۔ اُسے دیکھنے  جا رہا ہوں۔

بذریعہ فیس بک تبصرہ تحریر کریں

براہ راست تبصرہ تحریر کریں۔

Your email address will not be published. Required fields are marked *