امریکہ میں فوجی بغاوت کا خدشہ

واشنگٹن: امریکہ میں ایک اور فوجی بغاوت کا خدشہ سامنے آ گیا۔

غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کے مطابق امریکہ کے 3 ریٹائرڈ جرنیلوں نے فوجی بغاوت کا خدشہ ظاہر کرتے ہوئے کہا ہے کہ اگر 2024 کے انتخابی نتائج کو فوج کے بعض ذمہ داران نے قبول نہیں کیا جو ٹرمپ جیسے شخصیت کو پسند کرتے ہیں تو امریکہ میں خانہ جنگی شروع ہو سکتی ہے۔

FaceLore Pakistan Social Media Site
پاکستان کی بہترین سوشل میڈیا سائٹ: فیس لور www.facelore.com

امریکہ کے سابق آرمی میجر جنرل پال ایڈن، سابق بریگیڈیئر جنرل اسٹیون اینڈرسن اور سابق آرمی میجر جنرل انتونیو ٹیگوبا نے کیا۔ ان ریٹائرڈ جرنیلوں نے کہا کہ اگر 2024 کے انتخابات کے بعد بغاوت کی ایک اور کوشش کی گئی تو امریکہ کی تقسیم فوج ایک نئی خانہ جنگی کو ہوا دے سکتی ہے۔

انہوں نے کہا کہ 6 جنوری کے حملوں میں بھی 10 میں سے ایک سے زائد افراد کا فوجی سروس ریکارڈ پایا گیا تھا۔

جرنیلوں نے کہا کہ جیسے جیسے ہم امریکی دارالحکومت میں بغاوت کی پہلی برسی کے قریب پہنچ رہے ہیں، 2024 کے صدارتی انتخابات کے بعد اور ہماری فوج کے اندر مہلک انتشار کے امکانات کے بارے میں ہماری فکر مندی بڑھتی جا رہی ہے۔

Advertisements
julia rana solicitors

انہوں نے کہا کہ اگلی بار بغاوت کے کامیاب ہونے کے بارے میں سوچ کر ہم اپنی ہڈیوں میں سنسناہٹ محسوس کر رہے ہیں۔

  • julia rana solicitors london
  • julia rana solicitors
  • merkit.pk
  • FaceLore Pakistan Social Media Site
    پاکستان کی بہترین سوشل میڈیا سائٹ: فیس لور www.facelore.com

خبریں
مکالمہ پر لگنے والی خبریں دیگر زرائع سے لی جاتی ہیں اور مکمل غیرجانبداری سے شائع کی جاتی ہیں۔ کسی خبر کی غلطی کی نشاندہی فورا ایڈیٹر سے کیجئے

بذریعہ فیس بک تبصرہ تحریر کریں

Leave a Reply