ایم بلال ایم کی تحاریر
Avatar
ایم بلال ایم
ایم بلال ایم ان لوگوں میں سے ہیں جنہوں نے اردو بلاگنگ کی بنیاد رکھی۔ آپ بیک وقت اک آئی ٹی ماہر، فوٹوگرافر، سیاح، کاروباری، کاشتکار، بلاگر اور ویب ماسٹر ہیں۔ آپ کا بنایا ہوا اردو سافٹ وئیر(پاک اردو انسٹالر) اک تحفہ ثابت ہوا۔ مکالمہ کی موجودہ سائیٹ بھی بلال نے بنائی ہے۔ www.mBILALm.com

ہم ہوں نہ ہوں، گردش میں تارے رہیں گے سدا۔۔ایم بلال ایم

کچھ دن پہلے شام کے پہر طوفان آیا، بجلی بند ہو گئی، کئی درخت گر گئے۔ ہمارے گھر میں لگا سات آٹھ سال پرانا امرود کا درخت بھی شہید ہو گیا۔ کہنے والوں کے لئے اک درخت ہی تو تھا←  مزید پڑھیے

اک جادوئی گاڑی کی کہانی۔۔ایم بلال ایم

کیا آپ نے امریکی لکھاری اور کوہ پیما ”جان کراکائر“ کی کتاب ”اِن ٹو دی وائلڈ“ (Into the Wild) پڑھی ہے؟ اجی وہی سچی کہانی پر لکھی کتاب کہ جس پر ہالی ووڈ نے فلم بھی بنائی۔ وہ فلم کہ←  مزید پڑھیے

دن دیہاڑے رات کا مشاہدہ اور اس کی فوٹوگرافی۔۔ایم بلال ایم

یہ ہمارے بچپن اور سکول کے زمانے کی بات ہے۔ وہ 24 اکتوبر 1995ء کی روشن صبح تھی، لیکن جب ہم گاؤں سے شہر کی طرف سائیکلوں پر سکول جا رہے تھے تو اس صبح سورج کی روشنی پہلے جیسی←  مزید پڑھیے

چاندنی میں نہاتا ہمالیہ۔۔ایم بلال ایم

پنجاب کا میدانی علاقہ جلالپورجٹاں(گجرات)… اور یہاں پر دریائے چناب کے کنارے… کناروں سے دور لائن آف کنٹرول… اور اس سے پرے مقبوضہ جموں کشمیر… جہاں ہمالیہ کا ذیلی سلسلہ پیر پنجال اور اس کے برف پوش پہاڑ۔۔۔ مجھے نہیں←  مزید پڑھیے

فوٹو گرافی اور کیمرے کو درپیش سیاپے۔۔ایم بلال ایم

جوان لڑکیاں اپنے خاندان والوں کے ساتھ ایک تاریخی مقام کے پارک میں تفریح کے لئے آئی ہوئی تھیں۔ کچھ دور درختوں کی اوٹ میں لونڈے لپاڑے کیمرے کو ٹیلی فوٹو لینز لگائے بیٹھے تھے۔ وہ اپنے تئیں چھپ چھپ←  مزید پڑھیے

ارطغرل غازی ۔ترک ڈرامہ ، پہلا سیزن۔۔ایم بلال ایم

”کیا ڈرامہ لگا رکھا ہے؟“ امید ہے کہ اس فقرے کا مطلب سمجھتے ہوں گے۔ وہ کیا ہے کہ فلمیں یا ڈرامے مکمل حقیقت نہیں ہوتے۔ ڈرامہ تو پھر ڈرامہ ہی ہوتا ہے۔ بے شک کسی تاریخی شخصیت وغیرہ پر←  مزید پڑھیے

پنجاب سے نظر آتا ہمالیہ آپ کی محبت کے نام۔۔ایم بلال ایم

جب سے باقاعدہ فوٹوگرافی شروع کی ہے، ان ساڑھے چار پانچ سال میں میری بنائی قدرتی مناظر کی کئی تصاویر اپنے اپنے لحاظ سے سراہی گئیں اور آپ لوگوں کی بے پناہ محبتوں نے انہیں پذیرائی بخشی۔ یوں تو ان←  مزید پڑھیے

ذلت کی زندگی سے کرونا بھلا۔۔ایم بلال ایم

اس تحریر سے ”باوقار“ لوگ دور رہیں اور پیشگی معذرت قبول کریں۔۔۔ کیونکہ کل میں نے جو دیکھا، اُس کے بعد یہ کہنے پر مجبور ہوں کہ کورونا منظور ہے مگر غریب دیہاتیوں سے رکھا رویہ منظور نہیں۔ تم لاک←  مزید پڑھیے

افسانہ افسانی۔۔ایم بلال ایم

ایک دفعہ کا ذکر ہے کہ بلاگستان ”افسانہ افسانی“ ہوا پڑا تھا۔ کئی بلاگرز افسانے لکھ رہے تھے۔ ایسی صورتحال میں ہم جاتے تو کدھر جاتے؟ ”سانحے در سانحے“ کے بعد بھی ہمارا قلم حرکت میں نہ آئے، بھلا یہ←  مزید پڑھیے

مجھے اپنا رانجھا راضی کرنا ہے۔۔ایم بلال ایم

پہاڑوں پر شام اُتر رہی تھی مگر ہم پہاڑ چڑھ رہے تھے۔ اُس دن کی آخری چڑھائی ختم ہونے کو تھی اور میں دن بھر کی تھکاوٹ سے بے حال ہوا پڑا تھا۔ ایک جگہ سانس لینے رُکا۔ نظر اٹھائی←  مزید پڑھیے

پھل موسم دا تے گل ویلے دی۔۔ایم بلال ایم

پچھلی رات بالائی پہاڑوں پر برف پڑی تھی۔ چاروں اور خوبصورت نظارہ تھا۔ ہم دریائے نین سکھ(کنہار) کنارے بیٹھے تھے۔ ہمارے پاس آم تھے اور عام تھے۔ بابا غالب کی روح یقیناً خوش ہوئی ہو گی۔۔۔ یہ ایک دہائی پہلے←  مزید پڑھیے

کرتار پور کی یاترا۔۔ایم بلال ایم

اب وہاں بہت کچھ بدل گیا ہے۔ فصلوں کے بیچ و بیچ باباجی کا ڈیرہ ایک بڑے کمپلیکس میں تبدیل ہو چکا ہے۔ پاک و ہند سے سکھ برادری کے ساتھ ساتھ مسلمان یاتری(سیاح) بھی جوق در جوق وہاں پہنچ←  مزید پڑھیے

سوچ پر ہتھوڑے چلاتے، کوڑے برساتے افسانے “سوچ زار”۔۔۔۔۔۔ایم بلال ایم

محبت کے ساتھ، خلوص کے ساتھ، جناب فلاں صاحب کے لئے، ٹھپ دستخط۔۔۔ کچھ یوں مجھ جیسے عام قارئین کے لئے اکثر بڑے لکھاری اپنی کتاب دستخط کرتے ہیں۔ ویسے اس میں کوئی مضائقے والی بات بھی نہیں۔ کیونکہ کتاب←  مزید پڑھیے

اور وہ اپنی ہی سانسوں میں جل گئے۔۔ایم بلال ایم

حرارت زندگی ہے مگر حرارت کی بے احتیاطی موت ہے۔ بے شک ہم سیانے نہ سہی، مگر سیانوں کے پاس بیٹھتے رہتے ہیں۔ مگر ہوتا کیا ہے کہ جب سیانے احتیاطی تدابیر بتائیں تو عموماً لوگ ایک کان سے سن←  مزید پڑھیے

جب ٹلہ جوگیاں پر مور ناچتے تھے۔۔ایم بلال ایم

کچھ پرانی یادیں، کچھ پرانی باتیں وہ بھی ایک جوگی تھا کہ جو چرخے کی کوک سن کر پہاڑ سے اتر آیا اور یہ بھی سیروتفریح کا شوقین ایک جوگی فوجی افسر تھا کہ جو ٹلہ سے نیچے فائرنگ رینج←  مزید پڑھیے

اے سالِ رفتہ 2019ء۔۔ایم بلال ایم

اے سالِ رفتہ مجھے تجھ سے کوئی گلہ نہیں۔ مگر جب تک سانسیں ہیں، میں تمہیں کبھی نہ بھولوں گا۔ تیری وہ اک شام بھی نہ بھولوں گا کہ جب میری امی جان اس دنیا سے چلی گئیں اور میں۔۔۔←  مزید پڑھیے

ہڑپہ سے ہری یوپیہ۔۔ایم بلال ایم

ویران کھنڈر اور پرانی عمارتیں دیکھنا مجھے پسند ہیں۔ مٹ چکی تہذیبوں کے آثار کی سیاحت کا شوق رکھتا ہوں۔ موہنجو دڑو مجھے کھینچتا ہے۔ مگر پتہ نہیں کیوں، کبھی ہڑپہ نے اس حد متاثر نہ کیا کہ اسے دیکھنے←  مزید پڑھیے

ٹلہ جوگیاں پر جوگی فوٹوگرافی۔۔ایم بلال ایم

ان جوگیوں کی محبت، عزت اور حوصلہ افزائی نے ایک دفعہ تو منظرباز کو تقریباً رُلا ہی دیا تھا۔ آخر ہوا کیا تھا؟ الجواب: ہوا کچھ یوں کہ جوگی ٹلہ جوگیاں کو پل بھر آباد کرنے ایک مرتبہ پھر۔۔۔ جی←  مزید پڑھیے

زندگی میں رنگ بھرنے کے لئے – پہلی ویڈیو۔۔۔۔۔۔ایم بلال ایم

ہمارے گلگت بلتستان کے سفر 2019ء پر بنی ویڈیو سیریز کا پہلا حصہ شائع ہو چکا ہے۔ اس ویڈیو لاگ(ولاگ) کی پہلی قسط میں شامل ہے، ہمارا وادی استور کا سفر، استور میں ہماری لڑائی، یاروں کی دل لگیاں، راما←  مزید پڑھیے

زندگی میں رنگ بھرنے کے لئے بھورے ریچھ کی تلاش۔۔۔ایم بلال ایم

دوست احباب بار بار مشورہ دیتے رہے مگر ازلی سستی آڑے آتی رہی۔ آخرکار وقت کا تقاضا ایسا ہوا بلکہ سچ پوچھیں تو ”یہ عشق نچاوے ہے… زنجیریں پہناوے ہے“۔۔۔ اور پھر حالیہ سفر پر حال یہ تھا کہ حسبِ←  مزید پڑھیے