مکالمہ کی تیسری سالگرہ مبارک۔۔۔محمد اسد شاہ

SHOPPING

اظہار رائے انسان کے بنیادی حقوق میں شامل ہے – ہر انسان کو یہ حق حاصل ہے کہ وہ کسی معاملے میں اپنی دیانت داری کے ساتھ جو رائے رکھتا ہے ، اس کا اظہار کر سکے – بلکہ جانوروں اور پرندوں کو بھی بولنے اور آواز نکالنے سے روکا نہیں جا سکتا –
لیکن بدقسمتی ہے کہ ہمارے معاشرے میں اظہار رائے پر غیر مرئی قدغنیں ہیں – میڈیا کی آزادی کے اس ترقی یافتہ دور میں بھی ، ہمارے اخبارات اور ٹی وی چینلز کو اس بات کی اجازت نہیں کہ وہ اس شخص یا اس عورت کے جلسے ، ریلی یا پریس کانفرنس کی کوریج کر سکیں ، جو حکمران کی نظر میں ناپسندیدہ ہے –
بظاہر کوئی حکم نامہ جاری نہیں کیا گیا – لیکن اخبارات اور چینلز کے مالکان سے لے کر نامہ نگار تک ، سب کو معلوم ہے کہ حکمران کون ہے اس کو کون پسند نہیں ہے – اور اگر اس کی تصویر یا نام غلطی سے بھی نشر ہو گیا ، تو اس کے نتائج کیا ہوں گے –
ایسے میں مخلص مفکرین اور آزاد منش لکھاریوں کے ہاں گھٹن کا احساس شدید ہے – مذہبی اور سیاسی تقسیم ایسی ہے کہ آپ کی رائے کی مخالفت دلیل کی بجائے گالی اور تشدد سے ہونے کا خطرہ رہتا ہے –
ایسے میں محترم انعام رانا ، محترمہ اسما مغل اور ان کی ٹیم صد ہزار بار تحسین کے لائق ہیں کہ انھوں نے “مکالمہ” کے نام سے ایک پلیٹ فارم مہیا کر دیا ، جہاں دنیا جہان کے ہر موضوع پر نہ صرف لکھنے ، بلکہ کھل کر لکھنے کی آزادی میسر ہے- یہاں مذہب ، سیاست ، ادب ، معاشرت، معیشت ، غرض ہر میدان کے بلند پایہ لکھاری موجود ہیں-
اللّٰہ کے کرم سے ، مکالمہ ٹیم کی محنت ، اور یہاں میسر آزادی اظہار اور مقبولیت نے آج “مکالمہ” کو اردو زبان کے ایک طاقت ور نشریاتی ادارے کی حیثیت دلا رکھی ہے –
صرف تین سال کے مختصر دورانیے میں اس مقام تک پہنچنے میں مکالمہ کی ٹیم کو کتنی محنت کرنا پڑی ہو گی ، اس کا اندازہ لگانا مشکل ہے –
میں دل کی اتھاہ گہرائیوں سے جناب انعام رانا ، محترمہ اسما مغل اور ان کی ٹیم کے تمام ساتھیوں ، اور “مکالمہ” کے تمام لکھنے والوں کو مبارک باد پیش کرتا ہوں – اللّٰہ رب العزت ان سب کو ہمیشہ اپنی حفظ و امان اور عافیت و سلامتی میں رکھے – آمین !

SHOPPING

محمد اسد شاہ
محمد اسد شاہ
محمد اسد شاہ کالم نگاری اور تعلیم و تدریس سے وابستہ ہیں - پاکستانی سیاست ، انگریزی و اردو ادب ، تقابل ادیان اور سماجی مسائل ان کے موضوعات ہیں

بذریعہ فیس بک تبصرہ تحریر کریں

براہ راست تبصرہ تحریر کریں۔

Your email address will not be published. Required fields are marked *