ہم پرورش لوح و قلم کرتے رہیں گے۔۔۔سلمان نسیم شاد

مکالمہ کی تیسری سالگرہ پر خصوصی پیغام

موجودہ دور میں جب ملک پاکستان میں غیر اعلانیہ مارشل لاء نافذ ہے۔ صحافت ایک بار پھر پابند سلاسل ہے۔ سچ لکھنے اور بولنے پہ پابندیاں اور پہرے لگادیئے گئے ہیں۔ پاکستان کا میڈیا صرف ایک مخصوص ایجنڈے پر کام کررہا ہے۔ جہاں میڈیا ہاوسیز اور اخبارات مالکان مصلحت پسندی کا شکار ہیں۔ وہاں اگر سچ بولا اور لکھا جائے تو اول تو اس کی اشاعت ہی ممکن نہیں ہوتی اگر اشاعت ہو بھی جائے تو ایڈیٹر صاحبان ایک لمبی قینچی لئے بیٹھے ہوتے ہیں جس میں وہ اپنی قینچی چلادیتے ہیں۔ ایسے وقت میں “مکالمہ” آزادی اظہار رائے کا بہترین پلیٹ فارم ہے۔ جہاں سچ بولنے اور لکھنے کی ہر طرح کی آزادی ہے۔

مکالمہ نہ صرف سچ بولتا اور سنتا ہے وہیں وہ نیے لکھنے والوں کی بھرپور حوصلہ افزائی کررہا ہے۔ آج مکالمہ نے اپنے اس سفر کے تین سال پورے کرلئے ہیں۔ ہم دل کی گہرائیوں سے مکالمہ کی پوری ٹیم چیف ایڈیٹر انعام رانا اور ایڈیٹر اسما مغل سمیت “مکالمہ” کی پوری ٹیم کو مبارک باد پیش کرتے ہیں۔ آپ کی شب و روز کی انتھک محنت اور کاوشوں سے آج مکالمہ نے پورے تین سال مکمل کرلئے۔ اور ہماری دعا ہے مکالمہ اس ہی طرح آزادی اظہار رائے کا ترجمان بن کر صحافتی اقدار کی ترجمانی کرتا رہے۔

ہم پرورش لوح قلم کرتے رہیں گے
جو دل پر گزرتی ہے رقم کرتے رہیں گے

سلمان نسیم شاد
سلمان نسیم شاد
سلمان نسیم شاد کراچی فری لانس جرنلٹس رائٹر و بلاگر بائیں بازو کی سوچ اور ترقی پسند خیالات رکھنے والی شخصیت ہیں ایک علمی و ادبی گھرانے سے وابستگی رکھتے ہیں

بذریعہ فیس بک تبصرہ تحریر کریں

براہ راست تبصرہ تحریر کریں۔

Your email address will not be published. Required fields are marked *