سو لفظوں کی کہانی ۔ ماں

پھل فروش کے پاس لمبی سی گاڑی آکر رکی شیشہ نیچے ہوا ۔بھائی سیب کیسےہیں۔؟
پھل فروش: دوسو روپے کلو
اچھا دو کلو دے دو۔۔
پھل فروش نے ڈال دیئے میڈم نے پانچ سو دیئے اور بولی ۔۔۔ کیپ دی چینج۔۔۔
اور یہ جا وہ جا ۔۔۔
پاس کھڑا بچہ اپنی ماں سے بولا ۔۔۔ماں سیب لے دو
ماں: بھائی ایک سیب دے دو۔۔۔
ماں نے دس روپے دیے۔۔۔
دس کا سیب نہیں آئے گا پھل فروش بولا۔۔۔
ماں: چلو چھوٹا سا ہی دے دو ۔۔۔
چھوٹا بھی نہیں آئےگا بی بی۔۔۔
ماں اچھا بھائی یہ گلا ہوا سیب ہی دے دو۔۔۔

مدثر ظفر
مدثر ظفر
فلیش فکشن رائٹر ، بلاگر

بذریعہ فیس بک تبصرہ تحریر کریں

براہ راست تبصرہ تحریر کریں۔

Your email address will not be published. Required fields are marked *