• صفحہ اول
  • /
  • خبریں
  • /
  • سعودی عرب میں آجر غیرملکی کارکن کو کہیں اور ملازم نہیں رکھ سکتا

سعودی عرب میں آجر غیرملکی کارکن کو کہیں اور ملازم نہیں رکھ سکتا

محکمہ پاسپورٹ نے کہا ہے کہ ’کوئی بھی آجر اپنے غیرملکی کارکنان کو کسی اور کے پاس ملازم رکھوائے گا تو ایک لاکھ ریال جرمانہ اور 6 ماہ تک قید کی سزا ہوگی۔

تفصیلات کے مطابق محکمہ پاسپورٹ نے کہا ہے کہ ’کوئی بھی آجر اپنے غیرملکی کارکنان کو کسی اور کے پاس ملازم نہیں رکھ سکتا۔ ایسا قانوناً جرم ہے۔کوئی بھی شخص اگر ایسا کرے گا اس پر ایک لاکھ ریال جرمانہ اور 6 ماہ تک قید کی سزا ہوگی۔محکمہ پاسپورٹ نے کہا ہے کہ ’علاوہ ازیں اسے 5 برس تک افرادی قوت کی درآمد سے محروم بھی کردیا جائے گا۔‘محکمہ پاسپورٹ نے اپیل کی ہے کہ اقامہ، محنت اور سرحدی سلامتی قوانین کی خلاف ورزی کو رکوانے کے لیے مقامی شہری اور مقیم غیرملکی تعاون کریں۔

Advertisements
julia rana solicitors

’تعاون یہ ہے کہ جس کے علم میں اس قسم کی کوئی خلاف ورزی آئے وہ مکہ، ریاض اور الشرقیہ ریجنجز میں اس کی رپورٹ 911 اور مملکت کے دیگر علاقوں میں 999 پر رابطہ کرکے کردے۔

  • julia rana solicitors
  • julia rana solicitors london
  • merkit.pk

خبریں
مکالمہ پر لگنے والی خبریں دیگر زرائع سے لی جاتی ہیں اور مکمل غیرجانبداری سے شائع کی جاتی ہیں۔ کسی خبر کی غلطی کی نشاندہی فورا ایڈیٹر سے کیجئے

بذریعہ فیس بک تبصرہ تحریر کریں

Leave a Reply