سوڈان : مارشل لاء کیخلاف احتجاج میں 3افراد ہلاک

سوڈان میں مارشل لا کے خلاف اور جمہوریت کےحق میں ہزاروں افراد سڑکوں پر نکل آئے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق فورسز نے مظاہرین پر فائرنگ کی جس میں 3 افراد ہلاک اور متعدد زخمی ہو گئے ہیں۔

julia rana solicitors london

دوسری جانب سوڈانی پولیس نے براہ راست اسلحے کے استعمال کی تردید کی اور ایک بیان میں کہا کہ گولی لگنے سے ایک پولیس اہلکار زخمی ہوا۔

جمہوریت کے حامی گروہوں نے ملک بھر میں احتجاجی مظاہروں کی کال دی تھی تاکہ معزول عبوری حکومت کی بحالی اور نظر بندی سینئیر سیاسی شخصیات کی رہائی کا مطالبہ کیا جا سکے۔

امریکہ اور اقوام متحدہ نے فوجی قیادت کو مظاہرین کے ساتھ سخت رویے رکھنے پر خبردار کیا ہےاور معاملات کو نرمی سے نمٹانےپر زور دیا ہے۔

عالمی برادری اور اقوام متحدہ نے سوڈان میں مارشل لا کو جمہوریت کی طرف پیش رفت میں رکاوٹ اور خطرہ قراردیا ہے۔

سوڈان کے طاقتور فوجی جنرل عبدالفتاح برہان نے دعویٰ کیا ہے کہ فوج کے قبضے کے باوجود جمہوریت کی منتقلی جاری رہے گی۔

واضح رہے کہ جمہوریت کی طرف منتقلی کےاس عمل کاآغاز سنہ 2019 میں طویل عرصے سے مسلط آمر عمر البشیر کی معزولی کے بعد ہوا تھا۔

اس کے بعد سے فوجی اور سویلین رہنماؤں نے ایک ناخوشگوار شراکت داری کے تحت حکومت کی ہے۔ جسے رواں ہفتے کے شروع میں مارشل لا نافذ کر کے ختم کر دیا گیا تھا۔

Advertisements
julia rana solicitors london

تاہم فوجی جنرل عبدالفتاح برہان کا کہنا ہے کہ وہ ملک میں جلد ایک ٹیکنو کریٹ حکومت قائم کریں گے۔ لیکن جمہوریت پسند جماعتیں جموہریت کی طرف پیش قدمی کو روکنے کی متحمل نہیں۔

  • julia rana solicitors london
  • merkit.pk
  • julia rana solicitors

خبریں
مکالمہ پر لگنے والی خبریں دیگر زرائع سے لی جاتی ہیں اور مکمل غیرجانبداری سے شائع کی جاتی ہیں۔ کسی خبر کی غلطی کی نشاندہی فورا ایڈیٹر سے کیجئے

بذریعہ فیس بک تبصرہ تحریر کریں

Leave a Reply