پوسٹ کارڈ نظمیں ۔۔ڈاکٹر ستیہ پال آنند

SHOPPING

زندہ درگور
اور قبرستان میں بیٹھے ہوئے
میت کے ساتھی لوگ
جن میں  پوپلے منہ کے بڑے بوڑھے
ضعیف العمر بیوہ عورتیں
بُدبُداتے، سر ہلاتے
اور رہ رہ کر سناتے
اُن کے قصے
جو کبھی زندہ تھے۔۔اور اب
اپنی قبروں میں بڑے آرام سے ہیں

اور یہ قصے سنانے کے عمل میں
ایسے لگتا ہے کہ جیسے
ان کا اپنا مشغلہ
درگور ہونے کے لیے
امیدواروں کی کییو میں
اپنے نمبر تک کھڑا ہونا ہے۔۔۔
اپنے نام کی آواز پڑنے تک۔

SHOPPING

(2)آخری سفر کا ساتھی
گاؤں کی کچی سڑک
کچھ ریتلی، کچھ بھربھری سی
اونٹ گاڑی” میں جُتا
اک اونٹ
منہ سے جھا گ کے گالے اڑاتا
بے دلی، آہستگی سے
اونٹ گاڑی کھنچتا
چابک کی چوٹوں سے فقط اک
جھرجھری لیتا ہوا
لیکن اسی رفتار میں باندھا ہوا سا
چل رہا ہے
اونٹ گاڑی کے تعلق سے
فقط دو جسم
زندہ جسم جو اس بے دلی سے
چلنے والے اونٹ کا ہے
اور مردہ جسم مادہ اونٹ کا
گاڑی میں رکھا
(مردہ ڈاچی کا، جو شاید اونٹ کے ساتھی رہی ہے)
کھال ا تروانے کی خاطر
دور ڈھویا جا رہا ہے!

SHOPPING

ستیہ پال آنند
ستیہ پال آنند
شاعر، مصنف اور دھرتی کا سچا بیٹا