نگارشات

یمن وار اور ورلڈکپ۔ بنت الہدیٰ۔

دن چڑھتے ہی سورج کی کرنوں میں دوڑ لگاتے ہوئے میدان میں فٹ بال کھیلتے بچے اپنی کاروائی میں مصروف تھے۔۔ یہ ننھے چیمپئن سخت گرمی میں بھی چہرے پر جھلملاتی ہوئی چمک دل میں معصومیت سمیٹے لبوں پر مسکان←  مزید پڑھیے

پانی کی اک گھریلو کہانی۔۔۔۔نسرین غوری

پہلا منظر: ہم نے پانی کا پائپ ڈائریکٹ لائن سے لگایا ہوا ہے اور فل اسپیڈ پانی سے گھر کا ٹوٹا پھوٹا اکھڑا ہوا فرش رگڑ رگڑ کر دھو رہے ہیں اور پورے گھر میں سیلاب آیا ہوا ہے۔ کھڑکی←  مزید پڑھیے

دعائے قنوت ، نرگسیت اور ہمارے سیاستدان ۔۔۔۔ اختر برکی

میں بہت مایوس   ہوں اور  پریشان ہوں ۔مجھے اس سیاسی نظام سے نفرت ہونے لگی  ہے ،مجھے اس پر بھی پریشانی ہونے لگی ہے کہ میں   کیوں اتنا خائف ہوا ہوں, تو چلیے آپ کو بتاتا ہوں کہ←  مزید پڑھیے

شاعروں سے معذرت کیساتھ۔۔۔ عارف خٹک

ایک دن پشتو چینل کے ایک دوست پروڈیوسر کا فون آیا کہ لالہ ہمارے چینل نے جنوبی اضلاع کے شعراء اور فوک گلوکاروں کیساتھ ایک نشست کا پلان بنایا ہے۔ جس میں مقامی شعر و شاعری اور لوک گیتوں کو←  مزید پڑھیے

سانحہ یہ ہے۔۔۔رابعہ احسن

عید ہو رمضان، شبرات، محرم مطلب کوئی بھی دکھ  یا خوشی کا تہوار ہو ہمارا اہم فریضہ سوشل میڈیا پر پوسٹس کا رش اور میسجز میں جمعہ بازار ل جاتا ہے سب کا دین، اسلام محض الفاظ کے کهوکهلے برتنوں←  مزید پڑھیے

عرفان خان کا خط اپنے مداحوں کے نام۔۔۔

میں بہت شرمندہ ہوا اور عرفان بھائی کی حالت کے بارے میں تجسس ظاہر کیا۔ انہوں نے کہا کہ ابھی لڑائی لمبی ہے۔ تب بھی یقین کرنے کو دل نہیں چاہا اور ایسا لگتا رہا کہ بس ابھی صحت یاب←  مزید پڑھیے

ملک کے فرسودہ سیاسی ڈھانچے میں ہلکی سی دڑار۔۔تنویر افضال

اگرچہ پاکستان تحریک انصاف 1996ء سے ملک کے سیاسی منظر نامے پر موجود ہے لیکن اسے صحیح معنوں میں عوامی پذیرائی 2011 ء میں ملنا شروع ہوئی اور پھر مئی 2013 کے عام انتخابات میں یہ ایک مؤثر سیاسی قوت←  مزید پڑھیے

لبرل نظام کیخلاف اپنے ہی ناظم کی سرکشی۔۔۔سجاد مرادی کلاردہ

امریکہ میں نئے صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے برسراقتدار آنے کے بعد اس ملک کا عالمی معاہدوں اور تنظیموں خاص طور پر اقوام متحدہ سے مربوط اداروں سے عجیب طرز عمل شروع ہوا ہے اور نئی امریکی حکومت نے عالمی معاہدوں←  مزید پڑھیے

بزبان ِ یوسفی۔۔۔۔گل نو خیز اختر

کل رات خواب میں کیا دیکھتا ہوں کہ اُردو مزاح کے شہسوارجناب مشتاق احمد یوسفی صاحب جنت کے دروازے میں سے داخل ہورہے ہیں۔ چہرے پر شرارتی سا تبسم ہے اورہمیشہ کی طرح بہترین تراش خراش والا کوٹ پینٹ زیب←  مزید پڑھیے

عمران خان آزاد ہیں بجواب محترم اُستاد آصف محمود۔۔۔سید شاہد عباس کاظمی

عمران خان کی خوش قسمتی ہے کہ وہ اس قوم کا ہیرو ہے۔ بے شک اس کے کریڈٹ پہ صرف ایک ورلڈ کپ 92 کی فتح ہے جو واضح جگمگا رہی ہے ۔ مگر اس کے اُس وقت کے ساتھی←  مزید پڑھیے

پھٹیچراور فیچر۔۔۔محمد ارسلان طارق

کچھ چیزیں صرف نام کی ہوتی ہیں اور کام کے اعتبار سے وہ نام سے کوسوں دور ہوتی ہیں۔ جیسے انصاف اتنا صاف نہیں ہوتا ہے جتنا نام سے ظاہر ہوتا ہے۔ انسانیت اتنی انسان میں نہیں ہوتی ہے جتنی←  مزید پڑھیے

چراغ تلے کا چراغ بجُھ گیا۔۔۔ بلبیر سنگھ

ہم گنواں بیٹھے اک انمول ہیرا جس کا فن تھا محض لبوں کو کھِلکھلانا چند ماہ قبل جب میری گیارہویں جماعت کا نصاب اپنے اختتام پر تھا۔تو ان کی کتاب “چراغ تلے”کا ایک انشائیہ “اور آنا گھر میں مرغیوں کا”پڑھا←  مزید پڑھیے

تندرستی ، دوا، دم اور ہمارے معالج۔۔۔ڈاکٹر شہباز منج

انسان کی کمزوری ہے کہ اسے جو نعمت میسر ہوتی ہے، اسے اہمیت ہی نہیں دیتا، اور سمجھتا ہے کہ گویا یہ تو اس کا استحقاق ہے۔ جب وہ نعمت چھنتی ہے، تو اس کی حقیقی قدر معلوم ہوتی ہے۔←  مزید پڑھیے

کتھا چار جنموں کی ۔۔۔ڈاکٹر ستیہ پال آنند/قسط34

لندن کے ان برسوں (1972-75)میں میرا تعلیمی، تدریسی اور کسی حد تک ادبی لین دین اپنے ساتھی اسکالرز سے ہی رہا جو انگریزی کے حوالے سے تھا۔ اردو کے احباب سے کبھی کبھی ہی ملاقات ہوئی۔ اور وہ بھی بر←  مزید پڑھیے

بلوچستان میں آئندہ حکومت کس کی ہوگی ۔ ۔ ؟ نادر زادہ

بلوچستان میں اگلی حکومت کس کی ہو گی ؟  یہ ایک  مشکل سوال ہےمگر ہر ایک کے ذہن میں یہی سوال گردش کررہا ہے خصوصاً سیاسی طبقہ تو ہر زاویے سے مشاہدہ کررہا ہے ،۔ واضح رہے کہ انتخابات کے نتائج←  مزید پڑھیے

اردو کے مجبور، لاعلم اور لاچار ناقدین۔۔۔احمد سہیل

پہلے بتا دوں کہ یہ تحریر دراصل بکھرے ہوئے خیالات ہیں لہذا ” انتشار متن” نظر آئے گا۔ کیونکہ یہ علمی یا تنقیدی مضمون نہیں ہے بلکہ دوستوں کی نشست میں ہونے والی گفتگو ہے اس لیئے اسے ہلکے ماحول←  مزید پڑھیے

آفس آفس کی کہانی۔۔۔روبینہ فیصل/قسط 1

ای میل تھی کہ ایک دن نوائے وقت میں آپ کے کالم پر اتفاقاً  نظر پڑی اور ہم نے اسے بہت دلچسپ پایا تب سے ہم نے باقاعدگی سے بدھ والے دن اخبار لینا شروع کر دیا ہے اور اب←  مزید پڑھیے

کیا عمران خان کو موقع ملنا چاہیے؟۔۔۔واجد منہاس/آخری حصہ

کیا عمران خان کو موقع ملنا چاہیے؟۔۔۔واجد منہاس/حصہ اول مختصر یہ کہ عمران خان تحریک انصاف کو ایک نئی پارٹی بنانے میں ناکام رہے۔ ایک ایسی پارٹی جس کے نظریے میں کوئی ابہام نہ ہوتا، جس کا بیانیہ بالکل واضح←  مزید پڑھیے

وادی گلگت کے ایک دلچسپ کردار سے ملاقات ۔۔۔سلمیٰ اعوان

پروردگار بہت دن ہو گئے ہیں یہاں۔ اب واپسی میں تاخیر نہیں ہونی چاہیے۔ مجھے آج دانیال عورت سے ملنا تھا۔ اس ملاقات کا اہتمام ڈاکٹر ہدایت علی اور جناب غلام محمد نے کیا تھا۔ ناشتے سے فراغت ملتے ہی←  مزید پڑھیے

مُجھے اشفاق احمد اور بانو قدسیہ کا لکھا ادب پسند نہیں۔۔ ۔۔ ۔۔ گلفام غوری

“خان صاحب کبھی مخالفت کی باتوں کا جواب نہیں دیا کرتے تھے کیونکہ لکھنے والے کا کام دوسروں کو قائل کرنا یا اپنی بات منوانا نہیں ہوتا بلکہ تخلیق کار کا مقصد پیغام پہنچانا ہوتا ہے اور وہ پہنچ ہی←  مزید پڑھیے