محمد عمر عافی کی تحاریر
Avatar
محمد عمر عافی
آپ کے محروم قبیلے کا آپ جیسا فرد جو لفظوں کی جھیل کا ہلکا سا شناور ہے

داستاں ہے طویل تر، وقت مگر قلیل تر ۔۔(حصہ اول)

یہ ایک آوارہ گرد سیاسی ورکر کی داستان ہے۔جس نے خواب دیکھے مگر حقیقتیں منکشف ہونے پر خود اپنے سائے سے ڈر گیا۔چیف جسٹس صاحب  کا قافلہ رواں دواں تھا ,جی ٹی روڈ پر سفر کرتے کرتے بہتّر گھنٹے گذر←  مزید پڑھیے

گستاخ طوائف

گستاخ طوائف ۔ اُس نے آتے ہی دہائی دی ۔ مولوی صاحب غضب ہو گیا، میری جان کیوں نہ چلی گئی، میری آنکھیں،میرا سر سلامت کیوں ہے؟۔ یااللہ مجھے معاف کردے ۔۔ مولوی صاحب اور حاضرین مجلس نے عجب بے←  مزید پڑھیے

اے کاش میں آپ جیسا بن سکتا

ماضی قریب ہی کا قصہ ہے شہنشاہ غزل مہدی حسن مرحوم کی طرف سے حکومت پاکستان کو علاج معالجے کی درخواست دی گئی جو حکام بالا کی سرد مہری کی نذر ہوگئی پھر کسی دن کسی خبار میں دو کالمی←  مزید پڑھیے

سیاسی

جب گندم بوئی جاتی ہے تو اُس کے ساتھ کچھ خودرو جڑی بوٹیاں بھی نمو پاتی ہیں جنہیں بروقت تلف کرنا ازحد ضروری ہوتا ہے کیونکہ یہ بوٹیاں اصل فصل کی نشونما پر اثر انداز ہوتی ہیں۔لیکن ہمارے ساتھ عجب←  مزید پڑھیے

سوجا منے سوجا

ڈھول کی تھاپ پر رقص کرتےلوگ,بے ہنگم ہجوم سخت گرمی اور ساؤنڈ سسٹم پر چلنے والے نغمے۔ ایسے میں کسی کو کیا خبر کہ یہاں آنے والوں میں کچھ مجبور بھی ھیں، کچھ مقہور چہرے کہ جو بڑی آس لے←  مزید پڑھیے

شعورِ ذات

خطیب صاحب نے جوشِ خطابت میں فرمایا ..عاشقانِ رسول صلی اللہ علیہ وسلم ہاتھ کھڑا کریں تمام سامعین نے ہاتھ بلند کئے.اب مولانا صاحب نے فرمایا گستاخِ رسول ہاتھ کھڑا کریں (اشارہ کہیں اور تھا)لیکن 15سالہ معصوم عبداللہ بات سمجھ←  مزید پڑھیے