• صفحہ اول
  • /
  • خبریں
  • /
  • امریکی جج نے جو بائیڈن کے بارڈر پالیسی کے منصوبے کو روک دیا

امریکی جج نے جو بائیڈن کے بارڈر پالیسی کے منصوبے کو روک دیا

ریاست ہائے متحدہ میں ایک جج نے بائیڈن انتظامیہ کے متنازعہ امیگریشن پالیسی کو ختم کرنے کے منصوبے کو روک دیا ہے۔

امریکی ضلعی جج رابرٹ سمر ہیس نے ملک بھر کے لیے حکم امتناع جاری کیا ہے ۔جس کے تحت امریکی صدر جو بائیڈن کی انتظامیہ کو ٹائٹل 42 کے نام سے جانی جانے والی پالیسی کو ختم کرنے سے روک دیا گیا۔

FaceLore Pakistan Social Media Site
پاکستان کی بہترین سوشل میڈیا سائٹ: فیس لور www.facelore.com

سابق صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے عائد کردہ اس امیگریشن پالیسی کے تحت امریکی حکام میکسیکو سے آنے والے زیادہ تر غیر قانونی مہاجرین کو سرحد سے ہی ملک بدر کر سکتے ہیں۔

امریکی ریاست لوزیانا کے جج نے فیصلہ سناتے ہوئے کہا ہے کہ امریکی صدر جو بائیڈن کی انتظامیہ میکسیکو سے منسلک امریکی سرحد پر ان امیگریشن کے ضوابط کو منسوخ نہیں کرسکتی ہے۔

Advertisements
julia rana solicitors london

امریکہ میں ریپبلیکن پارٹی کے زیر حکومت ریاستیں ان ضوابط کا دفاع کرتی ہیں۔ ان ضوابط کی مدت آئندہ ہفتے پیر کے روز ختم ہو رہی تھی۔

  • FaceLore Pakistan Social Media Site
    پاکستان کی بہترین سوشل میڈیا سائٹ: فیس لور www.facelore.com
  • julia rana solicitors london
  • julia rana solicitors
  • merkit.pk

خبریں
مکالمہ پر لگنے والی خبریں دیگر زرائع سے لی جاتی ہیں اور مکمل غیرجانبداری سے شائع کی جاتی ہیں۔ کسی خبر کی غلطی کی نشاندہی فورا ایڈیٹر سے کیجئے

بذریعہ فیس بک تبصرہ تحریر کریں

Leave a Reply