نیٹو کا روس یوکرین تنازع میں مداخلت سےانکار

برسلز: نیٹو نے نو فلائی زون کے نفاذ سے انکار کر دیا۔یوکرین کو جنگی طیارے بھی فراہم نہیں کیے جائیں گے۔

برسلز میں نیٹو اور یورپی یونین کے ہیڈ آفس میں رکن ممالک کے وزرائے خارجہ کا اجلاس ہوا۔ اجلاس میں یوکرین اور روس کے درمیان جاری جنگ اور یوکرین کی مدد کا جائزہ لیا گیا۔

نیٹو چیف اسٹولن برگ کا کہنا ہے کہ رو س اور یوکرین کے تنازع میں مداخلت کی تو ماسکو سے براہ راست تصادم کا خطرہ ہو گا۔براہ راست تصادم سے ایٹمی جنگ چھڑ سکتی ہے۔

ان کا کہنا ہے کہ نو فلائی زون کا نفاذ لڑاکا طیارے یوکرینی ایئراسپیس بھیجنا ہے۔یوکرین کو جنگی طیارے بھی فراہم نہیں کیے جائیں گے۔اب تک چھوٹے ہتھیار،اینٹی ٹینک،اینٹی ایئر کرافٹ میزائل فراہم کیے جا چکے ہیں۔

نیٹو چیف نے کہا ہے کہ اگر ہم نے ایسا کیا تو یہ یورپ میں مکمل جنگ پر ہی اختتام پذیر ہو گا۔ اس میں بہت سے ممالک شامل ہوں گے۔ بہت سارے انسانی مصائب جنم لیں گے۔پیوٹن نے جنگ نہیں روکی تو مزید پابندیاں عائد کی جائیں گی۔

Advertisements
julia rana solicitors

دوسری جانب یوکرینی صدر نےنو فلائی زون قرار نہ دینے کے نیٹو کے فیصلے کی مذمت کی ہے۔

Facebook Comments

خبریں
مکالمہ پر لگنے والی خبریں دیگر زرائع سے لی جاتی ہیں اور مکمل غیرجانبداری سے شائع کی جاتی ہیں۔ کسی خبر کی غلطی کی نشاندہی فورا ایڈیٹر سے کیجئے

بذریعہ فیس بک تبصرہ تحریر کریں

Leave a Reply