کالم

فیمنسٹ فلم میکر کلپنا لاجمی، فن اور زندگی پر ایک نظر ۔۔۔ صفی سرحدی

کلپنا لاجمی کے اجداد کا تعلق کشمیر سے تھا، وہ کشمیری پنڈت برہمن تھے، جو کشمیر سے بنگلور اور پھر بنگلور سے بمبئی (ممبئی) آ کر آباد ہو گئے تھے۔ کشمیری پنڈت اداکارہ دیپکا پڈوکون، کلپنا لاجمی کی دُور کے رشتہ داروں میں سے ہیں۔ کلپنا لاجمی کے ایک بھائی دیو داس لاجمی، جو ان سے آٹھ سال چھوٹے ہیں، وہ بھی باپ کی طرح نیوی میں کیپٹن ہیں، جب کہ ان کی ماں للیتا لاجمی کے فن پاروں کی نمایش لندن، جرمنی، امریکا میں ہو چکی ہے۔ للیتا لاجمی، عامر خان کی فلم “تارے زمین پر” میں مہمان اداکارہ کے طور پہ نظر آئیں، جس میں وہ بچوں کے پینٹنگ کے مقابلے میں جج بنی ہیں۔←  مزید پڑھیے

اذان دینے والا دراصل معاشرے میں گڑ بڑ پھیلا رہا ہے۔۔۔۔۔اسد مفتی

لندن میں مقیم میرے ایک دوست حال ہی میں سری لنکا کے دورے سے واپس آئے تو انہوں نے بتایا کہ مسلمانوں کو سری لنکا میں ہر قسم کی مذہبی آزادی حاصل ہے ۔مسلم باشندے مقامی عام شہریوں کے مقابلے←  مزید پڑھیے

مکالمہ کا بیس ہزار روپے کا انعامی مقابلہ

مکالمہ بحیثیت ادارہ ہمیشہ سے معاشرے میں ایک مثبت تبدیلی کا خواہاں رہا ہے۔ مکالمہ نے کبھی بھی خود کو ایک “بزنس پراجیکٹ” کے طور پر نہیں چلایا۔ اگرچہ ہمیں کسی امریکی یا روسی ایڈ کی مدد حاصل نہیں مگر←  مزید پڑھیے

سر سید احمد، تحریک علی گڑھ اور جاپانی میجی انقلاب۔۔۔۔۔عمیر فاروق

سترہ اکتوبر اٹھارہ سو سترہ تاریخ پیدائش ہے انیسیویں صدی کے شاید اہم ترین مسلم مفکر اور مصلح کی۔ سرسید احمد خان کا تاریخ میں حقیقی مقام کیا تھا اس لئے ضروری ہے کہ انکو انکے اپنے عہد کے عالمی←  مزید پڑھیے

روشنی مقدر ہو چکی۔۔۔محمد اظہارالحق

موسموں کا الٹ پھیر مقرر کردیا گیا ہے۔ گرما رخصت ہورہا ہے۔ سب کو معلوم ہے آنے والے مہینے سرد، تند ہوائوں کے ہیں۔ جھکڑ چلیں گے۔ درختوں کے پتے گریں گے۔ زرد خشک پتے! زرد خشک پتوں کے ڈھیروں←  مزید پڑھیے

پچاس لاکھ مکانات کا منصوبہ یا گہری کھائی ۔۔۔۔سلیم فاروقی

ملک شدید ترین معاشی بحران کا شکار ہے۔ مہنگائی، بے روزگاری، ڈالر اور غربت ہے کہ بڑھتی ہی جارہی ہے، اگر کوئی چیز کمی کی جانب مسلسل گامزن ہے تو وہ روپے کی قیمت ہی ہے۔ اور یہ کوئی آج←  مزید پڑھیے

انیل مسرت بمقابلہ ملک ریاض ۔۔۔۔ اظہر سید

بیدردی کے ساتھ اداروں میں بیٹھے افلاطون اور بقراط مدینہ کی مثالی ریاست کے قیام کیلئے تباہی پھیر رہے ہیں ۔ملک میں کوئی ادارہ باقی نہیں بچا جو وقت سے پہلے معاشی کارگل ہونے سے روک سکے ۔ایک سابق بقراط←  مزید پڑھیے

ایک فقرے کی مار۔۔۔۔محمد اظہار الحق

شہزادہ امریکہ میں سفیر مقرر ہوا تو سفارت کاری کی تاریخ میں تو کوئی معجزہ برپا نہ ہوا مگر خریداری کی دنیا میں انقلاب ضرور آ گیا۔ اٹھائیس برس کا نوجوان جو پائلٹ تھا امریکہ جیسے ملک میں سفیر مقرر←  مزید پڑھیے

کوئی رجل رشید بھی ہے؟۔۔۔۔آصف محمود

ہر سوار شمشیر بکف اور ہر پیادہ قہر مجسم ۔ اللہ کے بندو تمہارے قبیلے میں کوئی حلیم الطبع اور معاملہ فہم بھی ہے یا سبھی جنگجو ہیںاور ہتھیار بند؟ اقتدار کے ایوان میدان ِ کارزار نہیں ہوتے جہاں آپ←  مزید پڑھیے

موت زندگی کی محافظ ہے ۔۔۔۔نذر محمد چوہان

اس میں کوئی  شک نہیں ۔ بُدھا زندگی کی تلاش میں اپنا گھر چھوڑ کر بہت دور جنگلوں میں نکل گیا اور ٹولسٹائے موت کے چکر میں ۔ دونوں اپنے عہد کے اپنے فلسفوں کے پیغمبر تھے ۔ دونوں روح←  مزید پڑھیے

آخری قہقہہ۔۔۔۔۔محمد اقبال دیوان/دوسری ،آخری قسط

ایڈیٹر نوٹ:زیر مطالعہ طویل کہانی “وہ ورق تھا دل کی کتاب  کا “میں شامل ہے۔مکالمہ اس کتاب کی عام قاری تک عدم رسائی کے  باعث اسے یہاں شائع کررہا ہے۔برا سمجھے  جانے والے انسانوں میں بے نام فلاح انسانیت کے←  مزید پڑھیے

بغداد،اُس کا کلاسیکل حُسن اور میں۔۔۔۔سلمیٰ اعوان

چور نالوں پنڈ کاہلی۔شاپنگ کے بارے میں میرا اور افلاق کا وہی حال تھا۔شام ڈھلے وہ ضرور کہتا۔ ”ایک چکر لگا لیجئے ۔کچھ خریدنا نہیں آپ کو۔بغداد کی کوئی سوغات، کوئی سوونئیر تو لے لیں۔چلیے سوق الغزل چلیے،سوق الجدید میں←  مزید پڑھیے

شہریار آفریدی متوجہ ہوں……..روبینہ فیصل

پہلا منظر نامہ : موجودہ وزیرَ اعظم ، سابقہ نجات دہندہ ، عمران خان : پاکستانیو!! یہ تارکین وطن ، مجھ پر اعتماد کرتے ہیں ۔ ایک دفعہ میں وزیرِ اعظم بن گیا ، تو نہ صرف ان کا سرمایہ←  مزید پڑھیے

دو قومی نظریہ کے ورق کوٹنے بند کیجیے۔۔۔اسد مفتی

گزشتہ دنوں میرے دوست معروف سیاستدان،دانشور اور قانون دان ایس ایم ظفر کا ایک مضمون میری نظر وں سے گزرا جو نظریہ پاکستان کے حوالے سے کافی وزنی دلائل رکھتا تھا انہوں نے اپنے مضمون میں ماضی کو بھول کر←  مزید پڑھیے

چار سال پہلے کیا ہوا تھا ؟۔۔۔۔۔ سید عارف مصطفٰی

بالآخر حق نواز گنڈہ پور بھی بول ہی پڑے ۔۔۔ چند روز قبل طاہرالقادری کی پاکستان عوامی تحریک کے جنرل سیکریٹری نے برسرعام اپنے بیان میں اعتراف کیا ہے کہ پی ٹی آئی اور عوامی تحریک کے 4 سال قبل←  مزید پڑھیے

بوجھ اٹھانا ہو گا ۔۔۔۔ اظہر سید

اس ملک کے ساتھ پانامہ  ڈرامہ اور اس سے قبل دھرنے  کے ذریعے جو کچھ کیا گیا ہے اس کا بوجھ بھی انہیں ہی اٹھانا ہو گا جو پردے کے پیچھے ہداlیت کار تھے ۔قاتل کے پاس اپنے قتل کا←  مزید پڑھیے

حیرت انگیز روبوٹ۔۔۔گل نوخیز اختر

کیا شاندارروبوٹ ہے۔اس کی موجودگی میں بندے کو خود سے کوئی کام کرنے کی ضرورت نہیں۔یقیناًآپ بھی اس کی خوبیاں جاننا چاہیں گے۔ یہ ایک ایسا فی میل روبوٹ ہے جسے ہر کوئی آسانی سے افورڈ کر سکتا ہے۔ خرچہ←  مزید پڑھیے

“مکالمہ “ مقابلہ مضمون نویسی کے نتائج

قارئین، مکالمہ کو پہلے دن ہی سے کسی کاروباری پراجیکٹ کے بجائے بطور  ایک مشن  چلایا گیا ہے۔ یہ ہی وجہ ہے کہ مکالمہ نے اپنی غیر جانبداری بھی قائم رکھی اور قارئین کے ہر طبقے کا محبوب بنتا چلا←  مزید پڑھیے

لیا درس نسخہء عشق کا(ادھر اُدھر کی باتیں)۔۔۔۔۔۔۔محمد اقبال دیوان

وہ ہم سے ایک دن پہلے اسکول میں داخل ہوئی تھی۔ فرح نیسنی نام تھا   مگراس نام کا کوئی تعلق انگریزوں سے نہیں ،نینسی گجراتی بولنے والے کاروباری لوگ ہیں۔ ہم دونوں کا معاملہ بھی عیسائیوں کے اس مدرسے←  مزید پڑھیے

جب باغ چھپروں پر گر پڑتا ہے۔۔۔محمد اظہار الحق

اور اُن دو شخصوں کی مثال! ان میں سے ایک کے دو تاکستان تھے‘ انگوروں سے بھرے ہوئے۔ اردگرد کھجوروں کی باڑ! اور درمیان میں کھیتی! دونوں چمنستان بھر پور پھل دیتے ذرا سی کسر بھی نہیں چھوڑتے تھے۔ یہی←  مزید پڑھیے