Salma Awan کی تحاریر

رُوسی شادی بیاہ کی رسوم۔۔۔۔سلمٰی اعوان

البم کیا کھُلا۔ کلچر اور ثقافت کا ایک پٹارہ کھُل گیا تھا۔ انستاسیا پاکستانی نوجوان شاہد کی بیگم تو کِسی مقامی ڈریس کمپنی کی ماڈل لگتی تھی جو لتویاکی نمائندگی کرتی ہو۔ میں نے بھرپور ستائشی نظروں سے البم کے←  مزید پڑھیے

جان کیٹس شیلے میوزیم روم۔۔۔۔سلمی اعوان

جان کیٹس پانیوں پر لکھے ہوئے نام والا! o کیٹس، شیلے اور بائرن کو میں نے اپنی بیٹی کے ساتھ پڑھا اور ان کی محبت میں گرفتار ہوئی۔ o جوزف سیورن جیساپرستار بھی کہیں مقدر والوں کو نصیب ہوتا ہے۔←  مزید پڑھیے

بھلا سوویت کیوں ٹوٹا؟۔۔۔سلمیٰ اعوان

ینٹ پیٹرزبرگ میں اتنے دن؟ کوئی آپکا ہے وہاں؟ کراچی سے یہ آواز میرے ویزہ اور ٹکٹ ایجنٹ کی تھی۔وہ رُوس میں میرے قیام کے دنوں کی بابت پوچھتا تھا۔پیٹرز برگ میں ہفتے بھرکا سُن کر اُسکا حیرت بھرا یہ←  مزید پڑھیے

میرے دیش کی خوبصورت وادی چترال۔۔۔۔ سلمیٰ اعوان

اس وقت میں اپنے اِس پیارے سے ملک میں برپا ہونے والے الیکشن کے شوروغوغا،امیدواروں کی بھانت بھانت کی بولیوں،گالیوں اورکوسنوں کی یلغار میں پھنسی سوچے چلی جارہی ہوں کہ کہیں بھاگ جاؤں۔کہیں پہاڑوں میں سکون اور شانتی کے لئیے←  مزید پڑھیے

نگر خاص جانا اور راکا پوشی کے جلوؤں سے لطف اندوزی۔۔۔سلمی اعوان

یہ نکہت و نور میں ڈوبی ہوئی ایک دل آویز سحر تھی۔ صبح صادق کا اجالا ابھی پھیلا ہی تھا۔ جب میں چھت پر چڑھ گئی تھی اور اس وقت کائناتی حسن کے عشق میں پورم پور غرق تھی۔ ہمارے←  مزید پڑھیے

پاکستان کی جنت نظیر وادی۔۔۔سلمی اعوان

”یہ نلت ہے۔“ ویگن ہمیں ابھی اس آہنی سٹینڈ کے قریب اُتار کر آگے بڑھ گئی ہے۔ جس پر خوبصورت انداز میں لفظ ”نلت“ لکھا ہوا ہے۔ ہمارے قدموں کے نیچے شاہراہ ریشم ہے اور داہنے ہاتھ وہ ہرا بھرا←  مزید پڑھیے

الوداع پیٹرز برگ، الوداع اے شہر بے مثال۔۔۔۔سلمی اعوان

تو بس اب کوئی دم میں رُخصت ہوا چاہتی ہوں اِس شہر بے مثال سے کہ جہاں میرے قیام کا ایک ہفتہ یعنی آٹھ دن جو آٹھ لمحوں کی ماننددِکھتے اور محسوس ہوتے ہیں۔ بھاگم ڈورکے یہ چند دن اُس←  مزید پڑھیے

ہم اور سر ی پاڈا کہہ لیجیے آدم پیک ۔۔۔سلمیٰ اعوان

نویرا اہلیہ سے آدم پیک تک کا راستہ پہلو در پہلو لیٹی ہوئی ڈھلانی پہاڑیوں پر مشتمل، جن پر چائے کے باغات کا سلسلہ فطرت کے کسی دلآویزشاہکار کی طرح آپ کا دل مُٹھی میں بند کر لیتا ہے۔ راستہ←  مزید پڑھیے

وادی گلگت کے ایک دلچسپ کردار سے ملاقات ۔۔۔سلمیٰ اعوان

پروردگار بہت دن ہو گئے ہیں یہاں۔ اب واپسی میں تاخیر نہیں ہونی چاہیے۔ مجھے آج دانیال عورت سے ملنا تھا۔ اس ملاقات کا اہتمام ڈاکٹر ہدایت علی اور جناب غلام محمد نے کیا تھا۔ ناشتے سے فراغت ملتے ہی←  مزید پڑھیے

یورپ کی مسلم عورتیں داعش میں شمولیت کے لئے بے چین کیوں؟۔۔۔سلمٰی اعوان

خبر نے توجہ کھینچی تھی۔عراقی عدالت نے فرانسیسی خاتون میلینا بوغیدر کو داعش کی رکنیت کے جرم میں عمر قید کی سزا سنائی ہے۔ جیالی شامی خاتون ثمریز بک فوراً یاد آئی  کہ جس نے اس مو ضوع پر روشی←  مزید پڑھیے

بلتستان کی وادیوں میں مصنوعی گلیشیئر پالے جانے کی دلچسپ روئیداد۔۔۔ سلمیٰ اعوان

یہ انکشاف کس قدر تعجب خیز، کتنا انوکھا اور نرالا تھا کہ بھیڑ بکریوں اور گائے بھینسوں کی طرح بلند پہاڑوں کی چوٹیوں پر گلیشیئر بھی باقاعدہ پالے جاتے ہیں۔ ان کی دیکھ بھال پالتو جانوروں کی طرح ہی کی←  مزید پڑھیے

کیا سناؤں داستان درد دل کی ۔۔۔سلمیٰ اعوان

دفع دور کریں اس ناہنجار سیاست، اس کے گند اور گُنجلوں کو اور دو حرف لعنت کے بھیجیں اِن سیاست دانوں اور اُن کی تقریروں پر۔ہم غریب ووٹروں کا تومار کلیجہ ساڑ دیا ہے انہوں نے۔مانا کرسی کے لیے باؤلے←  مزید پڑھیے

بغداد کا کچھ احوال اور میاں نواز شریف کی صدام سے ملاقات

میں جس گھر کے سامنے کھڑی تھی وہ میرے حسابوں بمشکل دس مرلے میں ہوگا۔سیاہ گیٹ جانے کب کا پینٹ شدہ تھا۔کھُجور کااکلوتا درخت،پودینے کی چھوٹی سی کیاری, تھوڑی سی گھاس اور دیوار پر چڑھی پیلے پھولوں والی بیل دو←  مزید پڑھیے

کیلاش کی وادی بریر میں موت کا استقبال کیسے کیا جاتا ہے۔۔۔سلمٰی اعوان

پشاور روڈ سے آیون کسی ایسی دُلہن کی طرح نظر آتا ہے جس کا ایک ایک انگ حُسن دلربائی کی تصویر ہو۔ پر جونہی نیچے اُتر کر نقاب کشائی ہوتی ہے تو ایک بھدا بے رونق اُجڑا پُجڑا چہرہ دیکھنے←  مزید پڑھیے

آواز دو کہ حلب جل رہا ہے ۔۔۔سلمیٰ اعوان

16 دسمبر 2014ء کے دن کا گوآغاز ہوگیا تھا مگر وقت تین بجے صبح کا تھا جب میری آنکھ کھل گئی تھی۔ دوبار ہ سونے کی کوشش کی۔ دائیں بائیں بہتیرے پلسٹے مارے۔ مگر نیند پلاّ پکڑانے میں نہ آر←  مزید پڑھیے

لیو ٹالسٹائی اور صوفیہ ٹالسٹائی۔۔۔سلمی اعوان

اپنے ماسکو میں قیام کے دوران میں یاسنا یا پولیانہYasnaya ployanaجانے کی بڑی خواہش مند تھی۔ٹالسٹائی کا وہ گھرجہاں وہ پیدا ہوا۔جہاں اُس نے اپنے ادبی شہ پاروں کی تخلیق کی تھی۔پر جیسے وہاں حاضری دینی میری قسمت میں نہ←  مزید پڑھیے

گلگت میں بسین اور نوپورہ کی تہذیبی جھلک اور بدھ عقیدت مندوں کے شاہکار۔۔۔سلمٰی اعوان

دن کا پروگرام میں نے اپنی مرضی سے ترتیب دیا۔سرفہرست کار گاہ نالہ کی سیر تھی۔ شفقت نے چپ چاپ پیچھے چلنے میں عافیت خیال کی۔ ذرا بھی انتظار کی زحمت نہیں کرنا پڑی۔ سڑک پر قدم رکھے اور ویگن←  مزید پڑھیے

بغداد کا ڈاؤن ٹاؤن اور میرا بچپن۔۔۔۔سلمٰی اعوان

سچ تو یہ تھا میری آنکھوں میں میرے بچپن کی ساری ہنسی چھلکی تھی۔میرا وجود کسی معصوم بچے کی طرح کلکاریاں مارنے لگ گیا تھا۔مسرت کے بے پایاں احساس سے نہال میں نے اپنے سامنے چوک کو دیکھا تھا۔ اللہ←  مزید پڑھیے

قاہرہ میں لائٹ اینڈ ساؤنڈ شو۔۔۔۔سلمٰی اعوان

ناشتہ فندق بوستان کے ساتویں فلور کی چھت پر ہوتا۔ کوئی چھ مرلے کے رقبے پر محیط ایریا کھڑے اور بیٹھے راڈوں پر پڑی ترپال کے نیچے کُرسیوں میزوں سے سجا کچھ ایسا گھٹیا تاثر بھی پیش نہیں کرتا تھا۔←  مزید پڑھیے

پیٹرز برگ روس میں مسلمان اور تُرکوں کی تاتاری مسجد ۔۔۔سلمیٰ اعوان

وہ دن جُمعے کا تھا اور میں ظہر کی نماز پیٹر ز برگ کی اکلوتی مسجد جو پیٹر اینڈ پال فوٹریس کے قریب تھی میں ادا کرنے کی شدید خواہش مند تھی۔ یہاں کتنے مسلمان ہیں؟ رُوسی اور دیگر ممالک←  مزید پڑھیے