Muhammad Naseer کی تحاریر

پاکستانی معاشرہ میں شدت پسندی و عدم برداشت کی تاریخی وجوہات اور ان کا تدارک۔۔۔۔۔محمد نصیر/مقابلہ مضمون نویسی

مملکت پاکستان کو بنے آج 71 سال کا عرصہ گزر چکا ہے۔ دنیا کے نقشے پر نظر دوڑائی جائے تو کئی سارے ملک ہیں جو ہمارے بعد معرض وجود میں آئے لیکن ترقی کے گراف پر ہم سے کہیں آگے←  مزید پڑھیے

اپنے مالک خود بنیے۔۔۔۔۔محمد نصیر

ہم اپنے ذہن کے غلام ہیں جو وہ کہتا ہے کرتے ہیں۔ مثال کے طور پر غصے کو ہی لیجئے۔ کیونکہ غصہ ہمیں سب سے زیادہ ہائی جیک کئے رکھتا ہے۔ ہماری زندگی کا انمول وقت زیادہ تر غصے، اس←  مزید پڑھیے

اپنی دنیا۔۔۔۔ محمد نصیر

کہنے کو ہم سب اس دنیا میں رہتے ہیں لیکن یہ پوری بات نہیں۔ کیونکہ ہم میں سے ہر کسی کی اپنی ایک الگ دنیا ہوتی ہے۔ جو ان واقعات اور حالات سے بنتی ہے۔ جو اس کی پیدائش کے←  مزید پڑھیے

کائنات، اک بحرِ بیکراں۔۔۔۔۔محمد نصیر

جاننے کی جستجو انسان کے اندر بہت گہرائیوں میں موجود ہے۔ انسان نے جب سے ہوش سنبھالا ہے اس نے نظر آنے والی ہر شے کی حقیقت کو جاننے کی جستجو میں طویل سفر کئے۔ یہ سفر صدیوں پر محیط←  مزید پڑھیے

بقا بس فنا کو ہے۔۔۔۔۔ محمد نصیر

کہا جاتا ہے کہ آپ ایک ہی دریا کو دو بار عبور نہیں کر سکتے۔ یعنی ہم جس پانی کو ایک بار عبور کر چکے وہ دوسری بار نہیں ملے گا۔ اگلے لمحے اس میں بہت بڑی تبدیلی آ چکی←  مزید پڑھیے

آپ کی کائنات۔۔۔۔محمد نصیر

آپ اپنے گھر یا دفتر میں اپنی کرسی پر بیٹھے ہیں۔ بظاہر ساکن ہیں لیکن حقیقت میں آپ اتنی تیزی سے حرکت میں ہیں کہ آپ کو پتہ چل جائے تو آپ چکرا جائیں گے۔ لیکن محض چکرائیں گے، گریں←  مزید پڑھیے