عارف خٹک کی تحاریر
عارف خٹک
عارف خٹک
بے باک مگر باحیا لکھاری، لالہ عارف خٹک

میری مدد کیجئے۔۔۔ عارف خٹک

میں بہت پریشان ہوں۔ زندگی اجیرن ہوچکی ہے۔ کبھی کبھار سوچتا ہوں کہ پاگلوں کیطرح جنگلوں میں خود کو گم کر ڈالوں۔ زندگی ایک سزا بن چکی ہے۔ ہر لخظہ، ہر پل خود کو آہستہ آہستہ مار رہا ہوں۔ میری←  مزید پڑھیے

دانش گردوں کی خود لذتی

 گاؤں میں ہمارےایک رشتہ دار ہوا کرتے تھے۔ کمزور صحت،بڑھی ہوئی شیو اور دُبلی پتلی جسامت لیے ہوئے۔نام نہیں لوں گاُ،کہ کافی سارے رشتہ دار ایڈ ہیں ساتھ۔پرچلیں اسے صدیقی ماما کا نام دے دیتے ہیں۔ ہر وقت غوروفکر اور←  مزید پڑھیے

خوشحال خان کاکاجی، ایک عظیم پشتون رہنما۔۔۔ عارف خٹک

آپ میرے پر داد ہیں۔ گریٹر پختونستان کی تحریک کے بانی یہی تھے اور 1950 میں پاکستان بننے کے بعد گریٹر پشتونستان کی نفی بھی انھوں نے کی۔کہا کہ اب پاکستان ایک حقیقت ہے اور میں چار ملین قوم کیلئے←  مزید پڑھیے

ہم شکل

ہم شکل ہونا کوئی معیوب بات نہیں ،مگر کبھی کبھار بہت معیوب بات بن ہی جاتی ہے۔ کراچی میں ایک نوجوان عالمگیر خان جس نے پیپلز پارٹی کی نیندیں حرام کردی تھیں اور شہر میں ہر کھلے گٹر پر سابق←  مزید پڑھیے

پارا چنار(ایک ایٹم بم)قسط سوئم

پارا چنار (ایک ٹائم بم) قسط سوئم “مُکالمہ” یہ مضمون پارا چنار کے مسئلہ کو سمجھنے کے لیے لگا رہا ہے۔ ہمارا اس مضمون کے مندرجات سے اتفاق ضروری نہیں ہے۔ اگر کوئی دوست جواب دینا چاہیں تو مُکالمہ حاضر←  مزید پڑھیے

پارا چنار (ایک ایٹم بم)

_*پاڑاچنار (ایک ٹائم بم)*_ سلسلہ نمبر 1 “مُکالمہ” یہ مضمون پارا چنار کے مسئلہ کو سمجھنے کے لیے لگا رہا ہے۔ ہمارا اس مضمون کے مندرجات سے اتفاق ضروری نہیں ہے۔ اگر کوئی دوست جواب دینا چاہیں تو مُکالمہ حاضر←  مزید پڑھیے

پارا چنار (ایک ایٹم بم)قسط دوئم

پارا چنار (ایک ٹائم بم) سلسلہ نمبر دو! “مُکالمہ” یہ مضمون پارا چنار کے مسئلہ کو سمجھنے کے لیے لگا رہا ہے۔ ہمارا اس مضمون کے مندرجات سے اتفاق ضروری نہیں ہے۔ اگر کوئی دوست جواب دینا چاہیں تو مُکالمہ←  مزید پڑھیے

ضلع کرک کرپشن کے میگا سکینڈلز اور تحریک انصاف

ضلع کرک خیبرپختونخوا کا جنوبی ضلع جو پشاور سے جنوباً 125 کلومیٹر کے فاصلے پر واقع ہے۔ جہاں کی آبادی سو فی صد پشتون اور خٹک قبیلے کے لوگوں پر مُشتمل ہے۔ خواندگی کا تناسب مجموعی طور پر 64 فی←  مزید پڑھیے

کہانی ہماری مونچھوں کی

“کہانی ہماری مونچھوں کی” عارف خٹک غالباً 2010ء کا زمانہ تھا۔ جب کراچی میں بدامنی عُروج پر تھی۔ پشتون کے ذہن میں یہ بات ٹھونس دی گئی تھی۔کہ مہاجر آپ کا قاتل ہے۔اور ہر مہاجر کی ذہن سازی ہورہی تھی۔کہ←  مزید پڑھیے

عضو خاص کی پیدائش

صبح اٹھا تو موبائل پر سینکڑوں پیغامات دیکھ کر پتہ چلا کہ آج میرا جنم دن ہے۔ لوگوں کی محبت اور بیگم کی بے اعتنائی کا سوچ کر کہیں دو گرم گرم آنسو کے قطرے گالوں پر ڈھلک گئے،تو بیگم←  مزید پڑھیے

وجاہت مسعود، “ہم سب”، “مکالمہ” اور میں

"ہم سب" کو باقاعدگی سے اس لئے نہیں پڑھتاکیونکہ دو تین ایسے بندے یا مصنفین جن سے میرا نظریاتی اختلاف ہے، بدقسمتی سے وہ بھی میری طرح پشتون ہیں اور اختلافات ہمارے ہاں دشمنی کی ابتدا ہوتی ہے۔ وجاہت مسعود←  مزید پڑھیے

پشتون مامتا

کابل سے آیا تو اپنے گاؤں کا چکر لگایا۔ ہر وزٹ کے بعد اپنے ویران اور غریب گاؤں کا چکر ضرور لگاتا ہوں۔جہاں کے پہاڑوں میں بچپن کی قلقاریاں آج بھی کہیں سنائی دیتی ہیں۔جہاں سُوکھی روٹی، لسی کیساتھ کھا←  مزید پڑھیے

افغان باقی،کہسار باقی

افغان باقی،کہسار باقی عارف خٹک ہم افغان یا پشتون بحثیت قوم اور عقیدہ، دو انتہاؤں کے بیچ معلق ہیں. ہم ماضی کو سنہری تخت پر بٹھا کر پوجا کر رہے ہیں اور بدقسمتی سے حال میں جی رہے ہیں. ہمیں←  مزید پڑھیے

puss/pain

ایک ڈاکٹر دوست ہے خدمت خلق پر ایمان رکھتا ہے. وہ اپنی سرگزشت میں فرماتے ہیں کہ میں نے فیصلہ کیا کہ خدمت خلق کرنی ہے اور کافی ریسرچ کے بعد فیصلہ خیبر پختونخواہ کے ایک دور دراز علاقہ اورکزئی←  مزید پڑھیے

لاہور کانفرنس میں کی گئی تقریر

لاہور کانفرنس میں کی گئی تقریر جناب صدر اور معزز ڈگنٹریز السلام علیکم میں قیصر محمود بھائی اور منصور مانی بھائی کا شدید شکرگزار ہوں کہ انھوں نے مجھے اج ڈائس پر کھڑا کر ہی ڈالا ورنہ اج تک میں←  مزید پڑھیے

آؤ افغانیوں کو مار ہی ڈالیں

سنہ دو ہزار سات کا زمانہ تھا اور میں پہلی بار پشاور سے بذریعہ سڑک کابل جارہا تھا۔ دل میں انجانے خدشات، خوف اور غیر یقینی کی کیفیات تھیں۔ میں نے پاکستان میں کافی لوگوں سے سنا تھا کہ افغانی←  مزید پڑھیے

رنڈی

رنڈی کچی آبادی اور گندے جوہڑ میں کوئی خاص فرق نہیں ہوتا سوائے اس کے کہ جوہڑ میں کیڑے مکوڑے پلتے ہیں اور کچی آبادی میں انسان۔ ہاں ایک بات دونوں میں مشترک ہوتی ہے کہ دونوں اپنے حقوق سے←  مزید پڑھیے

سینٹ ویلنٹائن شہید

سینٹ ویلنٹائن شہید عارف خٹک راشد ایک مقامی ادارے میں ایک درمیانے درجہ کا آفیسر تھا۔ بینک سے پرسنل لون لیا تھا تاکہ بہن کی یونیورسٹی کے داخلے اور چھوٹے بھائی کے کالج میں داخلہ فیس جمع کروا سکے۔ جو←  مزید پڑھیے

دختر (میری بیٹی)

دختر (میری بیٹی) عارف خٹک مجھے اپنی وہ ماں جیسی خاتون ابھی تک یاد ہے جس کے سات بچے تھے مگر ہر وقت بیمار رہتی تھی۔ اس کے شوہر نے ایک دن بندوق کے بٹ سے اس کے سر پر←  مزید پڑھیے

راجپوت بمقابلہ پشتون

راجپوت بمقابلہ پشتون عارف خٹک سال 1990 ہمارے دادا جب ناسٹل جیا کا شکار ہوگئے تو بڑے رنگین و سنگین واقعات سناتے تھے اور اس کے ہر قصے میں بہادری کا تمغہ اس کا خود یا کسی پشتون کے سر←  مزید پڑھیے