ایمل خٹک کی تحاریر
ایمل خٹک
ایمل خٹک
ایمل خٹک علاقائی امور ، انتہاپسندی اور امن کے موضوعات پر لکھتے ھیں

پشتون بیانیہ اور ریاستی عدم برداشت ۔۔ ایمل خٹک

پاکستانی ریاستی اداروں میں جمہوری حقوق اور عوامی تحریکوں کے بارے میں رویہ سخت اور عدم برداشت بڑھ رہا  ہے ۔ قمر جاوید باجوہ کا پشتون تحفظ تحریک کے حوالے سےحالیہ بیان اس عدم برداشت کا بین ثبوت ہے۔ اگر←  مزید پڑھیے

پشتون تحفظ موومنٹ اور غداری کارڈ۔۔۔ ایمل خٹک

پشتون تحفظ موومنٹ کے   واضح موقف کہ وہ ملک کے قانونی اور آئینی فریم ورک کے اندر پرامن طریقے سے اپنے  حقوق کے حصول کیلئے سرگرم عمل ہے کے باوجود فوج کے ماتحت بعض ادارے عوام کو یہ تاثر←  مزید پڑھیے

منقسم اسٹیبلشمنٹ اور نئی صف بندیاں۔۔۔ایمل خٹک

نیب عدالت کے باہر رینجرز کی تعیناتی اور وزراء تک کو داخلے کی اجازت نہ دینا ، میاں نوازشریف کی مسلم لیگ کی صدارت سنبھالنا اور کور کمانڈرز کا طویل اجلاس چند حالیہ واقعات ہیں جو بظاہر الگ تھلگ مگر←  مزید پڑھیے

پاکستانی آرمی چیف کا دورہ کابل : توقعات اور خدشات۔ایمل خٹک

پاکستانی فوج کے سربراہ جنرل قمر جاوید باجوہ کے دورہ کابل کے حوالے سے دونوں ممالک میں کافی تبصرے اور بات چیت کی کامیابی کے حوالے سے قیاس آرائیاں ہورہی ہیں ۔قطع نظر اس بات کے  فریقین نے اس موقع←  مزید پڑھیے

سول-ملٹری تعلقات اور فوجی قیادت.ایمل خٹک

پارلیمان کے دونوں ایوانوں یعنی قومی اسمبلی اور سینٹ کی قائمہ کمیٹی برائے دفاع کے اراکین سے پاکستانی فوج کے سرابراہ جنرل قمر جاوید باجوہ کی حالیہ ملاقات اوربات چیت کئی حوالوں سے اہم ہے ۔ جو تفصیلات ذرائع ابلاغ←  مزید پڑھیے

فاٹا کے انضمام کا ایشو اور چند غلط فہمیاں۔ایمل خٹک

جب سے حکومت کی نامزد کردہ فاٹا ریفامز کمیشن کی سفارشات سامنے آئی ہیں اس کے بعد فاٹا کی اصلاحات اور خاص کر فاٹا کا خیبر پختونخوا میں انضمام کے حوالے سے سیاسی کارکنوں میں گرما گرم بحث و مباحثہ←  مزید پڑھیے

پاکستان کی سفارتی تنہائی یا بحران

پانچ ملکی بین الاقوامی اتحاد بریک کی حالیہ کانفرنس کے اعلامیے میں پاکستان کی حمایت یافتہ عسکریت پسند تنظیموں کا ذکر انڈیا کی سفارتی کامیابی اور پاکستان کی بد ترین سفارتی ناکامی ہے ۔ پانچ ملکی اتحاد میں انڈیا کے←  مزید پڑھیے

پاکستان کی پرو عسکریت پسند پالیسی کو دھچکا

امریکہ کی جانب سے یوسف شاہ المعروف صلاح الدین کو بین الاقوامی دہشت گردوں کی فہرست میں شامل کرنے کا اعلان کیا گیا ہے۔ صلاح الدین حزب المجاھدین کا کمانڈر ہے۔ اور عرصہ دراز سے پاکستان میں مقیم ہے۔ افغان←  مزید پڑھیے

مشال خان کیس اور علماء کا کردار

مذہب اور علماء کا قول و فعل دو الگ الگ چیزیں ہیں ۔ خرابی اس وقت پیدا ہوتی ہے جب ویسٹڈ انٹرسٹ یا مفادی حلقے دونوں کو خلط ملط کرتے ہیں۔ کسی بھی معاشرے میں چاہے مذہبی ہو یا غیر←  مزید پڑھیے

پاکستان کی عسکریت نوازی : فسانہ یا حقیقت

جب سے افغانستان میں تحریک طالبان وجود میں آئی ہے تو شروع دن سے پاکستان پر اس کی حمایت کا شک کیا جا رہا ہے۔ پاکستان کے بعض ریاستی اداروں پر افغان طالبان کی حمایت کا شک کرنے کی وجوہات←  مزید پڑھیے

ریاستی سسٹم کا بحران اور بڑھتی ہوئی مذہبی جنونیت

مردان میں معصوم طالب علم مشال خان کی بہیمانہ ہلاکت جیسے واقعات پورے معاشرے کو جھنجوڑ کر رکھ دیتے ہیں ۔ ویسے تو اس واقعے کا ذمہ دار پورا معاشرہ ہے مگر اس میں زیادہ دوش ریاست کو دیا جاسکتی←  مزید پڑھیے

مدرسہ سازی کا عمل اور چند منفی رحجانات

اس سے پہلے ایک حالیہ مضمون میں علماء اور ریاست کے کردار پر تفصیل سے بات کی گئی تھی۔ اب اس مضمون میں مدرسوں کے رول پر بحث کی جائیگی ۔ دینی مدرسے صدیوں سے قائم ہیں اور مدرسہ سازی←  مزید پڑھیے

موروثی سیاست اور سیاسی جماعتوں کی اندرونی کشمکش

اگر ملک مختلف بحرانوں کا شکار ہے تو پاکستان کی سیاسی جماعتیں بھی بحرانوں کی زد میں ہیں ۔ بظاہر تو سب ٹھیک چل رہا ہے مگر یہ جماعتیں تین قسم کے یعنی نظریاتی، تنظیمی اور لیڈر شپ کے بحرانوں←  مزید پڑھیے

مُلا ملٹری الائنس کا ماضی اور حال!

مُلا ملٹری الائنس کی اصطلاح ایک نئی سیاسی اصطلاح ہے۔ جو سال2002میں مذہبی جماعتوں کے اتحاد متحدہ مجلس عمل(ایم ایم اے)کے برسرِ اقتدار آنے کے بعد رواج ہوا ۔ اصطلاح کی وضع اور رواج ہونے کی تاریخ تو بہت مختصر←  مزید پڑھیے

افغان مسئلہ اور پاکستانی پالیسی سازوں کا مخمصہ

دہشت گردی کے خلاف پے درپے آپریشنوں کے باوجود پاکستان کی انسداد دہشت گرد پالیسیوں کو بین الاقوامی سطع پر قبولیت اور پذیرائی نہیں مل رہی ہے۔ الٹا اس سلسلے میں پاکستان پر بیرونی دباؤ میں اضافہ ہو رہا ہے←  مزید پڑھیے

فاٹا اصلاحات : قبائلی عوام کا رعایا سے شہری بننے کا عمل

وفاقی حکومت کی جانب سے قبائلی علاقوں میں اصلاحات سے نئے سوالات سر اٹھا رہے ہیں اور اس کے فوائد اور نقصانات پر بحث شروع ہے۔ اس قسم کے دور رس سیاسی فیصلوں پر بحث و مباحثہ اور سیاسی حلقوں←  مزید پڑھیے

کیا پاکستان افغان پالیسی دلدل سے نکل پائیگا؟

پاکستان میں دہشت گردی کی نئی لہر اور پاک افغان تعلقات میں تلخی اور کشیدگی کے مزید بڑھنے سے خطے میں عسکریت پسندی کے خلاف مشترکہ اور بھرپور کوششوں کی ضرورت کا احساس بڑھ رہا ہے۔ دونوں ممالک کے اعلیٰ←  مزید پڑھیے

ماسکو کانفرنس: مسلہ افغانستان پر ایک اور علاقائی تفاھم

ماسکو اجلاس کے شرکاء نے کابل انتظامیہ کی مسلمہ حیثت کو تسلیم کرتے ھوئے افغانستان میں پائیدار امن کی قیام کیلئے بین الا فغانی امن مذاکرات کیلئے کوششیں تیز کرنے پر زور دیا ہے اور مخالفین کو قومی دھارے میں←  مزید پڑھیے

افغان امن مذاکرات : امکانات اور مشکلات

کیا نئی امریکی انتظامیہ کے آنے سے عالمی سٹرٹیجک منظر نامہ بدل رہا ہے ؟ ان تبدیلیوں کی نوعیت اور سمت کیا ہوگی ؟ اوراس کے ہمارے علاقے پر کیا اثرات مرتب ہونگے؟ ۔ یہ سوالات آجکل ہر جگہ پر←  مزید پڑھیے

عسکریت پسندی اور ریاستی رٹ

عسکریت پسندی اور ریاستی رٹ ایمل خٹک جماعت الدعوہ کے سربراہ حافظ سعید کی نظربندی اور فلاح انسانیت فاونڈیشن کو واچ لسٹ پر ڈالنا ایک اہم حکومتی اقدام ہے ۔ اور اگر اس پر ثابت قدمی سے قائم رہا جائے←  مزید پڑھیے