تتلیاں کچھوؤں کے آنسو پیتی ہیں

کیا آپ جانتے ہیں رنگ برنگی تتلیاں کچھوؤں کے آنسو پیتی ہیں؟ اس کی وجہ کیا ہے یہ جان کر آپ حیران رہ جائیں گے۔

جانوروں اور انسانوں کے خون میں سوڈیم موجود ہوتا ہے جو خون اور جسم کے پانی کی مقدار میں توازن رکھتا ہے۔ گوشت خور جاندار گوشت سے سوڈیم حاصل کرلیتے ہیں۔

تاہم وہ جاندار جو گوشت نہیں کھاتے انہیں سوڈیم کے حصول کے لیے دیگر ذرائع تلاش کرنے پڑتے ہیں۔ تتلیاں بھی انہی میں سے ایک ہیں۔

نمک کی آمیزش والا سوڈیم جانوروں اور انسانوں کے آنسوؤں میں بھی پایا جاتا ہے۔ ایسے میں کچھوے اپنی سستی کی وجہ سے تتلیوں کے لیے نہایت مددگار ثابت ہوتے ہیں اور تتلیاں باآسانی ان پر بیٹھ کر ان کے آنسو پی جاتی ہیں۔

تتلی کے پر بے حد نازک ہوتے ہیں چنانچہ آنسو پینے کا عمل کچھوؤں کو کسی بھی قسم کی تکلیف نہیں دیتا اور یوں تتلی باآسانی اپنی اہم غذائی ضرورت کو پورا کرلیتی ہے۔

بذریعہ فیس بک تبصرہ تحریر کریں

براہ راست تبصرہ تحریر کریں۔

Your email address will not be published. Required fields are marked *