عوامی عدالت (سو لفظوں کی کہانی )۔۔۔ ثقلین مشتاق کونٹا

کرپشن کے بڑے کیس کا وزیراعظم کے خلاف فیصلہ آیا ۔۔۔۔

وزیراعظم نےکہا ہم اس عدالت کے فیصلہ کو نہیں مانتے ، ۔۔۔

ہم عوام کے فیصلے مانتے ہیں اس لئے عوامی عدالت میں جائیں گے ۔ میں نے کاشف کو بتایا۔
کاشف : تو پھر کیا ہوا؟
میں: حکومت نے ناموس رسالت ﷺ کے خلاف قانون بنایا ،۔۔۔

عوام سٹرکوں پر نکل آئے اور عوامی عدالت لگا لی ۔
کاشف : تو پھر حکومت عوامی عدالت میں پیش ہوئی ؟
میں : نہیں نہیں۔۔۔۔ ایسا تو کچھ نہیں ہوا۔۔۔
کاشف : تو پھر حکومت نے کیا کیا؟
میں : حکومت عوامی عدالت پر حملہ آور ہوگئی ۔۔۔۔

ثقلین مشتاق کونٹا
ثقلین مشتاق کونٹا
آپ نیشنل یونیورسٹی آف سائنسز اینڈ ٹیکنالوجی (نسٹ) اسلام آباد میں کیمیکل انجنیئرنگ کے طالبعلم ہیں۔صحافت سے جنون کی حد تک لگاؤ رکھتے ہیں ۔ پاکستان کو ایسی ریاست بنانے کے خوہاں ہیں جہاں اللہ کے بعد عوام کی حکمرانی ہو نہ کہ جمہوری آمروں کی آمریت قائم ہو ۔ ان کا ماننا ہے کہ اگر صحافی برداری عوام میں شعور بیدار کرنا کا بیڑہ اُٹھا لیں تو یہ مشکل کام جلد ممکن ہوسکے گا۔

بذریعہ فیس بک تبصرہ تحریر کریں

براہ راست تبصرہ تحریر کریں۔

Your email address will not be published. Required fields are marked *