اسرائیل میں پاکستانی چیف کا خطاب

(مکالمہ ویب ڈیسک)پاکستان کے سابق چیف جسٹس کا ہیبرو یونیورسٹی یروشلم میں عدلیہ کی آزادی کے لئے جدو جہد  کے حوالے سے خطاب  کانفرنس براۓ آزاد عدلیہ سے خطاب کرتے ہوۓ سابق چیف جسٹس تصدق حسین   جیلانی نے پرویز مشرف کے دور میں عدلیہ  کی آزادی کے لئے کی گئی  جدو جہد کے بارے میں اپنے تاثرات بیان کیے۔

ایک جواب میں انہوں نے کہا کہ وکلاء پر بم دھماکہ ہوا ،ہمیں دھمکایا گیا کہ آپ کا فیصلہ مشرف کے غضب کا باعث بن سکتا  ہے ،تو میں نے جواب دیا”اگر وہ سپریم کورٹ کو بھی اُڑا دیں، ہم شاہراہِ جمہوریت پر کھڑے ہو کر فیصلہ سنائیں گے۔”

FaceLore Pakistan Social Media Site
پاکستان کی بہترین سوشل میڈیا سائٹ: فیس لور www.facelore.com

تصدق حسین جیلانی کو اسرائیلی یونیورسٹی سے جوڑنے والی ایک کتاب تھی جو کہ ہیبرو یونیورسٹی کے پروفیسر شمعون شیتریت جو بین الاقوامی ادارہ براۓ آزاد عدلیہ اور عالمی امن کے صدر بھی ہیں کی تصنیف تھی۔

جسٹس جیلانی نے بتایا کس طرح شیتریت کی کتاب سے مشرف کے ایک وکیل نے غلط حوالہ پیش کیا، لیکن کتاب دکھانے میں ناکام رہے، آؤٹ آف پرنٹ یہ کتاب پروفیسر شمعون شیتریت نے جیلانی کو کورئیر سے بھیجی۔

Advertisements
julia rana solicitors

جسٹس جیلانی نے یہ خطاب بذریعہ وڈیو لنک کیا، تین روزہ کانفرنس جمعرات کو اختتام پذیر ہوئی۔

  • FaceLore Pakistan Social Media Site
    پاکستان کی بہترین سوشل میڈیا سائٹ: فیس لور www.facelore.com
  • julia rana solicitors london
  • julia rana solicitors
  • merkit.pk

خبریں
مکالمہ پر لگنے والی خبریں دیگر زرائع سے لی جاتی ہیں اور مکمل غیرجانبداری سے شائع کی جاتی ہیں۔ کسی خبر کی غلطی کی نشاندہی فورا ایڈیٹر سے کیجئے

بذریعہ فیس بک تبصرہ تحریر کریں

Leave a Reply