ڈاکٹر عامر میر کی تحاریر
ڈاکٹر عامر میر
ڈاکٹر عامر میر
اکثر لوگ کہتے ہیں کہ میں تکلیف دہ حد تک سچا انسان ہوں۔

جوانی ضائع نا کریں۔۔ ڈاکٹر عامر میر

پچھلے سال ستمبر میں میرے ہاسپٹل میں ایک نئے ڈاکٹرصاحب آئے۔متھے پہ پاکستانی لکھا ہوا تھا۔آتے ساتھ  ہی مجھ  پہ  ٹھاہ ٹھاہ انگریجی  کے فائر کرنے لگے۔میرا پہلا جملہ یہی تھا۔ڈاٹرشاب،پاکستانی ہو؟ ہاں وہ نہیں میں تو امریکن نیشنل ہوں۔←  مزید پڑھیے

میرا جسم، میری مرضی۔۔۔ ڈاکٹر عامر میر

پچھلے کچھ سالوں سے دنیا کے بیشتر ممالک میں یہ تحریک جاری ہے جسے FEMEN کے نام سے جانا جاتا ہے۔اس کی کارکنان عام طور پر مظاہرہ کرتے ٹاپ لیس ہو جاتی ہیں۔ایکسپوزڈ باڈی پہ نعرے لکھے ہوتے ہیں جن←  مزید پڑھیے

اپنے بچوں کی حفاظت کیجیے۔۔ڈاکٹر عامر میر

کافی سال پہلے کی بات ہے میں اُن دنوں پاکستان میں ہی تھا کہ میرے ایک دوست اپنی بیگم صاحبہ کے ہمراہ تشریف لائے کہ ہم دونوں میاں بیوی عمرے کی سعادت کے لئے جا رہے ہیں۔دوست:تمھیں   تو پتہ←  مزید پڑھیے

سیکیولر ریاستوں کے مسلمان شیدائی۔۔ڈاکٹر عامر میر

رشیداحمد صاحب پرانے محلےدار ہیں۔ایک دعوت پہ ملے۔ شفقت اُن کی کہ اُنہوں نے پہچان لیا۔ میز پہ ہمارے سمیت کوئی آٹھ لوگ اور بیٹھے تھے۔جیسا کہ ایسے موقعوں پہ ہوتا ہے کہ سیاست کا ٹاپک شروع ہو جاتا ہے۔←  مزید پڑھیے