عبدالباسط ذوالفقار کی تحاریر

خوشیاں کشید کی جا سکتی ہیں۔۔۔۔عبدالباسط ذوالفقار

ایک ویب سائٹ کھنگالنے کے دوران ایک تصویر پر نظر جا رکی۔ ایک ڈاکٹر آپریشن تھیٹر میں اوزار لیے کھڑے ہیں، سامنے اسٹریچر پر ایک بھالو  کو لِٹا رکھا ہے۔ تعجب ہوا کھلونے کا آپریشن؟ پھر نظر جا کر ایک←  مزید پڑھیے

اردو کی غلطیاں کیسے دور کریں؟۔۔۔۔عبدالباسط ذوالفقار

کسی بھی تحریر میں ذکر کیا گیا واقعہ جتنا اہم ہوتا ہے، اتنی ہی اہمیت اس میں استعمال کیے گئے الفاظ کی بھی ہوتی ہے۔ یعنی تحریر کی خوبصورتی الفاظ کے انتخاب  اور اس کے بعد صحیح اور برمحل استعمال←  مزید پڑھیے

بجلی کی یاد میں۔۔۔۔عبدالباسط ذوالفقار

بجلی کی آنکھ مچولی جاری تھی بالآخر آنکھیں جھپکاتی ہوئی چلی گئی تھی۔ خاصے انتظار کے باوجود نہ آئی، ہمت فین جھلتے جھلتے کلائی دُکھنے لگی تو میں تنگ آ کر باہر نکل گیا۔ کیا دیکھتا ہوں ”میرا دوست باغیچے←  مزید پڑھیے

محرومی۔۔۔عبدالباسط ذوالفقار

گزشتہ روز ایسے شخص کو دیکھا جس کی نظروں کے بارے مشتاق احمد یوسفی رح نے کہا تھا: “اب تم جن نظروں سے مرغی کو دیکھنے لگے ہو، ویسی نظروں کے لیے تمہاری بیوی برسوں سے ترس رہی ہے۔” لیکن←  مزید پڑھیے

”زندہ رہنے کو بہت زہر پیا جاتا ہے“۔۔۔۔۔۔عبدالباسط ذوالفقار

امریکی کہاوت ہے ”دنیا میں سب سے اہم بات یہ ہے کہ کیسے زندہ رہا جائے؟” کب تک زندہ رہنا ہے یہ تو اللہ ہی جانتا ہے لیکن ہمیں فی زمانہ یہ سوال درپیش ہے کہ ”کیسے زندہ رہا جائے؟”←  مزید پڑھیے

آٹھ اکتوبر 2005۔۔۔۔۔۔۔۔۔عبدالباسط ذوالفقار

وہ ایک ایک کانام پکار کر کلاس سے باہر کھڑا کر رہے تھے، لمبی قطار میں لڑکے لڑکیاں سر جھکائے کھڑے تھے، کہ سر جمال علوی سامنے آئے اور اچھا خاصا بھا شنڑ دے کر باتوں ہی باتوں میں خوب←  مزید پڑھیے

مانسہرہ کی تین وادیاں، تین تحصیلیں۔۔۔۔۔عبدالباسط ذوالفقار

مرغزاروں کی سرزمیں مانسہرہ؛ مجموعی طور پر تین وادیوں پر مشتمل ہے جو مانسہرہ کی تین تحصیلوں سے مل کر بنتی ہیں۔ وادی پکھل: مانسہرہ میں وادی پکھل انتہائی زرخیز زمینوں کا مکان ہے۔ یہاں سبز ہریالے کھیت لہلاتے نظر←  مزید پڑھیے

کب نظر آئے گی تبدیلی کی بہار؟۔۔۔۔۔عبدالباسط ذوالفقار

”تعلیم و تربیت ایک سنجیدہ کام ہے، تعلیمی معیار پر سمجھوتا نہیں کیا جائے گا۔ صوبے میں تعلیم کے ساتھ مذاق برداشت نہیں کیا جائے گا۔ بہترین تعلیمی سہولیات کی فراہمی صوبائی حکومت کی اولین ترجیح ہے۔ معیاری تعلیم کے←  مزید پڑھیے

مَرغزاروں کی سرزمین۔۔۔۔ عبدالباسط ذوالفقار

مانسہرہ خیبر پختون خوا  کا ایسا شہر  جسے جھیلوں، سبزہ زاروں، مرغزاروں کی سرزمین کہا جاتا ہے۔ مانسہرہ ”مان سنگھ” کے نام سے اخذ ہوا جو کسی زمانے میں یہاں کا حکمران تھا۔ (یہ حقیقت ہے یا فسانہ، معلوم نہیں)←  مزید پڑھیے

اصلاح کا واحد راستہ۔۔۔۔عبدالباسط ذوالفقار

گالم گلوچ سے تر زبان کٹر کٹر چلی جا رہی تھی۔ تیز آواز سے وہ اپنے بیٹے کو کوس رہے تھے۔ راہ گیر رک رک کر دیکھتے، کون ہے وہ عظیم انسان جس پر مغلظات کی بارش ہو رہی ہے۔←  مزید پڑھیے

گُل فردوس۔۔۔۔عبدالباسط ذوالفقار

وہ مجھے ہی گھور رہی تھی۔ میں اس پر پہلی نظر ڈالتے ہی لڑکھڑا گیا تھا۔ اس کی مخروطی آنکھوں میں عجب معصومیت رچی تھی۔ میں پوری محویت سے اسے دیکھتا رہا۔ انہی لمحات میں مجھے احساس ہوا، کچھ بھی←  مزید پڑھیے

انتظار تھا جس کا یہ وہ سحر تو نہیں؟۔۔۔۔۔عبدالباسط ذوالفقار

ملک کے بائیسویں وزیراعظم کے حلف اٹھاتے وقت پورا مجمع دم سادھے بیٹھا تھا۔ خاموشی کا یہ عالم تھا کہ اڑتی ہوئی مکھی کی بھنبھناہٹ بھی صاف سنائی دیتی۔ جب وہ لڑکھڑائے، اٹکے اور ہنس کر گزر گئے۔ جب سے←  مزید پڑھیے

دیا دریچے میں رکھا تھا ،دل جلایا تھا۔۔۔۔عبدالباسط ذوالفقار

کہنے لگی افف۔۔۔عبدل!! کب سے ڈھونڈ رہی ہوں تمہیں اور نمبر بھی بند جارہا ہے۔ کیوں کیا ہوا؟؟ میں نے اس کی سوجھی ہوئی آنکھوں میں دیکھتے ہوئے کہا۔ ہونا کیا ہے؟ وہ دور خلا میں گھورتی ہوئی بولی۔ میری←  مزید پڑھیے

وقت ہوا چاہتا ہے۔۔۔۔عبدالباسط ذوالفقار

چلیے احباب! پاکستانی ہونے کا وقت ہوا چاہتا ہے۔ سیاسی تالاب سے نکلیے، کپڑے نچوڑیے، پاؤں دھوئیے۔ اپنے اپنے لیڈران کی تعریف میں بہت  قلابے ملا لیے۔ تعویذ بنا کر گلے میں بھی لٹکائے، گھول کر بھی پیے۔ کاٹ کھانے←  مزید پڑھیے

الف اللہ۔۔۔عبدالباسط ذوالفقار

دشمن بھی ہے، پر ساتھ رہے جان کی طرح۔۔۔۔ ”نہیں، بس اب نہیں پیوں گا”۔ وہ یقین دلانے کی کوشش کرتے۔ لیکن ان کی غیر ہوتی حالت ہمیں مجبور کر دیتی کہ انہیں دوبارہ سگریٹ کی پیش کش کر دیں۔←  مزید پڑھیے

میرے ابو زندہ ہوتے ناں۔۔عبدالباسط ذوالفقار

بارش کی ہلکی ہلکی بوندیں ونڈ سکرین پر گرتیں۔ وائپر  ننھے بلبلوں کو شیشے پر سے ہٹا کر سائیڈ  میں کر رہا تھا۔ بارش میں دوڑتی گاڑی سے باہر کا موسم کچھ زیادہ ہی خوشگوار معلوم ہو رہا تھا۔ معلوم←  مزید پڑھیے

عورت برائے فروخت؟۔۔۔ عبدالباسط ذوالفقار

آج کل عورت نما مردوں کا تذکرہ زبان زد عام ہے۔ اخباروں میں، گفتگو  میں، محفلوں میں۔ گزشتہ دنوں یوم عورت پر مخصوص کلاس کی عورتوں کا عورت مارچ، گتے اور کتبے اٹھائے صدائے احتجاج بلند کیے ہوئے تھا۔ بھانت←  مزید پڑھیے

آئیں احباب،سنیں درد میرا۔۔عبدالباسط ذوالفقار

حافظے کے ایوان میں آج کل بڑی تاریکی ہے۔ برگ حیات کی چھاوں میں سستانے بیٹھا ہوں۔ مبادا کوئی یاد، یادوں کے محراب سے سر اٹھائے چلی آئے لیکن تاحد نگاہ ویرانی ہی ویرانی، دانت نکال نکال کر مجھ پر←  مزید پڑھیے

روایت کی جیت۔۔عبدالباسط

کیا کہا۔۔!! میری نسبت؟جاؤ جاؤ کسی اور کو بَلی کا بکرا بناؤ، میں ہی ملی تھی سولی چڑھانے کو؟ فریحہ پاؤں پٹختے ہوئے وہیں سے واپس ہوئی اور کمرے میں جا کر کھٹاک سے دروازہ بند کر دیا۔ آج صبح←  مزید پڑھیے