دنیا کے غریب ممالک میں بچوں کے پسندیدہ کھلونے

ایک خاتون فوٹو گرافر انا روزلنگ نے دنیا بھر کا سفر کرکے غریب ترین اور امیر ترین ممالک میں بچوں کی ان کے پسندیدہ کھلونوں کے ساتھ تصاویر لی ہیں جنہیں دیکھ کر ہر ملک کے پس منظر اور غریبی کو نوٹ کیا جاسکتا ہے۔ خاتون فوٹو گرافر نے دیگر رضاکاروں کی مدد سے 50 ممالک کے بچوں کی ان کے پسندیدہ کھلونوں کے ساتھ تصویریں لی ہیں جنہیں دیکھ کر ان بچوں کی سادہ زندگی کا احساس ہوتا ہے ۔ برکینا فاسو میں فی کس آمدنی صرف 29 ڈالر ماہانہ ہے۔ یہاں ایک بچی نے بتایا کہ اسے ایک پرانے ٹائر سے کھیلنا اچھا لگتا ہے اور یہی اس کا پسندیدہ کھلونا بھی ہے۔ افریقی شہر زمبابوے میں فی کس آمدنی صرف 34 ڈالر ماہانہ ہے اور اس بچے نے گھر میں ایک گیند بنائی ہے جو اس کا پسندیدہ کھلونا ہے۔ غربت اور بد امنی کے شکار  یہ بچہ دن رات اس پلاسٹک کے پہیے کو اپنے ساتھ رکھتا ہے جو اس کی کل متاع ہے۔ ہیٹی کے ایک اور بچے کے پاس دستی ویڈیو گیم ہے جو اس کا من پسند کھلونا ہے، فلسطین میں ایک بالغ آمدنی کی فی کس آمدنی 112 ڈالر ماہانہ ہے لیکن پلاسٹک کی بوتل اس کا پسندیدہ کھلونا ہے

  • julia rana solicitors london
  • merkit.pk
  • FaceLore Pakistan Social Media Site
    پاکستان کی بہترین سوشل میڈیا سائٹ: فیس لور www.facelore.com
  • julia rana solicitors

خبریں
مکالمہ پر لگنے والی خبریں دیگر زرائع سے لی جاتی ہیں اور مکمل غیرجانبداری سے شائع کی جاتی ہیں۔ کسی خبر کی غلطی کی نشاندہی فورا ایڈیٹر سے کیجئے

بذریعہ فیس بک تبصرہ تحریر کریں

Leave a Reply