کافرہ مر گئی۔۔افتخار حیدر

کافرہ فاسقہ، فاجرہ، بے حیا مرگئی

ہو مبارک سبھی اہل ایمان کو
مومنو آج سے آپ آزاد ہو
جھوٹ کا ساتھ دو

جبر کی گود میں بیٹھ کر ظالموں کے قصیدے پڑھو

آپ جیسے جیو، آپ جیسے مرو
آپ آزاد ہو

بوٹ پالش کرو، آپ آزاد ہو
آپ کتوں کے برتن میں پانی پیو آپ آزاد ہو

وہ جو پھنکارتی تھی ہر اک ظلم پر
وہ جو للکار تی تھی ہر اک جبر کو

شیرنی مرگئی!!

مہمان تحریر
مہمان تحریر
وہ تحاریر جو ہمیں نا بھیجی جائیں مگر اچھی ہوں، مہمان تحریر کے طور پہ لگائی جاتی ہیں

بذریعہ فیس بک تبصرہ تحریر کریں

براہ راست تبصرہ تحریر کریں۔

Your email address will not be published. Required fields are marked *