سحرش کنول کی تحاریر

فیک نیوز اور ہمارے رویے :سحرش کنول

رات بھر کی بیداری کا یہ عالَم تھا کہ سر درد سے پھٹ رہا تھا آنکھوں کا رنگ سیاہ ہوا تھا الفاظ تو بہت تھے مگر زبان ساتھ نہیں دے رہی تھی  انسانیت کے جذبات مجھ پہ ھاوی ہو چکے تھے←  مزید پڑھیے