فاروق بلوچ کی تحاریر
فاروق بلوچ
فاروق بلوچ
مارکسی کیمونسٹ، سوشلسٹ انقلاب کا داعی اور سیاسی کارکن. پیشہ کے اعتبار سے کاشتکار.

دہشت گردی ختم نہیں ہوگی۔۔۔کامریڈ فاروق بلوچ

مجھے یاد ہے کہ کوئٹہ میں وکلاء کے دھماکے میں قتل عام کے بعد نواز شریف نے بلوچستان میں اعلیٰ سطحی اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے فرمایا تھا کہ ’’دہشت گردی میں ملوث مذہبی تنظیموں اور مدارس کی نشاندہی ہونی←  مزید پڑھیے

گھٹیا افسانہ نمبر 24۔۔۔کامریڈ فاروق بلوچ

بس جب سے روانہ ہوئی ہے جمپ پہ جمپ لگ رہے ہیں۔ پتہ نہیں یہ ملک کب سیدھا ہو گا۔ کرپٹ سور کب سے ملک کو کھا رہے ہیں۔ یہ گیارہ بارہ کلومیٹر سڑک کا ٹوٹا اِن سے صحیح نہیں ہو رہا۔ بس ایسے←  مزید پڑھیے

چھ کروڑ سال۔۔۔کامریڈ فاروق بلوچ

کچھ عرصہ قبل راقم کینیا میں دریافت ہونے والے تیس لاکھ سال سے زائد پرانے کھوپڑی کے فوسل متعلق جاننے کی کوشش کر رہا تھا۔ یقیناً یہ فوسل ایک بار پھر انسانیت کے پیچیدہ ارتقاء کا ثبوت ہے۔ آج سے←  مزید پڑھیے

لَقَدْ خَلَقْنَا الْاِنْسَانَ فِىٓ اَحْسَنِ تَقْوِيْمٍ۔۔۔کامریڈ فاروق بلوچ

یہ  تحریر سوچتے ہوئے قرآن کی آیت “لَقَدْ خَلَقْنَا الْاِنْسَانَ فِىٓ اَحْسَنِ تَقْوِيْمٍ” میرے ذہن میں گونج رہی ہے۔ جب ہم یہ کہتے ہیں کہ ایک ایسے سماج کا نقشہ ہمارے پاس ہے جہاں کوئی آقا کوئی محکوم نہیں ہو←  مزید پڑھیے

دلِ زار کی حالت۔۔۔کامریڈ فاروق بلوچ

میرے دادا مرحوم نے اپنے عہد کے بڑے استادوں کو پڑھا اور سنا تھا اِس لیے اُن کے استدلال میں معروضی تنقید بدرجہ اتم موجود تھی۔ مجھے وہ ایک مرتبہ سیکھا رہے تھے کہ کوئی بھی کام کرنے سے قبل←  مزید پڑھیے

جسم فروشی کی جدلیات۔۔۔۔کامریڈ فاروق بلوچ

بروکٹن امریکہ کا شہر ہے جہاں امریکی سینٹ کے لیے خاتون امیدوار الزبتھ وارن نے الیکشن کی مہم جاری کی تھی۔الیزبتھ وارن وہاں سے کامیاب ہو کر سینٹ کی رکن بھی بن گئی تھیں، وہ معیشت کی پروفیسر بھی ہیں←  مزید پڑھیے

گھٹیا افسانہ نمبر23۔۔۔۔کامریڈ فاروق بلوچ

ہم یہاں کوئی  تین گھنٹے بعد پہنچے ہیں۔ گاڑی سارا راستہ شاید ہی چالیس کی سپیڈ تک پہنچ پائی ہو، ساری شاہراہ نوکدار چھوٹے بڑے پتھروں سے لبریز تھی  جب جب چھوٹے چھوٹے پتھر ٹائروں کے نیچے سے نکل کر←  مزید پڑھیے

گھٹیا افسانہ نمبر 22۔۔۔۔کامریڈ فاروق بلوچ

میں ایسا بھی گنوار نہیں ہوں. لوگ میری اچھی خاصی عزت کرتے ہیں. میں نے بدن بولی پہ تحقیقی کام کیا ہوا ہے. مجھ سے چھپنے کی کوشش ناکام ہو گی. اباجی مجھ سے ایسا کیا چھپا سکتے ہیں. اب←  مزید پڑھیے

مارچ میں مارچ اور عورت۔۔۔۔کامریڈ فاروق بلوچ

ایک سماج جو مختلف طبقات میں تقسیم ہو کی عورتوں کے استحصال کی جڑیں خاندان میں عورت کے مخصوص کردار میں موجود ہیں. ایک خاندان میں بطور صرف ‘نسل بڑھانے والا فرد’ عورت کے خاندان کے اندر اور اُسی کے←  مزید پڑھیے

گھٹیا افسانہ نمبر21۔۔۔۔کامریڈ فاروق بلوچ

اگر میں بار بار دھوکا کھا رہا ہوں تو اس کا مطلب یہ ہے کہ مجھ میں غلطی ہے۔ میں اپنی طرف سے تو لوگوں کے ساتھ نارمل رویہ روا رکھتا ہوں۔ گفتگو کے دوران بھی کوشش کرتا ہوں کہ←  مزید پڑھیے

گھٹیا افسانہ نمبر 20۔۔۔۔کامریڈ فاروق بلوچ

میں تو حیران   آپ لوگوں پر ہو رہا ہوں جو اینکروں کو کوئی پڑھا لکھا کوئی ادبی کوئی شعوری کوئی سمجھدار کوئی سیانا کوئی تخلیقی بندہ سمجھتے ہیں۔ جیسے اب بھی آپ کسی صوبے کے اندرون میں چلے جائیں،←  مزید پڑھیے

جنسیت:ارتقا کا پیچیدہ ترین پہلو۔۔۔۔کامریڈ فاروق بلوچ

جب ہم ارتقائی حیاتیات کو زیر بحث لاتے ہیں تو سب سے پیچیدہ سوال جو ذہنوں میں پیدا ہوتا ہے وہ یہ ہے کہ ایک ہی نوع کی دو مختلف جنسیں؛ نر اور مادہ کیسے پیدا ہو گئیں؟ کچھ گرہوں←  مزید پڑھیے

گھٹیا افسانہ نمبر 19۔۔۔۔کامریڈ فاروق بلوچ

انوار ایک سیدھا سادا سا لڑکا ہے. اس سے میری پہلی ملاقات ایک سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر ہوئی تھی۔ ہم تقریباًًً  دو ماہ گفتگو کرتے رہے. تصاویر بھی شیئر ہوئیں. باتیں بھی کیں. شاعری پر بھی گفتگو ہوئی.←  مزید پڑھیے

گھٹیا افسانہ نمبر 18۔۔۔۔کامریڈ فاروق بلوچ

میں نے فیس بک پر آج ایک نئی نظم پوسٹ کی ہے۔ اس پہ میرے ایک دوست نے کمنٹ کیا ہے کہ تم فیض احمد فیض کی طرح کی نظمیں لکھ رہے ہو۔ ساتھ اس نے دل بنا کر بھی←  مزید پڑھیے

گھٹیا افسانہ نمبر 17۔۔۔۔۔کامریڈ فاروق بلوچ

“یہ بھی بس ایک خیال ہے کہ خوراک لباس رہائش ریاست کے ذمہ ہوتی تو ہم مَن چاہی عیاشی کرتے جس کے بعد اپنے ہی کیے عمل کی وضاحتیں نہ دینی پڑتیں”. فرخندہ کو اپنا سوشل ڈیموکریٹک خیال ابھی یاد←  مزید پڑھیے

گھٹیا افسانہ نمبر 16۔۔۔۔۔۔کامریڈ فاروق بلوچ

“رات کے یا شاید دن کے پونے چار بج رہے ہیں، میں تمہیں یاد کر رہا ہوں”. میں فرخندہ کو آخری میسج کر کے سونے آ گیا ہوں. “صبح بخیر”. صبح اٹھ کر دیکھا تو فرخندہ کا میسج آیا ہوا←  مزید پڑھیے

گھٹیا افسانہ نمبر 15۔۔۔۔۔۔۔کامریڈ فاروق بلوچ

جہانگیر صاحب کافی کے سِپ لے رہے ہیں، سگار بھی جَل رہا ہے، بول رہے ہیں، جب وہ بولتے ہیں تو سننے کو مَن کرتا ہے. ایک دن زراعت کی دریافت پہ گفتگو کر رہے تھے، جو روانی جو طرز←  مزید پڑھیے

امی جی, امی جی کی جدلیات۔۔۔کامریڈ فاروق بلوچ

محکمہ شماریات نے سروے رپورٹ جاری کی ہے، سرکاری اعداد و شمار کے مطابق پنجاب میں 12 لاکھ شادی شدہ مرد بےروزگار ہیں. (میری ذاتی تفہیم میں یہ اعداد و شمار انتہائی کم بتائے گئے ہیں) آخر اُن کے ایک←  مزید پڑھیے

گھٹیا افسانہ نمبر 14۔۔۔کامریڈ فاروق بلوچ

تانیہ کی گفتگو میں بہت آسانی، بہت روانی اور بہت استدلال آ گیا ہے. شاید یہ اُس کی علم بینی کا نتیجہ ہے. میں نے اُس کو پہلی مرتبہ ایسی سنجیدگی سے دیکھنے پہ تب مجبور ہوا جب وہ کچن←  مزید پڑھیے

گھٹیا افسانہ نمبر 13۔۔۔۔۔۔۔ کامریڈ فاروق بلوچ

میں ابھی چوک سے بس میں چڑھ کے سیٹ پہ سنبھل ہی رہا ہوں کہ کنڈیکٹر نے ڈرائیور کو رکنے کا اشارہ کر دیا ہے. کنڈیکٹر میرے پاس سے گزرا تو بہت غور سے دیکھ کر گیا. مجھے اندازہ ہوا←  مزید پڑھیے