فاٹا 2019 کے انتخابات میں صوبے کا حصہ ہو گا،پرویز خٹک

صوبہ خیبر پختونخوا کے وزیراعلیٰ پرویز خٹک  نے کہا  ہے کہ قبائلی عوام کو صوبائی اسمبلی میں نمائندگی دینے کے لیے 2019 میں انتخابات منعقد کیے جائیں گے جس کے بعد وفاق کے زیر انتظام قبائلی علاقے کو سرکاری طور پر صوبے میں ضم کردیا جائے گا ، فاٹا کے انضمام کے حوالے سے صوبائی حکومت آئندہ سال مئی میں نوٹیفکیشن جاری کرے گی، جبکہ فاٹا میں بلدیاتی انتخابات کا انعقاد آئندہ سال اکتوبر میں ہوگا، اس سلسلے میں حکومت کی جانب سے آئین میں ضروری ترامیم کی جائیں گی تاکہ فاٹا کے خیبرپختونخوا میں انضمام کی راہ ہموار ہوسکے۔ وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا نے مزید بتایا کہ وزیراعظم کی صدارت میں ہونے والی فاٹا اصلاحات سے متعلق قائم قومی عمل درآمد کمیٹی کے اجلاس میں اہم فیصلے کیے گئے۔ کمیٹی کی جانب سے فاٹا کو قومی دھارے میں شامل کرنے کے لیے اہم فیصلوں کے ساتھ ان کو عملی جامہ پہنانے کے لیے مقررہ مدت بھی متعین کی گئی، خیبرپختونخوا میں انضمام کے فیصلے کے ساتھ قبائلی علاقے کے لیے قائم ایجنسی ڈیولپمنٹ فنڈ ختم کرنے کے احکامات بھی دے دیئے گئے۔ اس موقع پر انہوں نے پشتون تحفظ موومنٹ کے رہنمائوں کو گورنر خیبرپختونخوا اقبال ظفر جھگڑا کی سربراہی میں قائم جرگے کے ساتھ مذاکرات میں حصہ لینے پر بھی زور دیا، ان کا کہنا تھا کہ آئینی دائرہ کار میں رہتے ہوئے یہ مذاکرات جتنی جلد ممکن ہوں پایہ تکمیل تک پہنچائے جائیں،کسی بھی پیچیدہ اور غیر یقینی صورتحال سے بچنے کے لیے پشتون تحفظ موومنٹ اور جرگے کے مذاکرات جلد شروع ہوجانے چاہیے جبکہ وہ پی ٹی ایم کے جائز مطالبات ہر سطح پر اٹھانے کے لیے تیار ہیں۔

بذریعہ فیس بک تبصرہ تحریر کریں

براہ راست تبصرہ تحریر کریں۔

Your email address will not be published. Required fields are marked *