• صفحہ اول
  • /
  • خبریں
  • /
  • سونے کی کان میں کام کرنے والے مزدوروں کے درمیان جھڑپیں، تقریبا 100 افراد ہلاک

سونے کی کان میں کام کرنے والے مزدوروں کے درمیان جھڑپیں، تقریبا 100 افراد ہلاک

افریقی ملک چاڈ میں سونے کی کان میں کام کرنے والے مزدوروں کے درمیان جھڑپوں میں تقریبا 100 افراد ہلاک ہو گئے۔

افریقی ملک چاڈ میں سونے کے کان میں کام کرنے والے مزدوروں کے درمیان ہونے والی جھڑپوں میں تقریبا ایک سو افراد ہلاک اور درجنوں زخمی ہو گئے۔

چاڈ کے وزیر دفاع داؤد یحییٰ ابرایم نے تفصیل بتاتے ہوئے کہا ہے کہ یہ جھڑپیں لیبیا کی سرحد کے قریب واقع کوری بوگودی کے علاقے میں ہوئیں۔یہ جھڑپیں 23 مئی کو سونے کے دو کان کنوں کے درمیان معمولی تنازع سے شروع ہوئیں۔

Advertisements
julia rana solicitors london

ان کا کہنا ہے کہ اس علاقے میں سونے کی کانوں میں غیرسرکاری طور پر کان کنی کی جاتی ہے۔ حکومت نے متاثرہ علاقے میں کان کنی کے تمام غیرسرکاری منصوبوں کو معطل کرتے ہوئے تحقیقات کا آغاز کر دیا ہے۔
انہوں نے بتایا ہے کہ10 سال قبل اس علاقے میں سونے کی دریافت کے بعد مختلف علاقوں سے کان کنوں نے یہاں آنا شروع کر دیا تھا۔ غیر قانونی کان کنی کے باعث یہاں اکثر تناؤ کی صورتحال رہتی ہے۔

Facebook Comments

خبریں
مکالمہ پر لگنے والی خبریں دیگر زرائع سے لی جاتی ہیں اور مکمل غیرجانبداری سے شائع کی جاتی ہیں۔ کسی خبر کی غلطی کی نشاندہی فورا ایڈیٹر سے کیجئے

بذریعہ فیس بک تبصرہ تحریر کریں

Leave a Reply